The Latest

وحدت نیوز (گلگت) معاون خصوصی وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان و صوبائی رہنما مجلس وحدت مسلمین الیاس صدیقی نے کہا ہے کہ قمر زمان کائرہ کو مشیر برائے امورگلگت بلتستان بنا کر خطے کےعوام کے ساتھ ظلم کیا گیا ہے کیونکہ وہ ایک منتخب ممبراسمبلی بھی نہیں۔

 انہوں نے مزید کہا کہ اس فیصلے سے پیپلزپارٹی کے حق حاکمیت کے دعوے پر بھی شب خون مارا گیا۔ کسی غیر منتخب شخص کو گلگت بلتستان کے امور کی ذمہ داری دینی تھی تو کسی مقامی شخصیت کو دیتے، امید ہے پی پی پی گلگت بلتستان کے ذمہ داران اس غیر منطقی اقدام کا فوری نوٹس لیں گے ۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن کی جانب سے دیے گئے افطار ڈنر سے خطابات کرتے ہوئے ایم ڈبلیو ایم کے  سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا ہے کہ غیرت مند قوموں کے ساتھ ٹکرا کر دنیا کی کوئی بھی طاقت فتح مند نہیں ہو سکتی۔ اگر ہم ایک قوم بن جائیں تو عالمی استکباری قوتوں کے گھمنڈ کو شکست فاش میں بدل سکتے ہیں۔مشرق وسطی میں گریٹر اسرائیل کا امریکی منصوبہ ناکام ہو چکا ہے۔لبنان ،شام ،افغانستان اور عراق سمیت امریکہ نے جہاں جہاں پیش قدمی کی اسے ذلت و رسوائی کا سامنا کرنا پڑا۔پاکستان ایشیا کا دل ہے۔پاکستان کی ترقی و استحکام امریکہ کے لیے ناقابل برداشت ہے۔اس ہی نےپاکستان کے عوامی رہنماذوالفقار علی بھٹو اور محترمہ بے نظیر بھٹو کو شہید کرایا۔امریکہ ہر اس پاکستانی حکمران کا روز اول سے مخالف ہے جو اس عالمی دہشت گرد کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرنے کا حوالہ رکھتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ارض پاک کے بائیس کروڑ عوام نے "امریکہ کا جو یار ہے غدار ہے غدار ہے" کا نعرہ لگا کر امریکہ سے اپنی نفرت کا برملا اظہار کر دیا ہے۔ہمیں امریکہ کی غلامی کسی صورت قبول نہیں۔ ہم ایک خودمختار ریاست ہے اور اپنے داخلی وخارجی معاملات میں کسی کی مداخلت کو برداشت نہیں سکتے۔ آج ایسی امپورٹڈ حکومت ہم پر مسلط کر دی گئی ہے جو خود کو امریکہ کی غلام کہتے ہوئے فخر محسوس کرتی ہے۔پوری دنیا میں طاقت کی منتقلی کا عمل تیزی سے جاری ہے۔ امریکہ کا وجود اندر سے کھوکھلا ہوتا جا رہا ہے۔امریکہ کو اپنا مضبوط سہارا سمجھنے والے حکمرانوں کا امریکہ کے ہاتھوں عبرت ناک انجام سیاہ تاریخ کا حصہ ہے۔

علامہ راجہ ناصرعباس نے کہا کہ اگر ہم دنیا میں باوقار مقام حاصل کرنا چاہتے ہیں تو امریکہ کو ہمیشہ کے لیے خیرباد کہنا ہو گا۔اس اہم ایشو پرحکومت اور مقتدر قوتوں کو ایک پیج پر آنا چاہیے۔گزشتہ دنوں سابق وزیراعظم عمران خان سے ہونے والی ملاقات میں یکساں نصاب تعلیم کے متنازع نکات،دہشت گردی کے واقعات اور شیعہ مسنگ پرسنز کے حوالے سے تفصیلی بات چیت ہوئی۔ان کے دور حکومت میں ہمیں جو مشکلات درپیش رہیں اور ملت تشیع میں موجود اضطراب سے بھی انہیں آگاہ کیا گیا۔ان سے جو اختلافات ہیں ان کا کھل کر اظہار بھی کیا گیا۔ہم نے یہ بھی واضح کیا کہ ہمیں امپورٹڈ حکومت قبول نہیں۔ہم پاکستان کی وہ حقیقی آزادی چاہتے ہیں جس کے حصول کے لیے قائد اعظم نے طویل اور صبر آزما جدوجہد کی۔بیرونی ڈکٹیشن سے پاک ریاست ہمارا آئینی حق ہے جس پر کوئی سمجھوتہ قابل قبول نہیں۔عالم کفر کے خلاف سب سے پہلے امریکہ مردہ باد کا نعرہ ہم نے لگایا آج یہ ہر باضمیر و باشعور کی آواز بنا ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ملکی معاملات کو امریکہ کی دخل اندازی سے مکمل پاک کرنے کے لیے ہم عمران خان کے موقف کے حامی ہیں۔ان استعماری قوتوں کے خلاف 27 رمضان المبارک کو یوم القدس منایا جا رہا ہے۔شیعہ سنی یوم القدس کے موقع پر مظلومین جہاں کی حمایت اور ظالموں سے نفرت کا مل کر اظہار کریں گے۔دعوت افطار میں علامہ مرزا یوسف حسین،علامہ باقرعباس زیدی، علامہ نقی نقوی، علامہ مختار امامی، علامہ صادق جعفری، ایس ایم نقی، شمس الحسن شمسی، غفران مجتبٰی، رضی حیدر سمیت مختلف شیعہ تنظیموں کے رہنماؤں، ماتمی انجمنوں، ٹرسٹیز ، سیاسی ،سماجی و صحافی حضرات کی بڑی تعداد نے شریک کی۔

وحدت نیوز(کراچی)مجلس وحدت مسلمین ضلع شرقی کراچی کی جانب سے کیتھولک گرائونڈ سولجر بازار میں 8 واں سالانہ سلسلہ معارف قرآن پروگرام جاری ہے ۔ معارف قرآن پروگرام کے14ویں روز علامہ سید کاظم عباس نقوی نے سورہ روم کی آیتوں کی تشریح بیان کرتے ہوئے کہا کہ دینی تبلیغات میں بیٹیوں کا کردار زیادہ اہم ہے ۔بیٹیوں کی اچھی تربیت کرنے والے پر جنت واجب  ہے ۔اس کی وجہ یہ ہے کہ معاشرے کو الہیٰ اور دینی بنانے میں خواتین کا کردار اہم ہے ۔اولاد کی کثرت اور قبیلوں کی وجہ سے کسی کا نام باقی رہنے کا کوئی ثواب نہیں ہے ۔ابتر ہونے کا تعلق نسل سے نہیں ہے ۔البتہ گزشتہ انبیاؑ سے جو سلسلہ چلا آرہا تھا اس میں نسل کا ایک کردار رہا تھا ۔

انہوں نے کہا کہ نبی ؐ کے لئے بیٹے کے نہ ہونے کا ایک زمینی امکان یہ ہے کہ اس سلسلہ کو ختم کردیا جائے ۔اس بات کی جانب اہلسنت علماء نے بھی اتفاق کیا ہے۔ امام حسن ؑ کی ولادت پر رسول خداؐ ؐنےخوشی کا اظہار کیا ۔رسول خداؐ ؐکی امام حسن ؑ سے محبت سے کوئی مسلمان انکار نہیں کرسکتا ۔امام حسن ؑ پر ذرا سی تکلیف بھی رسول خدا ؐ کو برداشت نہیں تھی ۔امام حسن ؑ رسول خدا ؐ کی نماز کے دوران ان کی پشت پر بعض دفعہ بیٹھ جایا کرتے تھے۔امام حسن ؑ نے قلم کی زد سے ثابت کردیا کہ وہ نظام جو ثقیفہ میں رکھا گیا وہ باطل تھا ۔امام حسن ؑ نے اپنی اولاد کی ایسی تربیت کی کہ آئندہ کئی سالوں تک ان کی اولادوں نے ولایت کے لئے جدوجہد کا سلسلہ جاری رکھا ۔

وحدت نیوز(کوئٹہ) فلسطین فاونڈیشن کے زیر اہتمام کوئٹہ پریس کلب میں یکجہتی فلسطین کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس میں مختلف سیاسی و مذہبی جماعتوں کے رہنماؤں نے شرکت کی۔کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان علامہ مقصودعلی ڈومکی نے کہا کہ مغربی سامراج انسانیت کا دشمن ہے۔ 39 ملکی اتحاد گزشتہ سات سال سے امریکہ کی چھتری تلے کام کر رہا ہے۔مسلم اتحاد کے نام پر یمن میں خونریزی کی جا رہی ہے۔ مختلف ممالک میں موجود ہمارے سفارت خانوں کو فلسطین کی آزادی پر واضح موقف اختیار کرنا چاہیے۔ہمیں مسئلہ فلسطین اور کشمیر پر عالمی رائے عامہ کو ہموار کرنا ہو گا۔مسئلہ فلسطین ظالم اور مظلوم کا مسئلہ ہے۔دنیا میں کہیں بھی ظلم ہو بحیثیت مسلمان احتجاج ہمارا فرض ہے۔

تحریک اسلامی کے صوبائی رہنما سید رضا اخلاقی نے کہا کہ مسئلہ فلسطین پر ملک کی تمام سیاسی و مذہبی جماعتیں ایک ہیں اسرائیل ملت اسلامیہ کو کمزور کرنے کی سازش کر رہا ہے دوسری جنگ عظیم کے بعد اسرائیل کو خطہ میں پلانٹ کیا گیا۔مسئلہ فلسطین کے حوالے سے ہماری حکومت موثر کردار ادا نہیں کر رہی۔ہم فلسطین کاز کی خاطر اپنی جان دینے کیلئے بھی تیار ہیں۔

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے جماعت اسلامی کے صوبائی امیر مولانا عبدالحق ہاشمی نے کہا کہ کشمیر و فلسطین میں انسانی حقوق کی بدترین پامالی کی جا رہی ہے۔قائد اعظم محمد علی جناح نے اسرائیل کو امریکہ و برطانیہ کی ناجائز اولاد قرار دیا تھا۔ہمارے حکمران  اسرائیل کو تسلیم کرنے کے خواب نہ دیکھیں عوام ایسے کبھی قبول نہیں کرے گی۔

کانفرنس سے سابق سینیٹر میر مہیم خان بلوچ ،بلوچستان نیشنل پارٹی کے رہنما عبدالواحد بلوچ، بی این پی رہنما مبارک علی ہزارہ، اتحاد تاجران بلوچستان کے سرپرست حاجی طاہر نظری، الخدمت فاونڈیشن بلوچستان کے صدر جمیل احمد کرد اور گرین پاکستان پارٹی کے چیرمین عبدالھادی کاکڑ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ فلسطین کاز کے لئے جدوجہد کرنے وقت کی اہم ترین ضرورت ہے۔

 کانفرنس سے مجلس وحدت مسلمین کوئٹہ کے ارباب لیاقت علی ہزارہ اور معروف دانشور امان اللہ شادیزئی کا کہنا تھا کہ فلسطین اور کشمیر کا مسئلہ عالم اسلام کا بنیادی مسئلہ ہے۔امام خمینی نے ایران میں اسرائیل کا سفارتخانہ یاسر عرفات کو دیا۔مسئلہ فلسطین کا حل عملی جدوجہد کے بغیر ممکن نہیں۔یہودو نصاریٰ نے دنیا پر قبضہ کرنے سازش کی۔فلسطین،شام، لبنان، ایران، پاکستان کے خلاف عالمی استعماری طاقتیں سازش کر رہی ہیں۔چند عرب حکمران اپنی بقاء کا ضامن اسرائیل کو۔سمجھ رہے ہیں۔خطے میں گریٹر اسرائیل کی سازش ناکام ہوگئی۔لبنان اور شام سے جنگی شکست  کے بعد اب اسرائیل کی سازشیں ناکام ہورہی ہیں۔

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان پیٹریاٹک یوتھ کے چیرمین معراج خان کاکڑ نے کہا کہ پوری دنیا کے مسلمان فلسطین کی آزادی کیلئے اسرائیل کے خلاف مشترکہ جدوجہد کریں۔یکجہتی فلسطین کانفرنس میں علامہ مقصودعلی ڈومکی نے مشترکہ قرارداد پیش کی جس میں کہا گیا کہ فلسطین فلسطینیوں کا وطن ہے، اسرائیل فلسطین پر قائم کی جانے والی صہیونیوں کی ایک ناجائز اور غاصب ریاست ہے۔ بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح سے تجدید عہد کرتے ہوئے فلسطین کاز اور قبلہ اوّل بیت المقدس کی بازیابی کے لئے تحریک آزادی فلسطین و قدس کی حمایت جاری رکھیں گے۔کشمیر پاکستان کی شہ رگ حیات ہے اور فلسطین عالم اسلام کا قلب ہے۔ کشمیر و فلسطین میں جاری صہیونی اور بھارتی ظلم و بربریت کے خلاف فلسطینی و کشمیری عوام کی انسانی و اسلامی بنیادوں پر حمایت  جاری رکھی جائے گی۔

قرارداد میں کشمیر میں جاری بھارتی ریاستی دہشت گردی کی شدید مذمت  اور کشمیری عوام کے حق خود ارادیت کی حمایت کا بھی اعلان کیا گیا۔قرارداد میں کہا گیا کہ امریکی سرپرستی میں عرب ممالک اور اسرائیل کے مابین طے کردہ“ابراہیمی معاہدہ”فلسطین اور عرب دنیا کے لئے زہر قاتل ہے۔ عرب دنیا کے ساتھ اسرائیل کے دوستانہ تعلقات نہ صرف فلسطین بلکہ پوری مسلم اُمّہ کے ساتھ خیانت ہیں۔ بحرین، مصر، مراکش، متحدہ عرب امارات کے وزرائے خارجہ کا امریکی و صہیونی وزرائے خارجہ کے ہمراہ فلسطینیوں کے قاتل صہیونی وزیر اعظم بن گوریون کی قبر پر حاضری سے پاکستان سمیت دنیا بھر کے مسلمانوں کے جذبات مجروح ہوئے ہیں، ہم اس اقدام کی شدید مذمت کرتے ہیں۔ مخصوص عرب اور غیر عرب ریاستوں کی جانب سے پاکستان پر اسرائیل کے ساتھ تعلقات قائم کرنے کے لئے دباؤ کی بھی مذمت کرتے ہوئے اسے مسترد کیا گیا اور کہا گیا کہ اسرائیل کے ساتھ دوستانہ تعلقات قائم کرنے والے ممالک سے مطالبہ کرتے ہیں فی الفور اپنے اقدام پر نظر ثانی کریں اور اسرائیل کے ساتھ تمام سفارتی و تجارتی تعلقات کو منقطع کریں۔

حکومت پاکستان ملک میں اسرائیلی لابنگ کرنے والے عناصر کی بیخ کنی کرنے کے لئے حکمت عملی وضع کرے۔فلسطینی علاقہ غزہ کی پٹی کا محاصرہ ختم کیا جائے-مسئلہ فلسطین اور مسئلہ کشمیر پر عالمی برادری کے دوہرے معیار کی مذمت کرتے ہیں۔ فلسطین و کشمیر کے ساتھ ساتھ یمن، افغانستان، عراق، لیبیا اور دیگر مقامات پر عالمی اداروں کی بے حسی استعماری قوتوں کے حوصلہ کا باعث بن رہی ہے۔ اقوام متحدہ اور او آئی سی سمیت عالمی ادارے فلسطین اور کشمیر جیسے مسائل کے منصفانہ حل میں ناکام ہو چکے ہیں۔اسرائیلی مظالم کا ڈٹ کر مقابلہ کرنے والے نہتے اور مظلوم فلسطینیوں کی مزاحمت کاری کی بھرپور حمایت کرتے ہیں۔ ہم حکومت پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ماہ رمضان المبارک کے آخری جمعہ کو ملک بھر میں یوم القدس کے طور پر سرکاری سطح پر منایا جائے گا۔

وحدت نیوز(کوئٹہ) ماہ مبارک رمضان ماہ نزول قرآن کریم کی مناسبت سے خانہ فرھنگ کوئٹہ کے زیر اہتمام علامہ اقبال لائبرری میں محفل قرآن کریم منعقد ہوئی۔ محفل قرآنی میں شیعہ سنی قاریان قرآن کریم علمائے کرام اور سیاسی مذہبی رہنما شریک ہوئے۔

محفل قرآنی میں جماعت اسلامی بلوچستان کے صوبائی امیر مولانا عبدالحق ہاشمی، ایم ڈبلیو ایم کے رہنما علامہ سید ہاشم موسوی ،علامہ ولایت حسین جعفری،علامہ مقصودعلی ڈومکی ،کونسل جنرل اسلامی جمہوریہ ایران آقای درویش وند ،جماعت اھل سنت کے صوبائی صدر پیر سید حبیب اللہ شاہ چشتی، ڈائریکٹر خانہ فرھنگ آقای تقی زادہ واقفی ،ممتازعالم دین علامہ جمعہ اسدی و دیگر شریک ہوئے۔

اس موقع پر مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان علامہ مقصودعلی ڈومکی نے محفل قرآن کریم کے انعقاد کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ ماہ رمضان بہار قرآن کا مہینہ ہے۔ قرآن کریم کی تلاوت باعث ثواب قرآن سمجھنا باعث ھدایت اور قرآن پر عمل کرنا باعث نجات ہے۔انہوں نے کہا کہ مساجد مدارس اور امام بارگاہوں میں قرآنی محافل کا اہتمام کرکے لوگوں میں قرآن فہمی کو عام کیا جائے۔

انہوں نے کہا قائد شہید علامہ سید عارف الحسینی کے فرمان کے مطابق 23 تا 27 رمضان المبارک کو ھفتہ نزول قرآن کے طور پر منایا جائے اور قرآن کریم کو اپنی عملی زندگی میں نافذ کرنے کا عہد کیا جائے۔ نوجوان نسل قرآن فہمی پر خصوصی توجہ دے۔انہوں نے کہا کہ کریم آل محمد امام حسن مجتبی ع کی سیرت طیبہ قرآن کریم کی عملی تفسیر ہے آپ کی مدح قرآن کریم کی آیات نازل ہوئیں۔

وحدت نیوز(ملتان) امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن ملتان کے ڈویژنل صدر ڈاکٹر جوہر عباس نے وفد کے ہمراہ مجلس وحدت مسلمین جنوبی پنجاب کے صوبائی رہنما و پرنسپل جامعہ شہید مطہری علامہ قاضی نادر حسین علوی کو متحدہ علماء بورڈ پنجاب کا ممبر مقرر ہونے پر مبارکباد دی، اس موقع پر آئی ایس او ملتان کے ڈویژنل کابینہ کے دیگر اراکین بھی موجود تھے۔

آئی ایس او ملتان ڈویژنل صدر ڈاکٹر جوہر عباس نے علامہ قاضی نادر حسین علوی کے ممبر متحدہ علماء بورڈ مقرر ہونے پر اسے خوش آئند قرار دیا اور کہا کہ علامہ قاضی نادر حسین علوی جنوبی پنجاب کی ایک توانا آواز ہیں اور جنوبی پنجاب کے بہتر نمائندگی کر سکتے ہیں۔ اُنہوں نے اُمید ظاہر کی کہ متحدہ علماء بورڈ میں کتابت اور سوشل میڈیا کی آڑ مین شیعہ نوجوانوں کے خلاف ہونے والی یکطرفہ کاروائیوں کی روک تھام  کے لیے اپنا کردار ادا کریں گے۔

وحدت نیوز(کوئٹہ) مجلس وحدت مسلمین ضلع ہزارہ ٹاون کی کابینہ کا اہم اجلاس مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین پاکستان و سابق صوبائی وزیر قانون بلوچستان جناب سید محمد رضا کی زیر صدارت ضلعی دفتر میں منعقد ہوا جس میں جناب استاد علی مدد صاحب، جناب کربلائی محمد خان صاحب نے اپنے یونٹ کے اراکین کیساتھ اور جناب شیخ بوستان صاحب نے اپنے دوستوں کے ھمراہ MWM میں شمولیت کا با قاعدہ اعلان کرتے ھوئے MWM پاکستان کی مرکزی قیادت اور آغا رضا کی بے لوث خدمات پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا، میٹنگ میں موجودہ سیاسی صورت حال پر گفت وشند کی گئی۔

وحدت نیوز(رپورٹ عدیل زیدی) پاراچنار کو ملک میں شیعہ نشین علاقہ اور افغان سرحد سے متصل ہونے کی وجہ سے مذہبی و اسٹریٹیجک اہمیت حاصل ہے، گذشتہ دنوں خیبر پختونخوا کے مختلف اضلاع میں بلدیاتی انتخابات کا دوسرا مرحلہ منعقد ہوا، ان اضلاع میں ضلع کرم بھی شامل تھا۔ پاراچنار اپر کرم میں شامل ضلع کا ہیڈکوارٹر شمار ہوتا ہے، اپر کرم کی میئر کی نشست پر بلدیاتی انتخاب غیر معمولی اہمیت اختیار کر گیا تھا، اس کی وجہ پاکستان تحریک انصاف اور پاکستان پیپلزپارٹی کیساتھ ساتھ شیعہ نمائندہ جماعت مجلس وحدت مسلمین پاکستان کا اس میدان میں وارد ہونا تھا، انتخابی مہم کے آغاز میں سیاسی پنڈت یہ پیشن گوئیاں کر رہے تھے کہ اصل مقابلہ روایتی حریف پی ٹی آئی اور پی پی کے درمیان ہوگا۔ واضح رہے کہ پاراچنار سے منتخب رکن قومی اسمبلی (ساجد حسین طوری) کا تعلق پیپلزپارٹی اور رکن صوبائی اسمبلی سید اقبال میاں کا تعلق پاکستان تحریک انصاف سے ہے۔

مجلس وحدت مسلمین کی جانب سے میئر کی نشست کیلئے علاقہ کے نوجوانوں کی ہردلعزیز شخصیت مولانا مزمل حسین کا انتخاب کیا گیا، جبکہ دیگر اہم امیدواروں میں تحریک انصاف کی جانب سے سید جعفر حسین اور پیپلزپارٹی کی طرف سے ارشاد حسین امیدوار تھے، ان تین امیدواروں کے درمیان ہی اصل مقابلہ کی توقع کی جا رہی تھی۔ انتخابی مہم جوں جوں آگے بڑھتی گئی، مولانا مزمل حسین کی پوزیشن مضبوط سے مضبوط تر ہوتی گئی۔ پولنگ کے روز مولانا مزمل حسین نے اپنے مدمقابل مضبوط امیدواروں کو اپ سیٹ شکست دیتے ہوئے بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کی۔ ایم ڈبلیو ایم کے نامزد امیدوار نے ریکارڈ ساز 34 ہزار سے زائد ووٹ حاصل کئے، جبکہ ان کے مدمقابل تمام امیدوار ملاکر بھی اتنی تعداد میں ووٹ حاصل کرنے میں ناکام رہے۔ ایم ڈبلیو ایم کی پاراچنار جیسے اہم علاقہ میں اتنی بھاری لیڈ کیساتھ کامیابی نے ایک طویل عرصہ بعد علاقہ میں مذہبی و سیاسی حیثیت سے اپنا کردار ادا کرنے کی ایک روایت کو تقویت بخشی۔

واضح رہے کہ پاراچنار میں دہشتگردی، امن و امان اور زمینوں کے مسائل کیساتھ ساتھ ایک اہم مسئلہ داخلی سطح پر سادات و غیر سادات کے حوالے سے رہا ہے، تاہم علاقہ کے بزرگ و ذمہ دار علمائے کرام، مذہبی شخصیات اور عمائدین کی کوششوں سے کافی حد تک اس فتنے کا سر کچلا جا چکا تھا، تاہم مولانا مزمل حسین کی فتح نے اس ’’تعصب کے تابوت‘‘ میں آخری کیل بھی ٹھونک دی۔ مولانا مزمل حسین ایک غیر سادات مذہبی گھرانے سے تعلق رکھتے ہیں، تاہم ان کو سادات قبائل نے دل کھول کر ووٹ دیکر دشمن کی اس داخلی تفریق کی کوشش کو ہمیشہ کیلئے دفن کر دیا۔ اس کے علاوہ مولانا مزمل کی کامیابی ملک گیر شیعہ جماعت (مجلس وحدت مسلمین) پر علاقہ کے عوام کا اعتماد اس جانب واضح اشارہ ہے کہ اگر مذہبی جماعتیں واضح ویژن، مضبوط امیدوار اور اپنی ملی خدمات کے عوض سیاسی میدان میں اتریں تو انہیں بھی کامیابی مل سکتی ہے۔

پاراچنار میں میئر اپر کرم کی نشست پر کامیابی خود مجلس وحدت مسلمین کیلئے ایک ٹیسٹ کیس کی حیثیت رکھتی ہے، اب علاقہ کی ترقی اور عوامی مسائل کے حوالے سے ایم ڈبلیو ایم کو ثابت کرنا ہوگا کہ مذہبی، سیاسی جماعتیں بھی سیاسی میدان میں اپنا وہی رول ادا کرسکتی ہیں، جو ویژن اور خط شہید قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید عارف حسین الحسینی (رہ) نے 80ء کی دہائی میں پاکستان کی ملت جعفریہ کو دیا تھا۔ لہذا جس طرح سیاسی میدان میں وارد ہونے سے قبل مولانا مزمل حسین نے علاقہ کے عوام کی بے لوث خدمت کی اور ملت کے اتحاد کیلئے کردار ادا کیا، بھاری اکثریت سے میئر منتخب ہونے کے بعد عوام کی ان سے توقعات میں دوگنا اضافہ ہوگیا ہے۔ اس کردار کی کامیابی کی صورت میں ضلع کرم کے مستقبل کے سیاسی منظر نامہ میں مجلس وحدت مسلمین اپنا ایک مستقل مقام بنانے میں بھی کامیاب ہوسکتی ہے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے نواسہ رسول ﷺ حضرت امام حسن مجتبیٰ علیہ السلام کے یوم ولادت کے موقع پر محبان اہلبیت ؑ کو مبارکباد پیش کی ہے۔انہوں نے کہا کہ امام برحق کا حکیمانہ طرز زندگی رہتی دنیا تک ہمارے لیے مشعل راہ ہے۔آپ اپنے دور میں حق و صداقت کے سب سے بڑے علمبردار تھے۔امام حسن علیہ السلام نے ا پنے عمل سے یہ ثابت کیا کہ ظاہری جاہ و منصب سے تو دستبردار ی اختیار کی جا سکتی ہے لیکن راہ حق سے ایک لمحے کے لیے بھی غافل نہیں ہوا جا سکتا۔امام حسن علیہ السلام نے سیاسی تدبر اور حکمت عملی سے اپنے محبین کو ان کی جانوں اور ناموس کا تحفظ فراہم کیا۔امام ع کی سیرت سے ہمیں یہ درس ملتا ہے کہ اپنی قوم کی جانوں کا دفاع ہر عہدے اور ہر اختیار پر مقدم ہے۔ حکومت کے ہر تعلق ہر عہدے سے دستبردار تو ہوا جا سکتا ہے لیکن  قوم  کے حقوق کی پاسداری سے ایک انچ بھی پیچھے نہیں ہٹا جا سکتا۔

انہوں نے کہا کہ قوم کی اپنے رہبر کے ہمراہ میدان عمل میں موجودگی مقصد کی کامیابی کی ضمانت سمجھی جاتی ہے۔وہ قوم کبھی باوقار مقام نہیں حاصل کر سکتی جو عمل سے کترائے اور زبانی جمع خرچ سے منزل کی جستجو کرے۔اگر قوم وفا نہ کرے تو امام حسن علیہ السلام جیسے عظیم رہنما کو بھی تنہائی کا صدمہ جھیلنا پڑتا ہے اور دشمن کو اپنے مکر وفریب میں کامیابی حاصل ہوتی ہے،حق بات پر استقامت دکھانا اہل بیت اطہار علیہم السلام کا شعار ہے۔ مظلوم کی حمایت اور ظالم کی مخالفت ان ہستیوں کا ہمیں سکھایا ہوا درس ہے۔انہوں نے کہا کہ امام حسن علیہ السلام کے یوم ولادت کی مناسبت سے مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی،صوبائی اور ضلعی دفاتر میں تقاریب کا انعقاد کیا جائے گا۔

وحدت نیوز(اسلام آباد)مادرِسماجیات بیگم بلقیس ایدھی کی وفات پر مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین کی رہنماؤں اور اراکین اسمبلی نے دلی افسوس اور رنج کا اظہار کیا ہے ۔

مرکزی سیکرٹری جنرل ایم ڈبلیو ایم شعبہ خواتین و ممبر پنجاب اسمبلی محترمہ سیدہ زہرا نقوی نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہا کہ معروف سماجی کارکن عبدالستار ایدھی مرحوم کی زوجہ  بلقیس ایدھی کی وفات کا سن کر بہت افسوس ہوا بلقیس ایدھی نے پاکستانی معاشرے میں سماجی خدمات کی اعلی ترین مثال قائم کی ھے انہوں نے بے شمار یتیم بچوں کے سر پر دست شفقت رکھا اور ان کی کفالت کی اس عظیم کار خیر میں آپ ہمیشہ آپنے مرحوم شوہر کے شانہ بشانہ رہیں قوم ان کی بے لوث خدمات کو ہمیشہ یاد رکھے گی اللہ تعالی بلقیس ایدھی مرحومہ کے درجات بلند فرماے اور انکے نیک اعمال پر اجر انہیں عظیم عطا فرماے۔ آمین

دوسری جانب ممبر گلگت بلتستان اسمبلی و سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان شعبہ خواتین کنیز فاطمہ نے کہا کہ انسانیت کی خدمت کا روشن ستارہ بلقیس ایدھی کی وفات پر دل مغموم ہے۔ بلقیس ایدھی ایک غریب پرور خاتون تھیں ایک خاتون ہوتے ہوے اپنے شوہر ایدھی صاحب کے انسانیت کی خدمت کا مشن جاری رکھا , انہوں نے جس طرح اپنی زندگی بے کس اور نادر انسانوں کی فلاح کے لیے وقف کی وہ ہم سب کے لیے مشعل راہ ہے, انکی خدمات پر انہیں خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ آج ہم ایک باہمت خاتون اور ایک غریب پرور ادارے سے محروم ہوگٸے,بیگم بلقیس ایدھی جنہوں نے اپنے عظیم شوہر کے شانہ بشانہ انسانیت کے لیے عظیم کام کیا بلاشبہ دونوں میاں بیوی کا وجود انسانیت کے لیے سرمایہ تھا اور ان کا ذکر انکی داستان بھی ہمیشہ انسانیت کیلئے سرمایہ رہے گی۔

Page 10 of 1221

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree