وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل اور خارجہ امور کے سیکریٹری علامہ سید شفقت حسین شیرازی نے کہا ہے کہ مسلح تكفيری اور تنگ نظر گروہوں سے سرزمين وطن كو پاک کرنے كا عہد ہماری مسلح افواج کے بہادر كمانڈرز اور جوان نبها رہے ہیں۔ اسی طرح اب ہماری غيرت مند اور بہادر پاكستانی قوم كی ذمہ داری بنتی ہے کہ وه بهی ہر قسم کے سياسی اور دينی مفادات سے بالا تر ہو کر 14 اگست كو وحدت ملى كا مظاہره کرتے ہوئے 35 سال سے جاری سياسی دہشت گردی اور غنڈه گردی کے خاتمہ کیلئے ضرب ذوالفقار میں بهربور شركت کریں اور مذہبی منافرت، تکفيريت اور دہشت گردی كو جنم دينے والے آل سعود کے ايجنٹوں سے ايوان حكومت كو پاک كر ديں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نےمرکزی سیکریٹریٹ سے جاری  اپنے ایک  بیان میں کیا۔

 

علامہ شفقت حسین شیرازی کا کہنا تھا کہ مجلس وحدت مسلمین کے سربراه علامہ ناصرعباس جعفری نے اس سياسی جدوجہد اور انقلابی تحريک كو بالكل صحيح "ضرب ذوالفقار" كا نام ديا ہے، کيونکہ جذبہ حيدر کرار اور ذوالفقار ہی اس زمانے کے خوارج سے ہميں نجات دلا سکتی ہے۔ اس تنگ نظر اور متعصب سياسی ٹولے نے كبھی فوجی جوانوں کے نعروں سے "نام حيدر" كو ختم کرنے كا حكم ديا اور كبهی "نام ذوالفقار" كو انتخابی نشانوں کی فهرست سے نكالا، اب قوم متحد اور بيدار ہے۔ 14 اگست كو اسلام آباد اور ديگر تمام شہروں ميں حيدر حيدر ہوگا، دمادم مست قلندر ہوگا، فضائيں لبيک يارسول الله اور لبيک ياحسين کے نعروں سے گونجيں گی، نعره حيدری بلند ہوگا۔ پاکستان کی بقاء، سلامتی اور ترقی کی دعائيں ہونگی۔ تمام مذاہب اور مکاتب فكر کے لوگ عملی طور بر وحدت كا عظيم الشان مظاہره كريں گے۔ اب پاکستانی قوم نے یہ عہد کر ليا ہے کہ ہمارے پیارے وطن ميں تنگ نظروں کیلئے کوئی جگہ نہیں۔ قوم اب شريف برادران سے ہر ولی کے مزار کی شهادت، ہر امام بارگاه اور مسجد كی بيحرمتی، سرزمين وطن ميں دہشتگردی کی بدولت گرنے والے ہر بيگناه خون کے ہر قطرے كا حساب لے گی۔ اگر حكومت ماڈل ٹاون کی طرح ايک اور کربلا بنانے کی ہمت ركهتی ہے تو پوری کوشش کرلے۔ اب قوم گیدڑوں کے جسم سے شير کی کھال اتار كر ہی دم لے گی۔

وحدت نیوز(لاہور)شریف برادران بوریا بستر لپیٹ لیں ، عوامی سمندر ظالم حکمرانوں کو بہا کر لے جانے کے لئےساحل سے ٹکرا رہا ہے،مجلس وحدت مسلمین اپنے اہل سنت بھائیوں کو مشکل گھڑی میں تنہا نہیں چھوڑی گی، منہاج القرآن میں محصور خواتین ، معصوم بچوں اور بزرگوں کے لئے سبیلوں کا اہتمام کیا جائے گا، نواز شریف سیاسی مخالفین سے انتقام لینے کے لئے کمر بستہ ہیں ، ڈاکٹر طاہر القادری، عمران خان، شیخ رشید اور چوہدری برادران کے خلاف لاہو رہائی کورٹ کا فیصلہ کرپٹ ججوں کی غلام ذہنیت کی عکاس ہے، پنجاب بھر کے کارکنان لانگ مارچ کے حوالے سے تمام تر انتظامات جلد مکمل کریں ، جی ٹی روڈ پر استقبالیہ کیمپس لگائے جائیں گے، ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ ناصر عباس جعفری نے صوبائی سیکریٹریٹ مسلم ٹائون میں ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پرمرکزی رہنما علامہ احمد اقبال ،علامہ مبارک موسوی علامہ اعجاز بہشتی ، فضل نقوی ، نثار فیضی، صوبائی سیکریٹری جنرل علامہ عبد الخالق اسدی، اسد عباس نقوی ، رائے ناصر ، مظاہر شکری و دیگر بھی موجود تھے۔

 

علامہ ناصر عباس جعفری کا کہنا تھا نواز حکومت اسلام آباد اور لاہور میں موجود ملازمین عوامی احتجاج کو روکنے کے لئے غیر جمہوری اقدامات کا سہارا لے رہی ہے،پنجاب بھر میں ایم ڈبلیوایم کے کارکنان کو انقلاب مارچ میں شرکت سے روکنے کے لئے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کررہی ہے، لاہور ، شیخوپورہ، ملتان ،راولپنڈی اور سرگودھا سمیت دیگر شہروں میں کارکنان کے گھروں میںچھاپے جاری ہیں ، نواز لیگ ایسی غیر جمہوری حرکتوں سے ہمیں خوفزدہ نہیں کر سکتی، دہشت گردی، کرپشن ، لوڈشیڈنگ اور کرپشن سے تنگ اٹھارہ کروڑ عوام اس ظالم استحصالی سے جنگ کے لئے میدان میں نکلنے والے ہیں ، پاکستان کی تاریخ میں استحکام وطن کے لئے شیعہ سنی عوام کا اکھٹا ہو کر نکلنا تکفیریت کی شکست ہے، علامہ ناصر عباس جعفری نےایم ڈبلیوایم کے صوبائی رہنمائوں کو احکامات جاری کئے کے منہاج القرآن میں محصور خواتین ، معصوم بچوں اور بزرگوں کے لئےفوری طور پر سبیلیں لگائی جائیں اور انقلاب مارچ کے شرکاءکے لئے کھانے پینے کی اشیاء فراہم کی جائیں ۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کےسربراہ علامہ ناصر عباس جعفری نے منہاج سیکریٹریٹ میں ڈاکٹر طاہر القادری اور صاحبزادہ حامد رضا کے ہمراہ پر ہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئےکہا کہ پنجاب حکومت کے تمام سازشی حربے ناکام ہوچکے ہیں، یوم شہداء کو ثبوتاژکرنے کے لئے شرکاء پر طاقت کا بے دریغ استعمال کیا جارہا ہے،حکومت کی جانب سے یوم شہداء میں رکاوٹیں ڈالنے اورظالم استبدادی حکومت سے نجات کے لئے پاکستان کے تمام شیعہ سنی عوام متحد ہوکرسڑکوں پر نکل آئیں،مشکل کی اس گھڑی میں اپنے اہل سنت بھائیوں کو یزیدی نواز حکومت کے سامنے تنہا نہیں چھوڑیں گے، گلگت تا کراچی اور کوئٹہ تا خیبرہر گلی ہر کوچے میں مظلوموں کی حمایت میں دھرنے دیئے جائیں ،مرکزی یوم شہداء کا اجتما ع ماڈل ٹاون لاہور میں ہر صورت ہوگا،قومی سلامتی کے نام وزیر اعظم صاحب کا سیاسی شو بری طرح فلاپ ہو گیا،نواز شریف کا ہم سے بات چیت اور مذاکرات سے انکار ہمارے موقف کی صداقت کی دلیل ہے۔

 

انہوں نے مذید کہا کہ پنجاب بھر میں پاکستان عوامی تحریک ، مجلس وحدت مسلمین، سنی اتحاد کونسل اور مسلم لیگ ق کے خلاف ریاستی دہشت گردی نے نون لیگ کی ناکامی کو واضح کردیا، پنجاب حکومت اپنے اقتدار کی بقاء کی خاطر نہتی خواتین ، معصوم بچیوں اور بزرگوں پر گولیاں برسا رہی ہے، نوازاور شہباز شریف جتنا ظلم چاہیں کرلیں ، کون کے آخری قطرے تک میدان میں ڈٹے رہیں گے، ظلم کے ایوانوں کت زمین بوس ہونے سے پہلے واپس گھروں کو نہیں جائیں گے، چاہےہفتوں لگیں یا مہینے، حکومت نے ہماری احتجاجی تحریک کو ثبوتاژکرنے کے لئے کرائے کے بدماش بھیجنے کا پلان تیار کیا ہے اور انتشار اور دہشت گردی کے ذریعےحکومت کے مفاد اور ہمارے خلاف اقدامات کریںگے،ڈاکٹر طاہر القادری یہ کسی بھی رہنما کی گرفتاری کےبعد حالات کے مذید کنٹرول میں رہنے کی ذمہ داری نہیں لے سکتے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل اور ایم ڈبلیوایم کےمرکزی سیکریٹری خارجہ امور کےعلامہ سید شفقت حسین شیرازی نے کہا ہے کہ مجلس وحدت کے سربراہ علامہ ناصر عباس جعفری کی اپیل پر نہ فقط پاکستان بلکہ دنيا بھر ميں ظلم و بربريت كيخلاف پرجوش احتجاجات کی لہر اٹھے گی اور ظالموں سے ان کے ہر ظلم كا حساب لے گی۔ لبيک يارسول الله اور لبيک ياحسين کے فلک شگاف نعروں سے بہادر اور غيور پاكستانی قوم ان بزدل اور خائن حكمرانون کے ايوانوں كو ہلا كر ركهـ دے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نےمرکز ی سیکریٹریٹ سے جاری اپنے بیان میں کیا۔

 

علامہ شفقت شیرازی کا کہنا تھا کہ احتجاجات اور لانگ مارج ہمارا جمہوری حق ہے اور يہ اس وقت تک جاری رہیں گے، جب تک قاتلوں كو عدالت ميں لا كر انہيں قرار واقعی سزا نہیں دی جاتی۔ انکا مزید کہنا تھا کہ ہماری قوم ہر بيگناه خون کے ایک ایک قطرے كا حساب لے گی۔ تنگ نظر اور ڈكٹيٹر مزاج حكمرانوں كا جمیوريت سے كوئی تعلق نہیں اور نہ پاكستانی نظام جعلی جمہوريت اور جعلی مينڈیٹ سے چلايا جاسكتا ہے۔ پاكستان کی عوام آل سعود کی 35 سالہ غلامی کے نظام سے تنگ آچکی ہے۔ تمام مكاتب فكر اور مذاہب کے لوگ عوامی احتجاجات ميں شركت كرکے نئے پاكستان، اخوت و محبت کے پاكستان، رواداری و ملنساری کے پاكستان، خوشحال اور ترقی يافتہ پاكستان، علامہ اقبال اور قائدأعظم محمد على جناح کے پاكستان کی تشكيل ميں اپنا اپنا كردار ادا كریں۔ ہماری پوليس اور ديگر انتظامی اداروں ميں سروس كرنے والے افسران اور اہلكار ان ظالموں کے اشاروں پر انکی كرسياں بچانے كيلئے اپنے ہی بہن بهائيوں كو اذيت دینے اور انکے خون سے ہولی كهيلنے سے پرہيز كريں۔ سانحہ ماڈل ٹاون سے عبرت حاصل كريں، كوئی بهی عوام کی عدالت يا پهر خدا كی عدالت سے نہيں بچ سکے گا۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکریٹری سیاسیات سید ناصرعباس شیرازی نے  پنجاب حکومت کی جانب سے ایم ڈبلیوایم کے کارکنان کی بلاجواز گرفتاریوں کی پرزور مذمت کرتے ہوئے کہا کہ شریف برادران نے حقیقی انداز میں اپنی شکست تسلیم کر لی ہے، یوم شہداء میں شرکت کے لئے آنے والے ایم ڈبلیوایم کے کارکنان کو جبراً گرفتار کیا جا رہا ہے، مختلف شہروں سے یوم شہداء میں شرکت کے لئے آنے والے 45 کارکنان کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے،پنجاب حکومت کے اوچھے ہتھکنڈے ہمیں ظلم کے خلاف جدوجہد سے نہیں روک سکتے، ہم خون کے آخری قطرے تک میدان میں ڈٹے رہیں گے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایم ڈبلیوایم کے صوبائی سیکریٹریٹ مسلم ٹاون میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

 

ان کا مذید کہنا تھا کہ یوم شہداء اور انقلاب مارچ کسی صورت ملتوی نہیں ہوگا، کارکنان تمام تر رکاوٹوں کو عبور کرتے ہوئے منہاج القرآن پہنچیں ، اگر پنجاب حکومت کے مظالم اسی طرح جاری رہے تو ملک بھر میں احتجاج اور دھرنوں کا اعلان کر دیا جائے گا، کارکنان اور عوام کسی بھی قسم کی ہنگامی کال کے لئے خود کو تیار رکھیں ، ہم اپنے قائدین کا دفاع بھی کریں گے، پنجاب حکومت خود اپنی مشکلات میں اضافے کا سبب بن رہی ہے، عوام احتجاج میں عوامی و سرکاری املاک کے تحفظ کو ملحوض خاطر رکھیں ۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ ناصرعباس جعفری اور سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا کی صوبائی سیکرٹریٹ مجلس وحدت مسلمین پنجاب مسلم ٹاوُن لاہور میں ملاقات ہوئی اور یوم شہداء میں شامل ہونے کیلئے آنے والے مختلف اضلاع کے کارکنان کو انتظامیہ کے جانب سے ہراساں کرنے کے عمل کی مذمت کی۔ ملاقات میں علامہ ناصر عباس جعفری نے کہا کہ پرامن عوامی جدوجہد ہمارا  آئینی و جمہوری حق ہے اور اس حق کو کوئی ہم سے چھین نہیں سکتا، یہی حکمران جب لوڈشیڈنگ کیخلاف پچھلے دور حکومت میں پرتشدد احتجاج کریں یا لانگ مارچ اپنے سیاسی پارٹنر سابق چیف جسٹس کیلئے کریں تو جائز، باقی پاکستانی عوام کیلئے پابندی۔ یہ کہاں کا انصاف اور جمہوریت ہے؟ سابق صدر آصف زرداری کو بھاٹی چوک پر لٹکانے کا اعلان کرنے والے وزیراعلٰی پنجاب کس منہ سے ڈاکٹر طاہرالقادری کے خلاف بغاوت اور عوام میں اشتعال پیدا کرنے کا مقدمہ درج کر رہے ہیں۔؟ علامہ ناصر عباس جعفری نے کہا کہ حکومت ہم سے سیاسی انتقام لے رہی ہے، ڈاکٹر طاہر القادری سے پہلےمیں اور حامد رضا گرفتاری دیں گے،یوم شہداء اور انقلاب مارچ سے پہلے حکومتی بوکھلاہٹ اس بات کی غمازی ہے کہ یہ حکمران اعصابی جنگ ہار چکے ہیں، عمران خان اور ہمارا ایجنڈا تقریباً ایک ہے، کیونکہ جب تک یہ نظام تبدیل نہیں ہو جاتا حقیقی معنوں میں عوام کی حکمرانی ممکن نہیں۔

 

ملاقات میں سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا کہ ہمارے حوصلے ایسے اوچھے ہتھکنڈوں سے پست ہونے والے نہیں، ہم ثابت کریں گے کہ ان بادشاہوں کی رکاوٹیں ریت کی دیوار ثابت ہونگی۔ انہوں نے کہا کہ الحمدللہ پاکستان کے بانیان شیعہ سنی متحد ہیں اور تکفیروں کے سرپرستوں کو ملکی سلامتی سے نہیں کھیلنے دینگے، ہم حکمرانوں کو متنبہ کرتے ہیں کہ ہم پرامن یوم شہداء ہرحال میں منائیں گے، یہ ہمارا قانونی حق ہے۔ صاحبزادہ حامد رضا کا کہنا تھا کہ پنجاب بھر میں مجلس وحدت مسلمین، سنی اتحاد کونسل اور پاکستان عوامی تحریک کے کارکنان کو ہراساں کرنے والے سن لیں، انقلاب مارچ ہر حال میں ہوگا اور ہم عوامی طاقت سے اس عمل کو یقینی بنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ شریف برادران کی نااہلی کے باعث ان کی کسی حکومت نے بھی اپنی مدت پوری نہیں کی اور اس بار بھی ان کی نااہلی اور جمہوریت دشمن اقدامات کی بدولت عوام انہیں گھسیٹ کر انصاف کے کٹہرے میں لا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کی ناکامی ان کی ترجیحات ہیں، عوام لوڈشیڈنگ اور غربت کی چکی میں پس رہے ہیں اور حکمران بجلی پیدا کرنے کے بجائے سڑکیں اور پل بنانے میں مصروف ہیں۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree