The Latest

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے چیئرمین علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے پچاسویں یوم تاسیس کے موقع پر ہدیہ تبریک و تہنیت پیش کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ آئی ایس او کے بانیان ایسے باشعور، باکردار اور بابصیرت لوگ تھے جو حالات کے تقاضوں سے آشنا اور اپنی الہی ذمہ داریوں کا درک رکھتے تھے۔عالم استکبار و طاغوت کے خلاف مادر وطن سے اٹھنے والی پہلی توانا اور بھرپور آواز آئی ایس او کی تھی۔اس جماعت نے نوجوانوں کو جرات ،حوصلہ، بے باکی و حق گوئی سکھائی۔

انہوں نےکہا کہ آمریت کی سختیاں ہوں یا جمہوری دور حکومت کی آڑ میں فرد واحد کا فرعونی طرز عمل آئی ایس او اپنے اہداف کے حصول کے لیے پورے عزم و حوصلے کے ساتھ منزل کی جانب رواں دواں رہی۔مشترکہ اہداف اور مشترکہ آرزوؤں کی تکمیل نظم و ضبط کے بغیر ممکن نہیں۔آئی ایس او کے اندر جو نظم وضبط موجود ہے وہی اس جماعت کی  مقبولیت میں مسلسل اضافے کی وجہ ہے۔آئی ایس او نے خط ولایت کو اپنے دل و جاں سے لگایا۔ دنیا کے مادہ پرست رہبروں سے اظہار برات کرتے ہوئے فقیہ عادل، نائب امام جامع شرائط کے پرچم تلے جمع ہوئے۔انہیں یہ فخر و اعزاز حاصل ہے کہ آج بھی فقہیہ عادل کا پرچم تھامے عالمی استکباری قوتوں کے خلاف ہر پلیٹ فارم ان کی آواز گونج رہی ہے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد)مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی رہنما مقصود علی ڈومکی نے 22 مئی  امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے پچاسویں یوم تاسیس کے موقع پر کہا ہے کہ آئی ایس او نظام امامت و ولایت سے وابستہ پاکیزہ تنظیم ہے جس نے ہمیشہ ولی خدا کی اطاعت کرتے ہوئے باطل طاغوتی و شیطانی طاقتوں کے خلاف آواز بلند کی۔ اسے امامیہ جوانوں کی خوش نصیبی کہا جائے کہ انہیں قائد شہید علامہ عارف الحسینی اور شہید ڈاکٹر محمد علی نقوی جیسے عاشقان خدا کی صحبت اور رہنمائی حاصل رہی اور وہ رہبر کبیر حضرت امام خمینی رحمۃ اللہ علیہ اور رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای کے راستے کے راہی ہیں جو صراط مستقیم ہے۔ ظلم و استبداد اور تاریکی سے بھری اس دنیا میں ان خوش قسمت انسانوں کو اپنے مقدر پر ناز کرنا چاہیے جنہیں تلوار سے تیز اور بال سے باریک صراط مستقیم پر چلنے کے لئے خمینی بت شکن جیسا پیر کامل اور ولی خدا میسر آیا ہو۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کے نوجوانوں کے لئے آئی ایس او نعمت خداوندی ہے نوجوانوں کو اس الہی انقلابی تحریک کا حصہ بن کر خود سازی اور معاشرہ سازی کرنی چاہیے۔انہوں نے کہا کہ عالمی استکبار اور دشمن کی تمام تر سازشوں کے باوجود اس الہی تحریک کا پچاسواں یوم تاسیس منانا عنایت خداوندی ہے خدا ان کے ساتھ ہے جو خدا کے ساتھ ہوں۔ آئی ایس او کے بہادر جوانوں کو پچاسواں یوم تاسیس مبارک ہو۔

وحدت نیوز(لاہور)امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کی گولڈن جبلی کے موقع پر تمام پیروان ولایت و امامت کو مبارکباد پیش کرتے ہوے دختر شہید ڈاکٹر محمد علی نقوی، مرکزی صدر مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین و رکن پنجاب اسمبلی محترمہ سیدہ زہرا نقوی نے اپنے ایک پیغام میں کہا کہ امامیہ طلباء و طالبات کے کاروان الہی نے پچاس سالہ حماسی ، روحانی اور تربیتی سفر میں جو کارہائے نمایاں انجام دیے ہیں اور ملک و ملت کی ہر مذہبی و قومی ایشو پر جو خدمت کی ہے اسے کوئی بھی نظر انداز نہیں کر سکتا ، شہداء کے لہو سے سینچے گئے اس پاکیزہ شجر نے ہر دور میں افراد کی روحانی و اخلاقی تربیت کی انہیں جدوجہد اور مزاحمت کا راستہ دکھایا۔

 انہوں نے کہا آئی ایس او ایک ایسا پلیٹ فارم ہے کہ جب کبھی ملت پر کوئی مشکل وقت آیا ھے تو اس تنظیم کے جوان ملت کی امید بن کر میدان میں اترتے ہیں اپنے پچاس سالہ دور میں شاندار کامیابیاں سمیٹنے والی اس تنظیم نے بے شمار مشکلات اور نا مساعد حالات کا سامنا کیا ، کئیں طوفان اور تلاطم آئے اور چلے گئے لیکن  امامیہ طلباء و طالبات کے حوصلے پست نہ ہوئے اور انہوں نے ہر قسم کے حالات اور مشکلات کا ڈٹ کر سامنا کیا۔

 انہوں نے کہا کہ اس تنظیم کے تربیت یافتہ جوان عالمی حالات و واقعات ، سیاست اور دشمن کی سازشوں کو سب سے بہتر انداز میں سمجھتے ہیں یہی وجہ ہے کہ ہر زمانے میں اس پلیٹ فارم سے امت مسلمہ کے مسائل چاہے وہ فلسطین و کشمیر ہو یا یمن و بحرین میں مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم کی داستان آئی ایس او نے سب سے آگے بڑھتے ہوئے استعماری طاقتوں کے مظالم اور تجاوز کے خلاف آواز بلند کی اور فکر امام خمینی کا عکس ثابت ہوئے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن شہیدوں کی یادگار ہے اور قوم کی امید ہے کہ یہ نوجوان طلباء و طالبات تقوی ، تربیت نفس ، عمدہ اخلاق اور علم و عمل کیساتھ اس کاروان کو آگے لے کر چلیں گے قوم میں وحدت اور یکجہتی قائم کرنے کے لیے ہمیشہ کی طرح ایک مثبت کردار ادا کریں گے دعا ہے اور یقین ہے کہ امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان اپنے دستور پر عمل پیرا ہوتے ہوئے، جہد مسلسل اور عزم و ہمت کے اس سفر میں کاروان امام مھدی عج سے منسلک ہوگئی۔ ان شاء اللہ

وحدت نیوز(قم)سرزمین قم المقدس میں ایم ڈبلیو ایم شعبہ خواتین لاہور کی جانب سے زائرین کے لیے تربیتی ورکشاپ کا انعقاد ،سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین شعبہ خواتین لاہور محترمہ حنا تقوی کی سربراہی میں زائرین خواتین کا قافلہ شہر قم المقدس پہنچا جہاں محترمہ حنا تقوی کی جانب سے ان کے لیے ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا جس میں محترمہ لبنی زیدی نے خصوصی شرکت کی ورکشاپ سے جناب مولانا سید حسین زیدی صاحب نے ھدف زیارت اور زائر کے عنوان پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ زائرین کو ان مقامات مقدسہ میں اپنے وقت کے امام کو یاد رکھنا اور ان سے قربت حاصل کرنے کی کوشش کرنی چایئے ہمارا یہاں آنے کا مقصد معرفت محمد و آل محمد اور ظہور امام زمان کے لیے آمادگی ہونا چاہئے۔

 ان کا مزید کہنا تھا ‎ہر چیز کا ایک ہدف ہوتا ہے جب کوئی انسان سونے سے پہلے اپنے تمام کام سوچتا ہے کے صُبح میں نے اپنے کون سے کام سر انجام دینے ہیں یعنی کے اس نے اپنا ایک ہدف بنا لیا کے یہ میں نے کرنا تو وہ اس کام کو سر انجام دیتا ہے۔ اسی طرح ہمیں زیارات پہ جانے سے پہلے اپنے آپ سے وعدہ کر کے نکلنا چاہیے کے ہم زیارات پہ جا رہے ہیں اور ہمارا ھدف معرفت امام زمان عج ہوگا اور ہماری دعاوں کو مرکز و محور ظہور امام زمان عج ہوگا۔

وحدت نیوز(اسلام آباد)شیریں مزاری کی گرفتاری پر چیئرمین مجلس وحدت مسلمین پاکستان علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی شدید مذمت، میڈیا کو جاری اپنے بیان میں انہوں نے کہاکہ انتقامی سیاست نون لیگ کا وطیرہ ہے۔ماڈل ٹاؤن جیسے بھیانک واقعات نون لیگ کی شناخت بن چکے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ ملک پہلے ہی بدترین بحرانوں کا شکار ہے۔سیاسی مخالفین کے ساتھ انتقامی کارروائیاں ریاست کے لیے نقصان دہ ثابت ہوں گے،امریکہ کی خوشنودی کے لیے شیریں مزاری کو گرفتار کیا گیا ہے،امریکہ کے جو یار ہیں وہ ملک کے غدار ہیں۔ڈاکٹر شیریں مزاری پر بےبنیاد مقدمات کے اندراج پر اعلی عدلیہ سے نوٹس لینے کا مطالبہ کرتا ہوں۔

وحدت نیوز(ملتان)الحمداللہ! ملتان میں جلوس یوم علیؑ پر ہوئی ایف- آئی-آر میں نامزدمجلس وحدت مسلمین جنوبی پنجاب کے صوبائی سیکرٹری سیاسیات مہرسخاوت علی سیال سمیت 4 عزادارباعزت بری ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق مرکزی جلوس یوم علیؑ پر ریاستی مدعت میں درج ایف آئی آر کے کیس کی سماعت کے دوران معزز عدالت نے 4 عزاداروں کو باعزت بری کردیا۔

ایم ڈبلیوایم جنوبی پنجاب کے پولیٹیکل سیکریٹری مہر سخاوت سیال، محمد اکرم ، مرید حسین اور الطاف حسین جنہیں جلوس یوم علیؑ نکالنے کے جرم میں مقدمہ میں نامزد کیا گیا تھا آج عدالت کے روبرو پیش ہوئے ۔

مقدمہ میں نامزد عزاداروں کی جانب سے وحدت لیگل ایڈ کمیٹی کے ڈپٹی سیکریٹری عون رضا انجم گوپانگ ایڈوکیٹ معزز عدالت میں پیش ہوئے اور دلائل کے ساتھ عزاداروں کا مقدمہ لڑا ۔

جسٹس نجیب اللہ خان مجسٹریٹ تھانہ شاہ شمس ملتان نے  عون رضا انجم گوپانگ ایڈوکیٹ کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ سناتے ہوئے چاروں عزاداروں کو مقدمے سے باعزت بری کرنے کا فیصلہ سنادیا۔

باعزت بری ہونے والوں عزاداروں کا مومنین کی جانب سے پرتپاک استقبال کیا گیاانہیں پھولوں کے ہار پہنائے گئے۔ اس موقع پر بری ہونے والے عزاداروں نے کہا کہ عزاداری ہماری شہہ رگ حیات ہے جس سے ہم دستبردار کسی صورت نہیں ہوسکتے۔

اس موقع پر انہوں نے عون رضا انجم گوپانگ ایڈوکیٹ کی خدمات کو بھی خراج تحسین پیش کیا جنہوں نے اس کیس کی کامیابی کی لئے شب وروز جدوجہد کی۔


وحدت نیوز(لاہور) لاہور میں مسجد صاحب الزمان اسلام پورہ کے باہر نماز جمعہ کے بعد مجلس وحدت مسلمین اور امامیہ سٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے زیراہتمام احتجاج مظاہرہ کیا گیا۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مقررین کا کہنا تھا کہ ریاستی اداروں کی طرف سے جبری لاپتہ کئے گئے افراد کی بازیابی کیلئے پوری قوم سراپا احتجاج ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملت جعفریہ پاکستان ملک کی محب وطن قوم ہے، اس کے باوجود ہمارے ساتھ امتیازی سلوک روا رکھا جا رہا ہے، جو افسوسناک ہے۔ انہوں نے کہا کہ جن افراد کو لاپتہ کیا گیا ہے، اگر انہوں نے کوئی جرم کیا ہے تو انہیں عدالت میں پیش کرکے سزائیں دلوائی جائیں، اس طرح ماورائے عدالت اقدامات سے ملت جعفریہ میں اضطراب پایا جا رہا ہے۔

مقررین کا کہنا تھا کہ آئین اور قانون ملک میں موجود ہے، مجرموں کو سزائیں دینے کیلئے عدالتیں موجود ہیں، اس کے باوجود ماورائے عدالت اقدامات اداروں کی کارکردگی پر بہت بڑا سوالیہ نشان ہیں۔ رہنماوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ صرف ایک ماہ کے دوران لاہور سے لاپتہ ہونیوالے چاروں افراد کو بازیاب کروایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ اگر مذکورہ افراد کو رہا نہ کیا گیا تو احتجاج کا دائرہ کار پورے ملک تک بڑھا دیا جائے گا۔ مقررین کا کہنا تھا کہ ملت جعفریہ نے وطن عزیز کیلئے سب سے زیادہ قربانیاں دی ہیں، اس کے باوجود امتیازی سلوک تشویشناک ہے۔

وحدت نیوز(سکردو) سب ڈویژن گمبہ سکردو کے اسسٹنٹ کمشنر سیکریٹریٹ کی افتتاحی تقریب منعقد ہوئی۔ تقریب کے مہمان خصوصی، مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے صوبائی صدر آغا علی رضوی اور وزیر زراعت گلگت بلتستان کاظم میثم نے اپنے دست مبارک سے باقاعدہ افتتاح کیا۔

 اس موقع پر کمشنر بلتستان ڈویژن شجاع عالم، ڈپٹی کمشنر سکردو حافظ کریم داد چغتائی ، معززین علاقہ و دیگر علماء کرام ساتھ تھے۔اس تقریب میں عمائدین علاقہ، مذہبی ،سیاسی، سماجی اور عوام کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ گمبہ سکردو سب ڈویژن گلگت بلتستان کا سب سے خوبصورت سب ڈویژن ہیں، یہاں ملکی سطح پر مشہور و معروف تفریحی سیرگاہیں بھی اسی میں واقع ہے۔

 انہوں نے مزید کہا کہ اس سب ڈویژن کے قیام میں صوبائی حکومت، ڈویژنل اینڈ ڈسٹرکٹ انتظامیہ، سیاسی، مذہبی اور سماجی شخصیات بالخصوص ایم ڈبلیوایم کا اہم کردار ہے۔ اور آج اللّٰہ کے فضل سے باقاعدہ افتتاح بھی کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ سب ڈویژن کے قیام سے یہاں کے لوگوں کو گھر کی دہلیز پر ہر قسم کی سہولیات میسر ہونگی اور ان کے مسائل یہاں حل ہوں گے۔عوام نے سب ڈویژن کے قیام کے دیرینہ مطالبے کی تکمیل پر مجلس وحدت مسلمین کے قائدین کی خصوصی کاوشوں کو خراج تحسین پیش کیا ہے۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) متنازعہ نصاب تعلیم پر مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی نصاب کمیٹی کے مرکزی کنوینرعلامہ مقصود ڈومکی نےصدر مملکت، وزیراعظم، آرمی چیف ،وزرائے تعلیم و اراکین اسمبلی کو کھلا خط لکھ دیا جس متن پیش خدمت ہے۔

بسم اللہ الرحمن الرحیم
 محترم جناب صدر اسلامی جمہوریہ پاکستان
محترم جناب وزیراعظم اسلامی جمہوریہ پاکستان
محترم جناب چیف آف آرمی سٹاف
محترم جناب وفاقی وزیر داخلہ
 محترم جناب وفاقی وزیر تعلیم
جناب صوبائی وزرائے تعلیم
 اراکین صوبائی وقومی اسمبلی و سینیٹ
 جناب ڈائریکٹر و اراکین یکساں نصاب تعلیم کونسل

 السلام علیکم
عنوان آئین پاکستان و قانون کو پامال کرتے ہوئے متنازعہ یکساں نصاب تعلیم کے ذریعے کروڑوں شیعہ طلبہ و طالبات پر جبر کے ذریعے تکفیری تعلیمات مسلط کرنا

جناب عالی جیسا کہ آپ جانتے ہیں کہ وطن عزیز پاکستان شیعہ سنی مسلمانوں نے قربانیاں دے کر مشترکہ جدوجہد کے ذریعے حاصل کیا بانی پاکستان بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح رحمتہ اللہ علیہ اور مادر ملت محترمہ فاطمہ جناح رحمتہ اللہ علیہا شیعہ مسلمان تھے۔ شیعہ سنی مسلمانوں اکابرین و بانیان پاکستان اور عوام نے متحد ہو کر وطن عزیز پاکستان حاصل کیا اور آج بھی الحمدللہ شیعہ سنی مسلمانوں کے درمیان محبت اخوت کا رشتہ قائم ہے۔ مگر افسوس کہ ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت وطن عزیز پاکستان میں کروڑوں شیعہ مسلمانوں کو دیوار سے لگانے کی سازش کی جارہی ہے ہماری مذہبی عبادات پر قدغن لگاتے ہوئے ملک بھر میں گزشتہ چند سالوں میں مذہبی عبادت عزاداری مجلس عزا اور جلوسوں کو جرم قرار دے کر ہزاروں شیعہ مسلمانوں کے خلاف مذہبی عبادت کے جرم میں سینکڑوں ایف آئی آرز درج ہوئی ہیں جبکہ اس ملک میں سب سے زیادہ جس مکتبہ فکر کو دہشت گردی کا نشانہ بنایا گیا وہ اہل تشیع ہی ہیں مگر اس مکتب فکر کی حب الوطنی کو داد دینی چاہیے کہ انہوں نے ہمیشہ اپنے عظیم شہداء کو پاکستانی پرچم کے سائے میں دفن کیا۔

جناب عالی گذشتہ حکومت کی جانب سے ایک قوم ایک نصاب کے نعرے کے تحت یکساں نصاب تعلیم تیار کیا جانے لگا تو اس کے تمام مراحل میں اہل تشیع کو مکمل طور پر نظر انداز کیا گیا نصابی کتابیں تحریر اور نظرثانی کرتے ہوئے پاکستان میں موجود سات کروڑ شیعہ مسلمانوں کے عقائد اور مذہبی تعلیمات کو مکمل طور پر نظر انداز کیا گیا۔ شیعہ علماء اکابرین قومی تنظیموں اور عوام نے مسلسل احتجاج کیا مگر پتہ نہیں کیوں ریاست اور حکومت جبر کے ذریعے کروڑوں شیعہ طلبہ و طالبات پر ان کی دینی تعلیمات کے خلاف نصاب تعلیم مسلط کرنے پر بضد رہی۔ تعجب ہے کہ پاکستان میں بسنے والے ایک فیصد ہندو سکھ اور مسیحی اقلیتوں کے عقائد اور تعلیمات کا خیال رکھا جاتا ہے مگر ملک کی دوسری بڑی اکثریت یعنی 30 فیصد آبادی یعنی سات کروڑ شیعہ مسلمانوں کے اس بنیادی انسانی اور آئینی حق کو پامال کیا جارہا ہے۔

 جناب عالی قائد اعظم محمد علی جناح رحمتہ اللہ علیہ اور وطن عزیز پاکستان کے یہ باوفا بیٹے آج 74 سال بعد بھی اپنے شہری اور آئینی حقوق کے لئے احتجاج پر مجبور ہیں گزشتہ ایک سال سے صدر وزیراعظم وزیر تعلیم نصاب کونسل غرض ہر سطح پر ہم نے اپنا احتجاجی موقف دلائل کے ساتھ پیش کیا مگر کوئی بھی ہماری آواز سننے کے لیے تیار نہیں ہے۔ مجلس وحدت مسلمین پاکستان نے اسلام آباد میں منعقدہ ملک گیر اجتماع اور قومی شیعہ کانفرنس میں ملک بھر کے علماء کرام اکابرین ملت ذاکرین عظام اور تنظیمی نمائندگان نے بالاتفاق موجودہ متنازعہ نصاب تعلیم کو فرقہ وارانہ اور غیر آئینی قرار دیتے ہوئے مکمل طور پر رد کیا اور متفقہ طور پر 1975 کے نصاب تعلیم کی بحالی کا مطالبہ کیا۔

جناب عالی ہم امید کرتے ہیں کہ آئین پاکستان کی شق نمبر 22 کے مطابق ایسا نصاب تعلیم ترتیب دیا جائے گا جو تمام مسلمانوں کے لئے قابل قبول ہو۔

 لیکن اگر آپ متنازع فرقہ وارانہ نصاب تعلیم اور دینیات پر بضد ہیں تو برائے کرم ملک میں آباد 7 کروڑ شیعہ طلباء و طالبات کے لئے ان کی مذہبی تعلیمات کے مطابق اسلامیات ترتیب دیں جو شیعہ اساتذہ کے ذریعے ہمارے بچوں کو تعلیم دی جائے۔

ہمیں اس بات پر بھی حیرت ہے کہ آخر ریاست اور حکومت کیوں اس ملک میں فرقہ واریت کی آگ دوبارہ جلانا چاہتی ہے کبھی نصاب تعلیم میں تبدیلی اور کبھی صدیوں سے رائج مسنون درود شریف میں تبدیلی کر کے متنازعہ درود سب پر مسلط کرکے نفرتوں کو ہوا دینا چاہتی ہے۔

 امید ہے کہ ہماری ان گذارشات پر ہمدردانہ غور کرتے ہوئے فی الفور نصاب تعلیم اور متنازعہ درود شریف کا مسئلہ حل کرکے کروڑوں شہریوں میں موجود تشویش کو دور کریں گے۔ ہم یہ بھی توقع رکھتے ہیں کہ ہماری مذہبی عبادت عزاداری مجالس عزا اور عزاداری کے خلاف ہر سال سینکڑوں ایف آئی آرز کا ظالمانہ سلسلہ روکنے میں بھی اپنا کردار ادا کریں گے۔
اللہ تعالی وطن عزیز پاکستان کو سلامت رکھے اور پاکستانی عوام کے درمیان اتحاد اخوت اور محبت کی فضا کو مزید فروغ ملے۔
 والسلام
مقصود علی ڈومکی
کنوینیر نصاب کمیٹی
مجلس وحدت مسلمین پاکستان
03003840789

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی سیکرٹریٹ میں ایم ڈبلیو ایم کے نو منتخب چیئرمین علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کے اعزاز میں ایک شاندار تقریب کا انعقاد کیا گی۔جس میں علامہ غلام حر شبیری ،سید ناصر عباس شیرازی،علامہ عبدالخالق اسدی علامہ نیئر عباس مصطفوی ،نثار علی فیضی ،ملک اقرار حسین ،علامہ اقبال بہشتی ، علامہ شیر علی انصاری ، علامہ عیسی امینی،علامہ ڈاکٹر یونس حیدری،علامہ علی اکبر کاظمی،آصف رضا ایڈوکیٹ سمیت راولپنڈی اسلام آباد کے ضلعی عہدیداروں اور کارکنان نے شرکت کی۔

شرکاء نے علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کو مجلس وحدت مسلمین کا چیئرمین منتخب ہونے پر مبارکباد پیش کی اور اسے ملت تشیع کے حقوق کے تحفظ اور قومی وحدت کے لیے اہم قراردیا۔علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے تقریب کے منتظمین اور شرکاء کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ جماعت کی طرف سے ان پر جس اعتماد کا اظہار کیا گیا ہے اس کو کبھی ٹھیس نہیں لگنے دی جائے گی۔انہوں نےکہاکہ مجلس وحدت مسلمین کے قیام کا مقصد قوم کے حقوق کا تحفظ، تکفیریت کا خاتمہ، وطن عزیز کی نظریاتی سرحدوں کے دفاع اور وحدت بین المسلمین کے لیے میدان عمل میں اپنی موجودگی برقرار رکھنا ہے جس پر ہر حال میں قائم رہیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ملک سنگین ترین دور سے گزر رہا ہے۔ہمارے نوجوانوں کو سوشل میڈیا کے استعمال اور سماجی سرگرمیوں میں انتہائی ذمہ دارانہ انداز میں آگے بڑھنا ہو گا۔ ملک و قوم کے مفاد کو مدنظر رکھتے ہوئے ایسی پوسٹوں سے دور رہا جائے جو مذہبی منافرت یاقومی انتشار کا باعث ہوں۔مجلس وحدت مسلمین محض ایک شیعہ نمائندہ جماعت نہیں بلکہ ملک کی ایک ایسی ذمہ دار سیاسی و مذہبی جماعت ہے جس نے اپنی دانش و حکمت سے وطن عزیز کے ان دشمنوں کے مذموم مقاصد کو ناکام بنایا ہے جو مذہب و مسلک کے نام پر ملک کے گلی محلے میں نفرت کی آگ سلگانا چاہتے تھے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے اصولوں پر کبھی آنچ نہیں آنے دی۔وطن عزیز کے استحکام کے لیے بڑی سے بڑی قربانی دینے سے بھی دریغ نہیں کریں گے۔حکمرانوں کی اقتدار پرستی نے ملکی معیشت کو تباہی کے دھانے پر لاکھڑا کیا۔اگر معاشی بحران سے نکلنے کے لیے فوری اور مثبت اقدامات نہ کیے گئے تو ملک کو درپیش خطرات سنگین تر ہوتے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ موجودہ ملکی حالات اور مذہبی و سیاسی جماعتوں کی ذمہ داریوں کے حوالے سے ایک ملک گیر کانفرنس کا انعقاد زیر غور ہے ۔

Page 1 of 1221

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree