وحدت نیوز (لاہور) ناصرشیرازی ایڈوکیٹ اغواکیس کی لاہور ہائی کورٹ میں سماعت، پولیس آج بھی ناصرشیرازی کو پیش کرنے میں ناکام، اگلی سماعت 28نومبر بروزمنگل کو جسٹس قاضی محمد امین کی عدالت میں ہوگی، تفصیلات کے مطابق مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل سید ناصرشیرازی ایڈوکیٹ کے اغواءکیس کی پانچویں سماعت آج 22نومبربروز بدھ لاہور ہائی کورٹ کے فاضل جج جسٹس  قاضی محمد امین کی عدالت میں ہوئی ،ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل شان گل، ایس پی آپریشن رضوان گوندل ، ایس پی لیگل رانا لطیف اور ناصرشیرازی کے وکیل فداحسین رانا عدالت میں پیش ہوئے،لاہور پولیس ناصرشیرازی کو پیش کرنے میں آج پھر ناکام رہی جس پر معزز جج نے شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایس ایس پی صاحب آپ ریاست کے خدمتگار بن کر کام کریں،معزز جج نے کہاکہ میں اس کیس کو ڈے ٹو ڈے سنوں گا،مجھے کسی جماعت،مسلک،یا فرقے سے کوئی سروکار نہیں ایک پاکستانی شہری غائب ہے،درخواستگذار کے وکیل فدا حسین رانانے الیکٹرانک میڈیا پر نشر شدہ وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ  کا ناصرشیرازی کے اغواء سے متعلق بیان عدالت کے سامنے پیش کیا،جس پر عدالت نے کہا کہ وزیر قانون اس مطلب سے اس سارے واقعے سے باخبر ہیں،اٹارنی جنرل اور ایس ایس پی نے ان کیمرہ بریفنگ کی استدعا کی جس پر عدالت نے ڈیڑھ بجے دوبارہ طلب کرلی،وقفے کے بعد اٹارنی جنرل نے کہا کہ فیڈرل گورنمنٹ سے پتہ کروایا ہے آئی بی اور آئی ایس آئی کے پاس ناصرشیرازی موجود نہیں،جسٹس قاضی محمد امین نے ناصرشیرازی گمشدگی کیس کی  اگلی سماعت کیلئے28نومبر بروزمنگل کی تاریخ کا اعلان کرتے ہوئے روزانہ کی بنیاد پر کیس کی سماعت اور اگلی پیشی پر ناصرشیرازی کو ہر صورت عدالت کے روبرو پیش کرنے کاحکم جاری کیا،سماعت کے موقع پر ناصرشیرازی کے وکیل فدا حسین رانا، مرکزی سیکرٹری سیاسیات ایم ڈبلیوایم سید اسد عباس نقوی و علمائے کرام اور صوبائی رہنما موجود تھے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستا ن کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ سید احمد اقبال رضوی اور خیبرپختونخواہ کے صوبائی سیکرٹری جنرل اقبال بہشتی نے ڈیرہ اسماعیل خان میں ایک ہفتے کے دوران مختلف واقعات میں ملت تشیع کے تین افراد کی ٹارگٹ کلنگ پر گہرے غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے اس حکومت اور متعلقہ اداروں کی نا اہلی قرار دیا ہے۔ اپنے مشترکہ بیان میں دونوں رہنماؤں نے کہا ہے کہ ڈی آئی خان میں شیعہ ٹارگٹ کلنگ کے بڑھتے ہوئے واقعات نے ’’مثالی حکومت‘‘ اور پولیس کی ’’شاندار کارکردگی‘‘ کی قلعی کھول دی ہے۔ وزیر اعلی خیبر پختونخواہ کے پاس اتنا وقت بھی نہیں وہ عوام کو تحفظ فراہم کر نے کے اقدامات کریں اور شہدا کے گھروں میں جا کر اہل خانہ کی داد رسی کر سکیں۔ ڈی آئی خان کی ہر شاہراہ پر پولیس کے ناکے اور مسلسل گشت کے باوجود اس طرح کے واقعات کا رونما ہونا ہمارے لیے شکوک و شبہات کا باعث ہے۔حکومت ملت تشیع کے خون کو سستا سمجھ رہی ہے۔ہمارے صبر کے پیمانے لبریز ہو چکے ہیں۔ حکومت ٹارگٹ کلنگ کے واقعات پر قابو پانے کے لیے موثر حکمت عملی طے کرے۔ہمیں ضرب عضب اور دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کی حمایت اور حب الوطنی کی سزا نہ دی جائے۔گزشتہ تین دہائیوں سے ہم نہ صرف دہشت گردی کا شکار ہیں بلکہ ریاستی ادارے بھی ہمارے لوگوں کو غائب کرنے میں مصروف ہیں۔ڈی آئی خان میں دہشت گردی کے بڑھتے ہوئے واقعات انتہا پسندوں اور سہولت کاروں کے خلاف بھرپور آپریشن کا تقاضہ کر رہے ہیں۔دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ کے موثر نتائج اس وقت تک حاصل نہیں ہو سکتے جب تک کالعدم مذہبی جماعتوں سے دوستانہ تعلقات کا کھلم کھلا دعوی کرنے والے عناصر کو ملک دشمن قرار دے کر ان کے خلاف بھرپور کاروائی نہیں کی جاتی۔پاکستان تحریک انصاف کی قیادت کو چاہیے کہ وہ صوبے کی بگڑتی ہوئی صورتحال کا نوٹس لے اور وہاں کے مظلوم عوام کو دہشت گردوں اور ان کے سرپرستوں سے تحفظ فراہم کریں۔ ۔انہوں نے واقعات کے ذمہ داروں کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا۔دونوں رہنماؤں نے شہید ہونے والے شاعر اہلبیت و نوحہ خوان صابر حسین ،میڈیکل سٹور کے مالک ثمر عباس اورعقیل حسین کی بلندی درجات اور پسماندگان کے صبر کے لیے دعا بھی کی۔

وحدت نیوز( کراچی) ماہ مبارک ربیع الاول کے انتظامات کے حوالے سے بلدیہ عظمیٰ کراچی کے زیر اہتمام میئر کراچی وسیم اختر کی ذیر صدارت اجلاس میں مجلس وحدت مسلمین کے وفد کی علامہ صادق جعفری کی زیر قیادت شرکت، وفد میں ڈویژنل رہنما میر تقی ظفر اور سبط اصغربھی شامل تھے، علامہ صادق جعفری نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ماہ محرم الحرام میں صفائی ستھرائی  میں کوتاہیوں کو ماہ مبارک ربیع الاول میں دور کیاجائے ، انشاءاللہ ہمیشہ کی طرح اس سال بھی شیعہ سنی ملکر رسول اکرم ﷺ کی ولادت کا جشن منائیں گے۔

وحدت نیوز(شگر) آئینی حقوق دیے بغیر کسی قسم کے ٹیکس کی وصولی نہ صرف جی بی کے عوام کے ساتھ زیادتی ہے بلکہ ملک کے آئین کے ساتھ متصادم بھی ہے.ان خیالات کا اظہار ایم ڈبلیو ایم شگر کے رہنما فداعلی شگری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا،انہوں نے مزید کہا کہ حکومت اس طرح کے آوچھے ہتھکنڈوں کے ذریعے جی بی کے عوام سے منہ کا نوالہ بھی چھیننا چاہتی ہے.وفاقی حکومت کی دوغلی پالیسی سمجھ سے بالاتر ہے، جب کچھ دینے کی بات آتی ہے تو یہ علاقہ غیر آئینی قرارپاتاہے اور جب مختلف قوانین کا نفاذ، کئی قسم کے ٹیکسز کی حصولی اور بنجر زمینوں کو ہتھیانے کا معاملہ ہو تو یہ علاقہ آئینی اور انصاف مانگنے والے ملک دشمن اور غدار ٹھہراتے ہیں. انہوں نے صوبائی اور وفاقی حکومت سے پرزور مطالبہ کرتے ہوہے کہا کہ فورا تمام قسم کے ٹیکسز کے نفاذ کے احکامات واپس لیں اور اسٹیٹ سبجیکٹ رولز کے نفاذ کے ذریعے ملکیتی حقوق کے تحفظ کی یقینی سمیت اشیاء ضروریہ کی خریداری پر ملنے والی تمام سبسڈیز بحال کی جائے اور آئینی حقوق کے حصول کی راہ میں حائل تمام رکاؤٹوں کو دور کریں اور پر ٹیکسز کے نفاذکی بات کرے۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کےمرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل علامہ سید احمد اقبال رضوی نے مرکزی جامع مسجد و امام بارگاہ جعفریہ کمپلیکس اسٹیل ٹاؤن میں خیرالعمل ویلفیئر اینڈ ڈیولپمنٹ ٹرسٹ شعبہ فلاح وبہبود مجلس وحدت مسلمین کی جانب سے زیر تعمیر سرد خانہ برائے میت کے منصوبے پر تعمیراتی کام کا جائزہ  لینے کیلئے دورہ کیا ، اس موقع پر ایم ڈبلیوایم کے مقامی رہنما اور ٹرسٹ کے عہدیداران بھی بڑی تعداد میں موجود تھے، واضح رہے کہ اس منصوبے کا سنگ بنیاد چند ماہ قبل علامہ احمد اقبال رضوی نے اپنے دست مبارک سے رکھا تھا ،بن قاسم ٹاؤن اور گلشن حدید سمیت اطراف کی آبادیوں میں اس پروجیکٹ کی انتہائی سخت ضرورت پائی جاتی تھی عوام کو اپنے پیاروں کی میتیں محفوظ رکھنے کیلئے دور دراز علاقوں کا رخ کرنا پڑتا تھا۔

وحدت نیوز(سکردو) مجلس وحدت مسلمین پاکستان گلگت بلتستان کے زیر اہتمام ایم ڈبلیو ایم کے مرکزی رہنماء سید ناصر عباس شیرازی کے اغواء کے خلاف آل پارٹیز پریس کانفرنس کا انعقاد پریس کلب اسکردو میں ہوا۔ جس کی صدارت ایم ڈبلیوا یم جی بی کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل شیخ احمد علی نوری نے کی، آل پارٹیز پریس کانفرنس میںامامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن بلتستان ڈویژن کے صدر سعید شگری،پاکستان تحریک انصاف جی بی کے رہنماء چیئرمین احمد علی، پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنماء عبدا للہ حیدری ، آل پاکستان مسلم لیگ کے رہنماء حاجی منظور یولتر،جی بی یوتھ الائنس کے چیئرمین شیخ حسن جوہری، گلگت بلتستان تھنکرز فورم کے سپیکر حاجی رزمست خان، بلتستان یوتھ الائنس کے رہنما علی شفاء سمیت درجنوں کارکنان شریک تھے۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایم ڈبلیو ایم جی بی کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل نے کہا کہ یہ پریس کانفرنس ملک بھر میں ملت کے جعفریہ کے بے گناہ افراد کی جبری گمشدگی اور ماورائے آئین گرفتاریوں پر انتہائی تشویش کا اظہار کرتی ہے اور  پنجاب حکومت کی جانب سے ایم ڈبلیو ایم کے مرکزی رہنماء سید ناصر عباس شیرازی کے اغواء کو ریاستی دہشتگردی اور آپریشن ردالفساد پر سوالیہ نشان قرار دیتی ہے۔ ہم واضح کردینا چاہتے ہیں کہ  ناصر شیرازی سمیت دیگر جبری گمشدگان کا اغواء ماورائے آئین اور جمہوری اقدار کے منافی ہے پاکستان کی معزز عدلیہ کی بار بار اصرار کے باوجود مغوی کو عدالت میں پیش نہ کرنا عدالت کے ساتھ مذاق اور توہین عدالت کے مترادف ہے۔ناصر شیرازی کو اغواء کر کے پنجاب حکومت نے ریاستی دہشتگردی کی ہے جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔ لاہور کی اہم شاہراہ سے ایلیٹ فورس کی گاڑی میں آکرمسلح اہلکاروں کی جانب سے ناصر شیرازی کو اغواء کرنا اور اس پر حساس اداروں کی جانب سے لاعلمی کا اظہار جہاں ان اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے وہیں ملکی سا  لمیت کے لیے بھی سنگین خطرہ ہے۔ اس عمل سے ثابت ہوتا ہے کہ پنجاب میں ریاستی اداروں کی رٹ یا تو مکمل طور پرختم ہو چکی ہے یا پنجاب حکومت کی ایماء پر ماورئے آئین و قانون عمل کرنے پر مجبور ہے۔ہم مطالبہ کرتے ہیں انہیں فوری طور پر رہا کرنے میں چیف جسٹس آف پاکستان اور آرمی چیف اپنا کردار ادا کرے۔ علاوہ از یں ملک بھر میں ماورائے آئین و عدالت جبری گمشدگی کا سلسلہ انتہائی تشویشناک ہے انہیں فوری طور پر بازیاب کرکے آئین کی عملداری کو یقینی بنائی جائے۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا  کہ آئین پاکستان کی رو سے سیاسی جدوجہد تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں سمیت تمام مذاہب کا بنیادی حق ہے۔ یہ ملک ان تمام مذاہب و مسالک کے ہیں جنہوں نے تحریک پاکستان میں حصہ لیا اور آج پاکستان میں موجود ہیں۔ اقبال و جناح کے پاکستان میں نظریات کی بنیاد پر دیوار سے لگانے کی کوشش ملک دشمنی ہے۔ ہم ریاستی اداروں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ملک کو فرقہ وارانہ بنیادوں پر تقسیم کرنے کی کوشش کو ناکام بنا کر تمام مسالک و مذاہب کو انکی تعلیمات کے مطابق زندگی گزارنے کا موقع فراہم کیا جائے۔ پاکستان کی عدالت عالیہ کو فرقہ وارنہ بنیادوں پر تقسیم کرنے کی کوشش کرنے والے نام نہاد وزیر قانون رانا ثناء اللہ کو برطرف کر کے انہیں سخت سزا دی جائے۔
 
انہوں نے کہا کہ گلگت  بلتستان میں پرامن علمائے کرام کو شیڈول فور میں ڈال کر برابری کی کوشش کی گئی ہے انہیں شیڈول فور سے نکالا جائے بلخصوص یمن جنگ میں آرمی کو دھکیلنے کی حکومتی کوشش کے خلاف احتجاج پر ایم ڈبلیو ایم کے رہنماء شیخ نیئر عباس کو قید کرنا سراسر ناانصافی اور غنڈہ گردی ہے انہیںفورا رہا کیا جائے۔ عوام کی جان ، مال ، عزت و آبرو کی حفاظت اور بنیادی ضروریات زندگی کی فراہمی ریاست کی ذمہ داری ہے لہٰذا بنیادی انسانی حقوق کی فراہمی کے لیے ریاستی ادارے اپنا کردار ادا کریں۔ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ ملک بھر میں نیشنل ایکشن پلان کو سیاسی انتقام کے لیے استعمال کرنے کی بجائے اسکی روح کے ساتھ نافذ کرکے دہشتگردوںاور سہولت کاروں کو عبرتناک سز ا دی جائے۔آج جی بی سمیت ملک بھر نیشنل ایکشن ایکشن پلان کو سیاسی انتقام کے لیے استعمال ہورہا ہے جو کہ افسوسناک ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ گلگت  بلتستان میں آئینی حقوق کے بغیر ٹیکس کا نفاذ غیر آئینی عمل ہے یہاں پر عائد تمام ٹیکسز کو واپس لے کر سٹیٹ سبجیکٹ رول سمیت متنازعہ خطے کے حقوق کو بحال کیے جائیں یا باقاعدہ آئینی حصہ بنایا جائے۔اورگلگت  بلتستان میں خالصہ سرکاری کی آڑ میں عوامی زمینوں پر قبضے کا سلسلہ ختم کیا جائے اور سی پیک میں جی بی کو بھی مناسب حصہ دیا جائے۔پریس کانفرنس کے شرکاء نے مزید کہا کہ ناصر عباس شیرازی سمیت دیگر لاپتہ افراد کی بازیابی تک حکمرانوں اور ریاستی اداروں کو اپنی حکومت کے لیے استعمال کرنے والوں کا تعاقب جاری رکھیں گے اور اس تحریک کو منطقی انجام تک پہنچا کر دم لیں گے۔

Page 1 of 135

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree