The Latest

وحدت نیوز(ملتان)مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی کال پر یکم اپریل جمعہ کو ملک بھر میں متنازعہ یکساں قومی نصاب کے خلاف یوم احتجاج منایا جائے گا، جنوبی پنجاب کے تمام چھوٹے بڑے شہروں میں نماز جمعہ کے بعد احتجاجی مظاہرے اور ریلیاں نکالی جائیں گی۔ جنوبی پنجاب کی مرکزی احتجاجی ریلی نماز جمعہ کے بعد امام بارگاہ ابوالفضل العباس سے چوک کمہارانوالہ تک نکالی جائے گی، ریلی میں ایم ڈبلیو ایم کے علاوہ دیگر مذہبی رہنماء شرکت اور خطاب کریں گے۔ واضح رہے کہ ایم ڈبلیو ایم کے پلیٹ فارم سے یکساں قومی نصاب میں موجود متنازعہ نکات کے خلاف احتجاجی مظاہروں اور ریلیوں کی کال دی گئی ہے۔

وحدت نیوز(ملتان) مجلس وحدت مسلمین جنوبی پنجاب کے صوبائی سیکرٹریٹ کا باقاعدہ افتتاح یکم اپریل جمعۃ المبارک کو ہوگا، سیکرٹریٹ کا افتتاح ایم ڈبلیو ایم پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ سید احمد اقبال رضوی کریں گے، اس موقع پر مرکزی سیکرٹری سیاسیات سید اسد عباس نقوی، علامہ اقتدار حسین نقوی اور دیگر صوبائی رہنماء بھی موجود ہوں گے۔

ایم ڈبلیوایم جنوبی پنجاب کا صوبائی سیکرٹریٹ گلشن واحد فیز 1، نزد حمیدہ رشید انسٹیٹیوٹ ننگانہ چوک پر واقع ہے، محل وقوع کے اعتبار سے صوبائی سیکرٹریٹ ملتان کے عین وسط میں بنایا گیا ہے، افتتاح کے موقع پر مسجد و امام بارگاہ ولی العصر میں نماز جمعہ کا بھی افتتاح کیا جائے گا۔

وحدت نیوز(چنیوٹ) مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین چینیوٹ کی جانب سے منجی بشریت و شہداء اسلام کے عنوان سے سالانہ ایک روزہ کنونشن ٹھٹھی شرقی امامبارگاہ چینیوٹ میں منعقد ہوا ، کنونشن میں ضلع چینیوٹ کے تمام یونٹس سے بھرپور شرکت تھی منجی بشریت و شہداے  اسلام کنونشن میں مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین کی مرکزی سیکرٹری جنرل و رکن صوبائی اسمبلی محترمہ سیدہ زہرا نقوی ، اور مرکزی سیکرٹری تنظیم سازی محترمہ معصومہ نقوی نے خصوصی شرکت کی۔

 اپنے خطاب میں سیدہ زہرا نقوی نے کہا کہ اگر ہماری قوم اخلاص قلبی کیساتھ متحد ہوجاے تو کسی میں جرات نہ ہو کہ ہمیں اس بے دردی سے شہید کرے ، یہ ہمارے اختلافات اور کمزوریاں ہیں جن سے ہمارا دشمن فائدہ اٹھاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم اپنے امام عج کے منتظر تو ہیں لیکن کیا ہم نے ان کی آمد کے لیے اپنی سرزمین کو تیار کر لیا ہے؟  ہم بے شمار قربانیاں دینے کے باوجود اب تک امام کے ظہور کے لیے آمادہ نہیں ہوسکے کیونکہ ہم متحد نہیں ہیں ہمیں دشمن کی سازشوں کو ناکام بنانے کے لیے بصیرت، حکمت اور آپس میں وحدت قائم کرنے کی ضرورت ہے تاکہ خدا کی آخری حجت کے ظہور کے لیے اپنی سرزمین کو تیار کر سکیں۔

 کنونشن کے دوران ایم ڈبلیو ایم شعبہ خواتین چینیوٹ کی خواہران نے شہداے پشاور کے حوالے سے زبردست خاکہ پیش کیا جبکہ جامعہ بعثت کی طالبات نے بھی بہترین انداز میں انقلابی ٹیبلو پیش کیا۔

وحدت نیوز (گلگت) ہفتہ نصاب کے حوالے سے مرکزی سیکریٹری یوتھ مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین محترمہ سائرہ ابراہیم کی صدارت میں وحدت سیکریٹریٹ میں یوتھ کمیٹی گلگت کا اہم اجلاس منعقد ہو۔

انہوں نے کہا کہ ملت تشیع علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی قیادت میں نصاب  کے مسئلے پر شانہ بشانہ کھڑی ہے، 1975 کے نصاب کے طرز پر نصاب ترتیب دیا جائے۔ ایسے میں گلگت بلتستان کی عوام اپنی آواز بلند نہ کریں ایسا ممکن نہیں ہے۔

 اجلاس میں پروگرام کا لائحہ تیار کیا گیا انشااللہ 31 مارچ بروز جمعرات کو گلگت میں ہفتہ نصاب منعقد کیا جائے گا جس میں گلگت بھر سے معلمات اور اساتذہ شرکت فرمائیں گے۔

وحدت نیوز(کوئٹہ)مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان اور نصاب کمیٹی کے کنوینیر مقصود علی ڈومکی نے بلوچستان شیعہ کانفرنس کے صدر حاجی جواد رفیعی مسجد ولی عصر ہزارہ ٹاون کوئٹہ کے خطیب مولانا عارف قزلباش اور مسجد امام زمانہ علیہ السلام کے خطیب مولانا افضلی سے ملاقات کی اور انہیں 2  اپریل کو کوئٹہ میں متنازعہ نصاب تعلیم کے حوالے سے ہونے والی شیعہ قومی کانفرنس میں شرکت کی دعوت دی۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے مقصودعلی ڈومکی نے کہا کہ شیعہ قومی کانفرنس قومی وحدت اور بیداری کا اظہار ہوگی۔ پاک وطن کے باوفا بیٹوں کو دیوار سے لگانے کی سازش کو ناکام بنائیں گے۔

مقصود علی ڈومکی نے کہا کہ نصاب تعلیم اہم قومی مسئلہ ہے.فرقہ وارانہ متعصبانہ اور غیر آئینی نصاب تعلیم ہمیں منظور نہیں ہے۔آئین پاکستان ہر شہری کی مذہبی آزادی کا محافظ ہے۔ پاکستان کے کروڑوں شہریوں کا مطالبہ ہے کہ ہمیں ایسا نصاب تعلیم چاہیے جو عظمت حضرت سید الانبیاء محمد مصطفی ص اور سیرت طیبہ کا عکاس ہو۔آئمہ اھل البیت کی پاکیزہ سیرت اور تعلیمات پر مشتمل ہو۔ اصحاب باوفا کی عظیم قربانیوں اور سبق آموز واقعات پر مشتمل ہو۔ اتحاد بین المسلمین اور اسلامی اخوت کا آئینہ دار ہو۔ دھشت گردی اور ظلم و ظالم سے نفرت کا عکاس ہو۔ہم نئے متنازعہ غیر آئینی نصاب تعلیم کو مسترد کرتے ہوئے  1975 کے نصاب تعلیم کی بحالی کا مطالبہ کرتے ہیں۔ اس لئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان نے ہر صوبے میں شیعہ قومی کانفرنس طلب کی ہے تاکہ ملک بھر کے شیعہ علماء خطباء ذاکرین مسولین مدارس ماہرین تعلیم اور تنظیمی نمائندے مل بیٹھ کر نصاب پر مشاورت کریں اور آئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کریں۔انہوں نے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین ملت کی نمائندہ قومی جماعت کی حیثیت سے ملت کے حقوق کے حصول کے لئے مسلسل میدان عمل میں ہے۔  نصاب تعلیم حساس مسئلہ ہے۔ اصلاح نصاب کے سلسلے میں ایم ڈبلیو ایم کی کاوشیں جاری ہیں۔ نصاب تعلیم سے قوم کا مستقبل وابستہ ہے تعلیمی نصاب میں ملت جعفریہ کو مکمل طور پر نظر انداز کیا گیا ہے جو کہ افسوس ناک ہے۔

وحدت نیوز(کوئٹہ) جامع مسجد وامام بارگاہ کلاں کوئٹہ میں ھفتہ نصاب کے موقع پر مومنین کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی نصاب کمیٹی کے کنوینیر مقصودعلی ڈومکی نے کہا ہے کہ مذہب کی تعلیم ہر بچے کو اس کے اپنے مکتب فکر کے عقائد، حدیث اور فقہ کے مطابق پڑھائی جائے جس کے لیے نصاب سازی، درسی کتب کی تدوین، تدریس اور امتحانی نظام کی تشکیل میں ہر مکتب فکر کے جید علماء شامل کئے جائیں۔آئین مذہبی تعلیم کے حوالے سے کسی ایک مسلک کی تعلیمات کو کسی دوسرے مسلک پر مسلط کرنے سے منع کرتا ہے لہذا نصاب میں مذہبی تعلیمات شامل کرتے ہوئے اس آئینی اصول کو ملحوظ رکھا جائے۔مذہب کی تعلیم کے لیے شیعہ بچوں کے لیے 1975 کے نصاب کی طرز پر علیحدہ نصاب ترتیب دیا جائے۔اسلامیات کے نصاب سے متنازعہ شخصیات کے ابواب حذف کیے اور ان کی جگہ مسلمہ اور متفقہ اسلامی شخصیات شامل کی جائیں۔ مختلف نصابی کتب سے دل آزار مواد کو نکالا اور صرف مشترکہ اور متفقہ مذہبی مواد شامل کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ امام مہدی عج مسلمانوں کا متفقہ اور مسلمہ عقیدہ ہے اسے مستقبل کی امید اور مسلمانوں کی عظمت رفتہ کی بحالی کے تناظر میں نصاب میں شامل کیا جائے۔ درود شریف کی عبارت میں تبدیلی سنت نبوی اور کئی سو سالوں کی امت مسلمہ کی روایت کے خلاف ہے اس تبدیلی کو واپس لیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ نصاب کے لیے متعارف کروائے گئے اقداری نظام پر نظر ثانی اور اسے علامہ اقبال رح کے اسلامی اقداری نظام سے ہم آہنگ کیا جائے اور اس میں خودی، غیرت، حمیت، ظالم سے نفرت اور مظلوم کی حمایت، شجاعت، حریت اور سماجی انصاف جیسی اعلی اقدار شامل کی جائیں اور نصاب و درسی کتب میں اس کے مطابق تبدیلی کی جائے۔اہل بیت اطہار خصوصاً آئمہ اہل بیت کی تعلیمات امت مسلمہ کا متفقہ اور قیمتی ورثہ ہے نصاب میں آئمہ اہل بیت کی اخلاقی، سماجی، فقہی، اور روحانی تعلیمات کو شامل کیا جائے۔ اہل بیت اطہار کی شان و منزلت قرآن و سنت میں ثابت اور مسلمانوں کے نزدیک اس پر کوئی اختلاف نہیں ہے لہذا اہل بیت اطہار کے نام سے نصاب میں باقاعدہ باب قائم کیے اور ان کی شان و منزلت اور دین اسلام کے لیے قربانیوں و خدمات کو پیش کیا جائے۔

وحدت نیوز(کوئٹہ )مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان علامہ مقصود علی ڈومکی، مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل آغا رضا، رکن شوریٰ عالی علامہ سید ہاشم موسوی اور دیگر نے کوئٹہ پریس کلب میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کو شیعہ سنی مسلمانوں نے اپنے خون سے بنایا ہے۔

انہوں نے کہا کہ 21 اگست 2020 کو وزارت مذہبی امور نے امت مسلمہ میں رائج درود پاک کو بدلنے کی کوشش کی۔ وزارت مذہبی امور کے اس نوٹیفکیشن کو فوری طور پر منسوخ کیا جائے۔ قومی اسمبلی اور سینیٹ میں ایسی قانون سازی سے اجتناب کیا جائے۔

 انہوں نے کہا کہ کسی شیعہ کو ہاتھ باندھ کر نماز یا کسی سنی کو ہاتھ کھلے رکھ کر نماز پڑھنے پر مجبور نہیں کیا جاسکتا۔ متنازعہ نصاب کے حوالے سے 27 مارچ سے 2 اپریل تک ہفتہ نصاب منارہے ہیں۔

 انہوں نے مزید کہا کہ یکم اپریل کو متنازعہ نصاب کیخلاف ملک گیر یوم احتجاج منائیں گے۔ متنازعہ نصاب کیخلاف 2 اپریل کو کوئٹہ جبکہ 10 اپریل کو لاہور میں صوبائی تعلیمی کانفرنسز منعقد کریں گے۔

وحدت نیوز(ملتان) مجلس وحدت مسلمین ملتان غازی آباد یونٹ کا اجلاس مسجد آل محمد غازی آباد میں منعقد ہوا، اجلاس میں ایم ڈبلیو ایم ملتان کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل مولانا ہادی حسین، ڈپٹی سیکرٹری جنرل مرزا وجاہت علی، ضلعی سیکرٹری یوتھ تیمور حسن، معاون سیکرٹری تعلیم ثقلین نقوی اور دیگر موجود تھے۔

اجلاس میں متفقہ طور پر سید دانش گردیزی کو مجلس وحدت مسلمین غازی آباد یونٹ کا سیکرٹری جنرل نامزد کیا گیا، نامزد سیکرٹری جنرل سے ایم ڈبلیو ایم ملتان کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل مولانا ہادی حسین نے حلف لیا۔ اس موقع پر سید دانش گردیزی نے کہا کہ انشاء اللہ ایم ڈبلیو ایم کے پلیٹ فارم سے قوم و ملک کی خدمت کریں گے، ماہ رمضان میں تربیتی پروگرام منعقد کیے جائیں گے۔

وحدت نیوز(جنوبی پنجاب)مجلس وحدت مسلمین ضلع علی پور کے زیراہتمام قرآن و اہلیبیت کانفرنس منعقد ہوئی، کانفرنس میں عوام کی بڑی تعداد نے شرکت کی، کانفرنس سے بزرگ عالم دین سید عالم حسین شاہ موسوی، مجلس وحدت مسلمین جنوبی پنجاب کے سیکرٹری جنرل علامہ سید اقتدار حسین نقوی، علی پور کے ضلعی سیکرٹری جنرل سید رضوان حیدر کاظمی اور دیگر نے خطاب کیا۔ علامہ سید اقتدار حسین نقوی نے اپنے خطاب میں کہا کہ اس وقت مملکت خداداد پاکستان میں مکتب اہلیبیت پر ظلم و ستم جاری ہے، ہمیں دیوار کے ساتھ لگانے کی کوشش کی جا رہی ہے جس کی واضح مثال ہمارا قتل عام کرنا ہے۔

ہماری مساجد کو جان بوجھ کر ٹارگٹ کرنا، بے گناہ نمازیوں کو شہید کیا جا ریا ہے، اس کے علاوہ یکساں نظام تعلیم کی آڑ میں فرقہ واریت کو فروغ دیا جا رہا ہے۔ مولانا سید عالم حسین موسوی نے کہا کہ اس جمعہ کو پورے ملک میں قائد وحدت راجہ ناصر عباس جعفری کے حکم پر اس یکساں نظام تعلیم کے خلاف احتجاج کریں گے اور ہم اس ملک میں قرآن و اہلیبیت کا نظام لانا چاہتے ہیں۔ آخر میں سید رضوان حیدر کاظمی نے کانفرنس میں تشریف لانے والے شرکاء کا شکریہ ادا کیا۔

وحدت نیوز (کوئٹہ) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان اور نصاب کمیٹی کے کنوینیر مقصود علی ڈومکی نے امام جمعہ ہزارہ ٹاون کوئٹہ مولانا سید حسن مبلغ ممتاز سماجی رہنما مصطفی تیموری اور نور ویلفیر کے چیرمین عامر چنگیزی سے ملاقات کی اور انہیں 2  اپریل کو کوئٹہ میں متنازعہ نصاب تعلیم کے حوالے سے ہونے والی شیعہ قومی کانفرنس میں شرکت کی دعوت دی۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے مقصودعلی ڈومکی نے کہا کہ شیعہ قومی کانفرنس قومی وحدت اور بیداری کا اظہار ہوگی۔ پاک وطن کے باوفا بیٹوں کو دیوار سے لگانے کی سازش کو ناکام بنائیں گے۔ مقصود علی  ڈومکی نے کہا کہ نصاب تعلیم اہم قومی مسئلہ ہے اس لئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان نے ہر صوبے میں شیعہ قومی کانفرنس طلب کی ہے تاکہ ملک بھر کے شیعہ علماء خطباء ذاکرین مسولین مدارس ماہرین تعلیم اور تنظیمی نمائندے مل بیٹھ کر نصاب پر مشاورت کریں اور آئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کریں۔انہوں نے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین ملت کی نمائندہ قومی جماعت کی حیثیت سے ملت کے حقوق کے حصول کے لئے مسلسل میدان عمل میں ہے۔  نصاب تعلیم حساس مسئلہ ہے۔ اصلاح نصاب کے سلسلے میں ایم ڈبلیو ایم کی کاوشیں جاری ہیں۔ نصاب تعلیم سے قوم کا مستقبل وابستہ ہے تعلیمی نصاب میں ملت جعفریہ کو مکمل طور پر نظر انداز کیا گیا ہے جو کہ افسوس ناک ہے۔

Page 14 of 1221

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree