وحدت نیوز(اسلام آباد) منہاج القرآن انٹرنیشنل کے سربراہ حسن محی الدین قادری اور پاکستان عوامی تحریک کے مرکزی سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈا پور نے اپنے اعلی سطح وفد کے ہمراہ ایم ڈبلیو ایم کے احتجاجی کیمپ میں مجلس وحدت مسلمین کے سربراہ علامہ راجہ ناصرعباس سے ملاقات کی اور انہیں اپنے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔انہوں نے کہا کہ علامہ ناصر عباس کی ملت تشیع کے لیے جدوجہد مثالی ہے۔ان کے مطالبات شیعہ کیمیونٹی کے لیے محض ایک کاغذی دستاویز نہیں بلکہ پاکستان کی سالمیت و بقا کے لیے ایک موثر اور مکمل لائحہ عمل ہے ۔ پاکستان کی ایک بڑی مذہبی و سیاسی جماعت کے رہنما کی گزشتہ بیس روز سے جاری بھوک ہڑتال پر حکومت کی مسلسل بے حسی نون لیگ کے اقتدار کے لیے خطرناک ثابت ہو سکتی ہے۔بعد ازاں دونوں جماعتوں کے رہنماوں نے میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ ہم مظلوموں کی حمایت کا اعلان کرنے اس کیمپ میں آئے ہیں۔اہل تشیع کے ساتھ ظلم و بربریت کا کھیل بند کیا جائے۔نیشنل ایکشن پلان کو حکومت اپنے سیاسی حریفوں سے انتقام لینے کے لیے استعمال کر رہی ہے۔اس قانون کی آڑ میں ملت تشیع پر مقدمات قائم کیے جا رہے ہیں جب کہ جن کے خلاف یہ قانون بنا تھا وہ مذموم عناصر دندناتے پھر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ظالموں کے خاتمے اور انصاف کے حصول کے لیے ہم مجلس وحدت مسلمین کے ساتھ کھڑے ہیں ۔

علامہ ناصر عباس جعفری نے وفد کی آمد پرشکریہ ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمیں تکفیری نظریہ کا پاکستان نہیں چاہیے۔ اس ملک سے انتہا پسندی کی سوچ کے خاتمے تک ہماری جدوجہد جاری رہے گی۔ ہم نے اس مادر وطن کو قائد واقبال کے خوابوں کی تعبیر کی عملی شکل دینی ہے جس میں ہر ایک کو بلاتخصیص مذہب و مسلک انصاف حاصل ہو۔ جہاں رواداری اور مذہبی آزادی ہو ۔انہوں نے کہا کہ نیشنل ایکشن پلان کی سمت تبدیل کر کے ملک بھر میں انارکی پیدا کرنے کی دانستہ کوشش کی جا رہی ہے۔مظلوم اور بے گناہ افراد پر نیپ کے نام مقدمات قائم کیے جا رہے ہیں ۔ریاستی سرپرستی میں ہمارے لوگوں کو اپنی زمینوں سے بے دخل کیا جا رہا ہے۔پارہ چنار میں ایف سی اہلکاروں نے فائرنگ کر کے ہمارے نوجوانوں کو شہید کر دیا۔حکومت اپنی آئینی ذمہ داریاں ادا کرنے کی بجائے دہشت گردی پر اتر آئی ہے۔ہمارے لیے یہ متعصبانہ طرز عمل نا قابل قبول ہے۔جب تک ہمارے مطالبات پر عمل درآمد نہیں ہو تا تب تک ہمارا یہ احتجاجی کیمپ قائم رہے گا۔انہوں نے کہا پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان اس کیمپ میں ہمارے ساتھ اظہار یکجہتی کرنے آئے۔انہوں نے جو وعدے کیے ان پر عمل درآمد میں خیبر پختوانخواہ حکومت پس و پیش کا مظاہرہ کر رہی ہے جو نامناسب اور غیر اخلاقی ہے۔ عمران خان کو اس کا فوری نوٹس لینا چاہیے۔

وحدت نیوز(پشاور) مجلس وحدت مسلمین صوبہ خیبر پختونخواہ کی صوبائی شوریٰ کا اجلاس 29 مئی بروز اتوار مرکزی سیکرٹریٹ اسلام آباد میں منعقد ہوا،اجلاس میں صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ سید سبطین حسینی اراکین صوبائی کابینہ اور اراکین صوبائی شوریٰ نے شرکت کی،مرکزی سیکرٹری تنظیم سازی اور مرکزی سیکرٹری جنرل کی تشکیل کردہ تین رکنی انتخابی کمیٹی جو رکن شوریٰ عالی سید علی اکبر موسوی مرکزی سیکرٹری تعلیم نثار علی فیضی اور مرکزی سیکرٹری روابط ملک اقرار حسین پہ مشتمل تھی نے اس صوبائی شوریٰ کے اجلاس کی صدارت کی،علامہ سبطین حسینی صاحب نے مختصرا صوبہ کی کارکردگی بیان کی اور اپنی دستوری مدت پوری ہونے پہ اپنی کابینہ سمیت مستعفی ہونے کا اعلان کیا،جماعت کے وسیع تر مفاد اور حالیہ درپیش چیلنجز کے تناظر میں انتخابی کمیٹی نے فیصلہ کیا کہ   نئےصوبائی سیکرٹری جنرل کے انتخاب کو فی الوقت موخر کیا جائے۔لہذا صوبائی آرگنائزنگ کمیٹی تشکیل دی گئی جو آئندہ تین ماہ میں اضلاع کی تنظیم سازی کرے گی  جس کے بعد مرکز کی ہدایات اور ہم آہنگی سے صوبائی شوریٰ کا اجلاس بلا کر نئے سیکرٹری جنرل کا انتخاب کیا جائے گا،آرگنائزنگ کمیٹی کے مسؤل رکن شوریٰ عالی علامہ اقبال بہشتی ہونگےجبکہ علامہ وحید کاظمی اور مولانا ارشاد علی معاونین کے طور پہ خدمات سر انجام دیں گے. دومزید اراکین آرگنائزنگ کمیٹی کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔

وحدت نیوز(مظفرآباد) سربراہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی کال پر ریاست گیر یوم شہداء منایا گیا ، میرپور ، کوٹلی ، باغ ، ہٹیاں اور نیلم کے علاوہ مرکزی تقریب وحدت سیکرٹریٹ مظفرآباد میں منعقد ہوئی ، مقررین کے خطاب کے علاوہ مرکزی نوحہ سنگت مظفرآباد نے نوحہ خوانی کی ، تقریب میں شہداء کے خانوادوں نے خصوصی طور پر شرکت کی ، خطاب کرتے ہوئے ریاستی سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین پاکستان آزاد کشمیر علامہ سید تصور حسین نقوی الجوادی نے کہا کہ شہداء کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں کہ جنہوں نے اپنا آج ہمارے کل کے لیے قربان کیا ، یوم شہداء تجدید عہد کے لیے منایا گیا کہ ہم شہداء کے مشن کو جاری و ساری رکھیں گے ، شہداء کے مقدس لہو کی یاد تازہ رکھیں گے ، ہم شہداء کے خانوادوں سے اظہار ہمدردی کرتے ہیں ،شہداء کے مشن کی جدوجہد کے لیے بھوک ہڑتال پر بیٹھے علامہ راجہ ناصر عباس جعفری سے بھی اظہار یکجہتی کرتے ہیں ، علامہ راجہ ناصر عباس کی بھوک ہڑتال مظلوموں و محروموں کے حقوق کے لیے ہے ، وہ مرد قلندر جو بھوک ہڑتا ل کے ذریعے مردہ ضمیروں کو جھنجوڑ رہا ہے ، خود صعوبتیں برداشت کر کے ملک و قوم کے حقوق کی بازیابی کی جدوجہد کر رہا ہے ، پاکستان میں شیعہ نسل کشی کی لہر عروج پر ہے، حال ہی میں انسانی حقوق کے علمبردار ، ممتاز صحافی خرم ذکی کو شہید کیا گیا ، ڈی آئی خان میں دو وکلاء اور دو پروفیسرز کو ٹارگٹ کیا گیا ، پارچنار میں پرامن مظاہرین پر گولیاں برسائیں گئیں ، علامہ راجہ ناصر عباس دو ہفتوں سے زائد بھوک ہڑتال پر بیٹھے ہیں ، جو ہنوز جاری ہے ، ملک کی تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں نے یکجہتی کا اظہار کیا ، ملت تشیع کے ساتھ ناانصافیوں کا یہ سلسلہ آخر کب تک جاری رہے گا ، ان کی املاک پر قبضہ ، ان کی جان محفوظ نہیں ، عزاداری کو محدود کرنے کی سازشیں ، علماء کی نقل و حرکت پر پابندی اور کارکنان کی گرفتاریاں ایک لامتناعی سلسلہ شروع ہو چکا تھا، ان سوئے ہوئے ضمیروں کو بیدار کرنے کی خاطر سربراہ مجلس وحدت مسلمین نے بھوک ہڑتال پر بیٹھنے کا فیصلہ کیا ، ملک کے گوشے گوشے سے لوگ علامہ راجہ ناصر عباس کے حکم کے انتظار میں ہیں ، اسلام آباد کی جانب مارچ آخری آپشن ہو گا ، کسی صورت بھی شہداء کا خون رائیگان نہیں جانے دیا جائے گا ، ہم شہداء کے وارث ہیں ، ملت کے حقوق کی خاطر میدان میں رہیں گے ، وقت کے یزید اپنے تمام تر حربے استعمال کر لے ، ہم حسینی ہیں ، عصر کی کربلا میں کردار ادا کرتے رہیں گے ، ملک پاکستان کو مسلکی پاکستان نہیں بلکہ قائد اعظم و علامہ اقبال کا پاکستان بنانے کی جدوجہد کر رہے ہیں ، ہم پر امن و جمہوری لوگ ہیں ، ہماری خاموشی کو ہماری کمزوری نہ سمجھا جائے ، مطالبات پر جلد از جلد عملد درآمد ہی ملک و قوم کے مفاد میں ہے، ہم کسی قسم کی انارکی یا بدامنی نہیں چاہتے ، آرمی چیف کردار ادا کریں ۔یوم شہداء کی اس تقریب سے سید عمران حیدر سبزواری ، سید سرمد علی نقوی و دیگر نے بھی خطاب کیا۔

وحدت نیوز (کراچی) محب وطن جماعتوں کو تصادم کی راہ پر اکسانے کے لیے مشتعل کرنا نواز لیگ کا پرانا ہتھیار ہے۔ عوامی مسائل سے حکومت کی دانستہ لاتعلقی جمہوری اقدار کے منافی ہے۔جمہوریت کا ہر وقت راگ الاپنے والے حکمرانوں کو وفاقی دارالحکومت میں پارلیمنٹ ہاوس سے ایک کلومیٹر مسافت پر گزشتہ سولہ روز سے ایک ملک گیر سیاسی و مذہبی جماعت کا لگا ہوا بھوک ہڑتالی کیمپ کیوں دکھائی نہیں دے رہا۔ ملک بھر سے سینکڑوں قافلے اسلام آباد کی طرف مارچ کرنے کے لیے بے چین بیٹھے ہیں۔ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویثرن کی جانب سے نمائش سے کراچی پریس کلب احتجاجی ریلی نکالی گئی ۔ کراچی پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرے سے علامہ باقر عباس زیدی،علامہ نشان حیدر،علامہ احسان دانش،علامہ مبشر حسن ،علامہ علی انور،مولانا صادق جعفری ،علی حسین نقوی سمیت دیگر رہنماؤں نے شرکت کی احتجاجی مظاہرے میں خواتین ،بچوں سمیت ایم ڈبلیو ایم کارکنا ن کی بڑی تعداد شامل تھی مظاہرین نے ملک میں جاری شیعہ نسل کشی،دہشتگردی، لاقانونیت اور حکمرانوں کی کرپشن کے خلاف بینرز اور پوسٹر اٹھا رکھے تھے اور شیعہ و سنی اتحاد سمیت شیعہ قتل عام پر کالعدم دہشتگرد جماعتوں کے خلاف آپریشن اور حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی کی احتجاجی مظاہرے سے خطاب میں مقررین کا کہنا تھا کہاایم ڈبلیو ایم مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی دہشتگردی،لاقانونیت،اور کرپشن کے خلاف احتجاجی بھوک ہڑتال سترہویں روزبھی جاری ہے حکومت کی طرف سے ملت تشیع کے ساتھ یہ غیر منصفانہ طرز عمل حکومت کے متعصبانہ رویہ کی دلالت کرتا ہے۔وفاقی حکومت کی جانب سے ڈی آئی خان ،پاراچنار،پشاور،کوئٹہ اور کراچی شیعہ نسل کشی کی مذمت نہیں کی گئی اور نہ ہی اب تک کسی دہشتگرد کی گرفتاری عمل میں لائی گئی نواز لیگ میں شامل رانا ثناا للہ سمیت چند وزراء وفاق میں بیٹھ کر دہشتگرد تکفیری قوتوں کو سپورٹ کرکے ملکی جڑوں کو کھوکھلا کر رہیں ہیں دوسری جانب عدلیہ کی جانب سے بے گناہ افراد کی ٹارگٹ کلنگ پر سرد مہری دیکھائی جاری ہے جو غیر منصفانہ ہے ،شیعہ قتل عام پر حکومتی مجرمانہ خاموشی کی بھر پور مذمت کرتے ہیں وفاقی حکومت ہمیں مسلسل نظر انداز کر کے کن قوتوں کو خوش کر رہی ہے۔

علامہ باقر عباس زیدی نے کہاکہ ظلم ،ناانصافی ،ریاستی جبر اور حکومتی اداروں کا اختیارات سے تجاوز قومی بدحالی کا بنیادی سبب ہے مجلس وحدت کے قائدین نے انصاف کے حصول اور قومی سلامتی کے لیے جو مطالبات پیش کر رکھے ہیں ان پر جب تک عمل درآمد نہیں ہوتا تب تک ہمارا احتجاج جاری رہے گاہماری نظریں مرکزی قائدین کی جانب ہیں ملک بھر سے سینکڑوں قافلے اسلام آباد کی طرف مارچ کرنے کے لیے بے چین بیٹھے ہیں اگر ان ریلیوں کا رُخ اسلام آباد کی طرف ہو گیا تو پھر واپسی آسانی سے نہیں ہو گی مقررین وفاقی حکومت ،چیف جسٹس آف پاکستان اورآرمی چیف جنرل راحیل شریف سے مطالبہ کیا کہ وہ ملک بھر میں جاری شیعہ نسل کشی اور ستررہ روز سے مرکزی قائدین کی جانب سے دہشتگردی ،لاقانونیت اور کرپشن کے خلاف ہمارے جائز عوامی مطالبات کی عملی منظوری دی جائے مقررین نے آرمی چیف جنرل راحیل شریف سے مطالبہ کیا ہے کہ پاکستانی قوم کو قائد و اقبال کا وہ پاکستان واپس کیا جائے جس کا انہوں نے خواب دیکھا اور جس کے لیے لاکھوں جانوں کی قربانی دی گئی۔حکمرانوں کی تبا ہ کن پالیسیوں نے اس ملک کو طالبان اور انتہاپسندوں کا ملک بنا کر رکھ دیا ہے۔آرمی چیف اس ملک سے ان ملک دشمن عناصر کا مکمل صفایا کریں۔نیشنل ایکشن پلان پر عمل نہ ہونے کی وجہ سے شیعہ کمیونٹی کے پڑھے لکھے طبقے اور مختلف شعبوں کے ماہرین کو ٹارگٹ کنلگ کا نشانہ بنایا جا رہا ہے ملک بھر میں دوبارہ ابھرنے والی کالعدم دہشتگرد جماعتوں اور ان کے سہولت کاروں کے خلاف بھر پور آپریشن کیا جائے انہوں نے کہا ملک کے تمام سول و عسکری اداروں سے ان کالی بھیڑوں کا صفایا کیا
جائے جواداروں کی بدنامی کا باعث بنی ہوئی ہیں۔

وحدت نیوز(کرچی) مجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن کے رہنما علامہ سید علی انور جعفری نے وحدت ہائوس سے جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ شیعہ نسل کشی اور بڑھتی ہوئی لاقانونیت و دہشتگردی کے خلاف علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی احتجاجی بھوک ہڑتال سے اظہار یکجہتی اور شیعہ نسل کشی پر حکومت و ریاستی اداروں کی مجرمانہ خاموشی وقاتلوں کی عدم گرفتاری اور پاکستان کی فرقہ وارانہ تقسیم کے خلاف آج بروز اتوار چار بجے کراچی پریس کلب پر بھرپور عوامی احتجاجی مظاہرہ کیا جائے گا۔

وحدت نیوز (بیروت) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سیکرٹری امور خارجہ ڈاکٹر علامہ سید شفقت حسن شیرازی نے بیروت میں حزب اللہ کے عالمی عربی چینل المنار کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ پاکستانی حکمرانوں اور اداروں کے ضمیر کو جھنجھوڑنے کے لئے قائد وحدت نے بھوک ہڑتال کا اعلان کیا ہے اور ہمارے مطالبات وہ ہیں جو ہر پاکستانی کے مطالبات ہیں، کیونکہ ہم کسی طبقہ یا گروہ کے لئے آواز نہیں اٹھا رہے بلکہ ہم ان تمام مظلوم اور پسے ہوئے لوگوں کے لئے اٹھے ہیں، جن کو بنیادی حقوق سے محروم رکھا جا رہا ہے، جن کا قتل عام کیا جار ہا ہے۔ لبنان کے دارالحکومت بیروت میں ہونے والے اس انٹرویو میں سربراہ امور خارجہ نے بھوک ہڑتال سے پیدا ہونے والی عالمی بیداری کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ آج دنیا کے مختلف ممالک میں قائد وحدت سے اظہار یکجہتی کے لئے پاکستانی کمیونییٹیز نکل کھڑی ہوئی ہیں اور بالآخر ان ظالم حکمرانوں کو ہمارے مطالبات ماننے پڑیں گے۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree