وحدت نیوز (لاہور) مجلس وحدت مسلمین پاکستان پنجاب آفس کے زیرِ اہتمام عالمی ہفتہ وحدت کے سلسلہ میں وحدت ہاوس لاہور میں جشنِ عید میلاد النبیؐ کا انعقاد کیا گیاجس میں مقامی سطح پر آفس سٹاف اور اہل علاقہ نے شرکت کی میلاد النبیؐ کے جشن سے سنی اتحاد کونسل کے رہنماء مولانا مفتی شرافت علی قادری ،ڈپٹی سیکرٹری جنرل پنجاب علامہ محمد اقبال کامرانی ، مولانا مظہر حسین اور ذاکرِ اہل بیت شیخ علی رضا نے خطاب کیا۔علامہ اقبال کامرانی نے خطاب کرتے ہوئے مفتی اعظم سعودی عرب عبدالعزیز الشیخ والے فتوی کہ رسول ؐ اعظم کا یوم ولادت اور میلاد منانا حرام ہے پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب یہود و نصاریٰ کے راستے پر چل رہا ہے اور عاشقانِ رسولؐ خداکی توہین کر رہا ہے ۔اس وقت سنی شیعہ اتحاد کے ذریعہ ہی سامراج دشمنوں کا قلع قمع کیا جا سکتاہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ آج پاکستان میں فرقہ واریت کو فروغ دیا جا رہا ہے ۔مسلمانوں کو آپس میں لڑانے کی سکیمیں تیار کی جا رہی ہیں ۔پاکستان کو توڑنے کی باتیں ہو رہی ہیں ۔ جبکہ ان حالات میں رسوؐل خدا کی ذات ہمارے لئے بہترین نمونہ اخلاق ہے آپ ؐ کی سیرت بھی عزت و آبرو کا راستہ اور حلم و درگزر کا راستہ ہے ہمارے درمیان رسول ؐ خدا کی ذات اقدس نقطہِ وحدت ہے جو کہ جامع اور اکمل ہے ۔

سنی اتحاد کونسل کے رہنما مفتی شرافت علی قادری نے کہا کہ پاکستان میں درود پڑہنے والے اور میلاد منانے والے ایک ہی صف میں کھڑے ہو چکے ہیں اور اس کا مظاہرہ حالیہ سالوں میں محرم الحرام اور جشن عید میلاد النبی کو بڑے جوش و خروش سے منانا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دشمن شیعہ اور سنی کو متحد نہیں دیکھنا چاہتے اور اپنے ایجنٹوں اور گماشتوں کے ذریعہ سے مختلف حربے اختیار کر کے شیعہ سنی کو لڑانا چاہتے ہیں ۔انہوں نے پاکستان میں صاحبزادہ حامد رضا اور قائدوحدت علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کے باہمی اشتراک عمل کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں بہت جلد وہ دن آنے والا ہے جب شیعہ اورسنی اپنے اپنے عقیدہ پر رہتے ہوئے باہم شیرو شکر اور یک جان وقلب ہوں گے ۔

وحدت نیوز (مظفرآباد) ریاستی سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین پاکستان آزاد جموں و کشمیر علامہ سید تصور حسین نقوی الجوادی نے کہا ہے کہ شہدائے پشاور کو کبھی نہیں بھولیں گے، وقت کے حرملا نے ننھی کلیوں کو بھی نہ بخشا، دہشت گرد نہیں ناسور ہیں ، انہیں جڑ سے اکھاڑ کر پھینکا جائے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے سانحہ پشاور کے سلسلہ میں منعقدہ ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، انہوں نے کہا کہ 16دسمبر تاریخ کا وہ سیاہ ترین دن جو ناقابل فراموش ہے ، کربلا بپا کی گئی تھی سال گزشتہ پشاور میں، وقت کے یزید ، ابن زیاد، شمر ، حصین اور حرملا نے ننھی کلیوں پر ظلم و ستم کی ایک المناک داستان رقم کی، ہم سلام پیش کرتے ہیں ان شہدا کو ، ہم سلام پیش کرتے ہیں ان کے والدین کو ، ان کی راہ حق میں قربانی کبھی رائیگان نہیں جائیگی ، وقت کا یزید جتنا ظلم کر سکتا ہے کر لے ، مگر وقت کے حسینی ٹکر لینا جانتے ہیں ، کل جیسے حرملا نے 61ہجری کو کربلا میں چھ ماہ کے علی اصغر پر ایسا تیر مارا تھا جو جانوروں کو مارا تھا، لیکن علی اصغر قتل ہو کر بھی زندہ باد ہو گیا ، ملعون حرملا زندہ رہ کر بھی مردہ باد ہو گیا،علامہ تصور جوادی نے کہا کہ اسی طرح پشاور میں آنے والے طالبان ، ظالمان خود بھی حرام موت مرے ہیں ، لیکن جس طرح سے انہوں نے نہتے بچوں پر گولیاں برسائیں وہ زخم ابھی بھی تازہ ہیں ، بچے تو شہید ہو کر ہمیشہ ہمیشہ کے لیے زندہ ہو گئے ، مگر ظالم تختہ دار پر چڑھنے کے ساتھ ساتھ جہنم میں تو جائیں گے ہی ، لعنت کا ایک ایک طوق بھی اپنے گلوں میں بندھوا گئے جو رہتی دنیا تک ان کے ساتھ رہے گا۔ علامہ تصور جوادی نے مذید کہا کہ ہم شہداء کے والدین کے ساتھ مکمل اظہار یکجہتی کرتے ہیں اور شہداء کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں ۔

وحدت نیوز(گلگت) پاراچنار بم دھماکہ دشمن کی پست ذہنیت کی عکاسی کرتا ہے،قوم شہادت کے شیریں موت کی عاشق ہے ،دشمن کے ناپاک عزائم کبھی شرمندہ تعبیر نہیں ہونگے۔مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان شعبہ خواتین کی کوارڈینیٹر خواہر سائرہ ابراہیم نے پاراچنا بم دھماکے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دشمن بم دھماکوں اور خودکش حملوں کے ذریعے عوام کو خوف و ہراس میں مبتلا کرکے اپنے مذموم مقاصد کی تکمیل چاہتا ہے جس میں ہرگز انہیں کامیابی نصیب نہ ہوگی۔ دشمن کے ناپاک عزائم کو خاک میں ملانے کیلئے پوری قوم افواج پاکستان کے شانہ بشانہ کھڑی ہے ،ریاست اپنی ذمہ داریوں کو احسن انداز میں نبھائے تو دہشت گردی کی لعنت سے قوم کو نجات مل سکتی ہے۔قوم کو موجودہ اور ماضی کے حکمرانوں کی غلط پالیسیوں کی سزا مل رہی ہے ریاست اپنا قبلہ درست کرلے اور انصاف کے تقاضے پورے کرے تو کوئی بعید نہیں کہ یہ قوم پوری دنیا میں اپنا نام روشن کرسکتی ہے لیکن بد قسمتی سے اس قوم کو ایسے حکمرانوں سے پالا پڑا ہے جنہیں اقتدار کی ہوس نے اندھا کردیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ دہشت گردی ایک مائنڈ سیٹ ہے جو ہمارے معاشرے میں سرایت کرچکا ہے جس سے نجات حاصل کرنے کیلئے بڑے پیمانے پر آپریشن کی ضرورت ہے ۔دہشت گردوں کی مالی و اخلاقی سپورٹ کرنے والوں کے ساتھ آہنی ہاتھوں سے نمٹنا لازم ہے بصورت دیگر یہ آگ پورے معاشرے کو اپنی لپیٹ میں لے سکتی ہے۔

وحدت نیوز (لاہور) مدارس جعفریہ پاکستان کے صدر علامہ سید حسین نجفی نے لاہور میں طلباء کے وفد سے گفتگو میں کہا کہ سانحہ آرمی پبلک سکول نے دہشتگردوں کے مذموم عزائم اور مذہب کے لبادے میں چھپے دہشتگردوں کو بے نقاب کیا، 16 دسمبر پاکستان کی تاریخ کا سیاہ ترین دن ہے۔ انہوں نے کہا کہ سانحہ پشاور نے دہشتگرد گروہوں کے نفاذِ شریعت کے ڈھونگ کی قلعی کھول دی، دہشتگردوں کا مذہب سے کوئی تعلق نہیں، مذہب کے مقدس نام پر انسانوں کا قتلِ عام کرنیوالے مسلمان تو کیا انسان کہلانے کے لائق نہیں ہیں۔ علامہ سید حسین نجفی نے کہا کہ سانحہ پشاور کے بعد حکومتی سطح پر مشاورت کے ساتھ ہونیوالے فیصلوں اور نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد ابھی بھی سست ہے، اسی وجہ سے داعش جیسی تنظیموں کے ہمدرد دندناتے پھر رہے ہیں، ہمارا مطالبہ ہے کہ آپریشن ضربِ عضب کو دہشتگردی کیخلاف آپریشن کلین اپ قرار دے کر اس کا دائرہ کار ملک بھر میں پھیلا دیا جائے۔ پشاور کے شہداء کو خراجِ عقیدت پیش کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ شہید بچوں کا خون رائیگاں نہیں گیا، ان کی بہادر اساتذہ کرام جنہوں نے بچوں کیساتھ شہادت دی انہوں نے بہادری کی ایک تاریخ رقم کی، دہشتگردوں کو اتنی سخت سزا دینی چاہیے کہ دوبارہ کوئی ایسی مذموم حرکت کرنے کی کوشش بھی نہ کرے۔

وحدت نیوز (کراچی) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی اپیل پر کراچی میں شہدائے آرمی پبلک اسکول سے اظہار یکجہتی و بلندی درجات کیلئے یوم شہداء منایا گیا۔ اس حوالے سے ایم ڈبلیو ایم کے مختلف ڈسٹرکٹس میں قرآن خوانی اور شہدائے خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے شمع روشن کی گئی اور تعزیتی جلسہ منعقد کئے گئے۔ ایم ڈبلیو ایم کراچی کی جانب سے مرکزی پروگرام  نمائش چورنگی پر منعقد ہوا جس میں شمع روشن کی گئیں۔ چراغاں میں ایم ڈبلیو ایم رہنماء علامہ باقر زیدی، علامہ احمد اقبال رضوی، علامہ مبشر حسن، علی حسین نقوی، سید میثم رضا، ڈاکٹر مدثر حسین، ناصر حسینی، رضوان پنجوانی، روح اللہ حسین سمیت ایم ڈبلیو ایم کارکنان و شہر قائد کی عوام نے بڑی تعداد میں شرکت کی اور شہدائے آرمی پبلک اسکول میں شہید بے گناہ معصوم بچوں کی یاد میں شمع روشن کیں۔

اس موقع پر شرکاء سے خطاب میں علامہ مبشر حسن کا کہنا تھا کہ سانحہ پشاور تاریخ کی بدترین دہشتگردی ہے، یہ ملک خداداد پاکستان کے قلب میں وہ داغ ہے جو کبھی نہیں مٹ سکتا، آج ملک و اسلام دشمن عناصر کی ہار کا دن ہے، پوری قوم دہشتگردی کے خلاف متحد ہے، ننھے پھولوں کی قربانی رائیگاں نہیں جائے گی، آج کے دن ہم ان دلیر ماؤں کو سلام پیش کرتے ہیں جنہوں نے اس ملک کی بقاء و سلامتی خاطر اپنے بچوں کو قربان کر دیا، انشا اللہ وہ دن بہت جلد ضرور آئے گا جس دن اس ملک سے دہشتگردی انتہا پسندی کا مکمل خاتمہ ہوگا۔ چراغاں میں علامہ احسان دانش نے شہدائے کے بلندی درجات کیلئے فاتحہ خوانی اور خصوصی دعا کرائی۔

وحدت نیوز (آرٹیکل) مجھے اس وقت بہت عجیب لگا، جب میں نے ایک بچے کو یہ کہتے ہوئے سنا کہ ہمارے نبیﷺ بچوں سے محبت کرتے تھے، بچوں کو چومتے تھے اور جو لوگ بچوں کو قتل کرتے ہیں، وہ گندے لوگ ہوتے ہیں۔ ہاں ہمارے بچے بالکل ٹھیک سمجھے ہیں کہ جو بچوں کو قتل کرتے ہیں وہ گندے لوگ ہوتے ہیں، اس وقت ہمارا وطنِ عزیز گندے لوگوں میں گھرا ہوا ہے، ہم نے مل کر ہی اپنے ملک کو ان گندے لوگوں سے پاک کرنا ہے۔ ہر سال سولہ دسمبر کو ننھے منّے شہیدوں کا مقدس لہو ہمیں یہ یاد دلاتا رہے گا کہ گندے لوگوں سے ہوشیار رہنا ضروری ہے، اس لئے کہ گندے لوگ، ملک، ملت اور دین و مذہب سب کو گندہ کر دیتے ہیں۔
 
تاریخِ بشریت پر بچوں کے بڑے احسانات ہیں، حضرت مریمؑ کی عصمت و طہارت کی گواہی گہوارے سے ایک بچے نے ہی دی تھی، جنابِ یوسف ؑ کی بے گناہی کا ثبوت ایک بچہ ہی بنا تھا، تیرہ رجب المرجب کو بیت اللہ میں ایک بچے کی ولادت سے دنیائے توحید میں اجالا ہوا تھا اور 61 ھجری میں باطل کو ابدی شکست دینے والا بھی ایک شش ماہہ بچہ تھا۔ گذشتہ روز سانحہ آرمی پبلک سکول پشاور کے شہید بچوں کی پہلی برسی کے موقع پر قم المقدس میں ایم ڈبلیو ایم قم کی طرف سے بچوں کے ساتھ ایک خصوصی نشست رکھی گئی۔ نشست کے دوران جب بچے اپنے جذبات کا اظہار کر رہے تھے تو میں یہ سوچ رہا تھا کہ اس اکیسویں صدی میں بھی انسان اتنا بے بس ہے اور انسانیت اتنی مظلوم ہے کہ انسان نما درندے کسی قانون یا ضابطے کی پابندی کرتے ہوئے نظر نہیں آتے۔

یمن، بحرین اور کشمیر و فلسطین میں بے کس خواتین، کم سن بچوں اور ضعیف العمر افراد کو کھلے عام درندگی کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، شام اور سعودی عرب میں بنیادی انسانی حقوق کو پامال کیا جا رہا ہے، پاکستان و افغانستان میں پرامن لوگوں کو دھماکوں سے اڑایا جا رہا ہے، مقامی سیاست سے لے کر بین الاقوامی سیاست تک کمزوروں کا خون چوسا جا رہا ہے، لیکن بین الاقوامی طور پر کوئی ردعمل دیکھنے میں نہیں آرہا۔ سب جانتے ہیں کہ امریکہ، اسرائیل اور سعودی عرب ہی پوری دنیا میں کشت و کشتار کے سارے نیٹ ورکس کو بھی چلا رہے ہیں اور پھر دہشت گردی کے خلاف جنگ کے علمبردار بھی بنے ہوئے ہیں۔ جو امریکہ، اسرائیل اور سعودی عرب کی دوغلی پالیسی  ہے، وہی ان کے تربیت یافتہ دہشت گردوں نے بھی اپنا رکھی ہے، ان کے تربیت یافتہ دہشت گرد ایک طرف تو نہتے انسانوں اور بچوں کا قتلِ عام کرتے ہیں اور دوسری طرف اپنے آپ کو مسلمان اور مجاہد اسلام بھی کہتے ہیں۔

مجھے اس وقت بہت عجیب لگا، جب میں نے ایک بچے کو یہ کہتے ہوئے سنا کہ ہمارے نبیﷺ بچوں سے محبت کرتے تھے، بچوں کو چومتے تھے اور جو لوگ بچوں کو قتل کرتے ہیں، وہ گندے لوگ ہوتے ہیں۔ ہاں ہمارے بچے بالکل ٹھیک سمجھے ہیں کہ جو بچوں کو قتل کرتے ہیں وہ گندے لوگ ہوتے ہیں، اس وقت ہمارا وطنِ عزیز گندے لوگوں میں گھرا ہوا ہے، ہم نے مل کر ہی اپنے ملک کو ان گندے لوگوں سے پاک کرنا ہے۔ ہر سال سولہ دسمبر  کو ننھے منّے شہیدوں کا مقدس لہو ہمیں یہ یاد دلاتا رہے گا کہ گندے لوگوں سے ہوشیار رہنا ضروری ہے، اس لئے کہ گندے لوگ، ملک، ملت اور دین و مذہب سب کو گندہ کر دیتے ہیں۔
 


تحریر: نذر حافی
This email address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.

Page 4 of 26

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree