وحدت نیوز (ملتان) ایران اور عراق کی زیارات کر کے وطن واپس پہنچنے والے ہزاروں تفتان بارڈر پر محصور،غذائی قلت اور صفائی کی ناقص صورتحال کی وجہ سے زائرین پریشان،مجلس وحدت مسلمین جنوبی پنجاب کے سیکرٹری جنرل علامہ اقتدار حسین نقوی نے کہا ہے کہ حکومت تفتان میں محصور ہزاروں زائرین کی واپسی کے لیے فوری اقدامات کرے۔ ان خیالات کااظہار اُنہوں نے صوبائی کابینہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ علامہ اقتدار نقوی کا مزید کہنا تھا کہ بلوچستان کی صوبائی حکومت دس روز پھنسے زائرین کی واپسی کے لیے فوری کانوائے کے اقدامات کرے، تفتان بارڈر پر سہولیات کی عدم فراہمی ، غذا اور صفائی کی ناقص کے باعث بچے بیماریوں میں مبتلا ہورہے ہیں، حکومت بلوچستان زائرین کی سہولت کے لیے رہائش گاہ کا مناسب انتظام کرے۔ علامہ اقتدار نقوی نے مزید کہا کہ سیکیورٹی کا بہانہ بنا کر زائرین کو مسلسل پریشان اور ہراساں کرنے کی کوشش کی جارہی ہے، اگر حکومت ان اقدامات سے باز نہ آئی تو احتجاج پر مجبور ہوجائیں گے۔ اُنہوں نے کہا کہ اس وقت تفتان بارڈر پر سینکڑوں ملتان اور گردونواح زائرین پھنسے ہوئے ہیں حکومت فوری سیکیورٹی مہیا کرے ۔

وحدت نیوز(گلگت) حکومت گلگت بلتستان میں نجی اور سرکاری اداروں میں کام کرنے والے ملازمین کے فلاح و بہبود کیلئے منصوبہ بندی کرے اور ان ملازمین کے جاب سیکورٹی سمیت ای او بی آئی میں رجسٹریشن کو یقینی بنائے ۔
مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے سیکریٹری امور سیاسیات غلام عباس نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان کے نجی اداروں میں کام کرنے والے ملازمین کا مستقبل انتہائی تاریک ہے ،ان اداروں میں کام کرنے والے ملازمین کی نہ تو جاب سیکورٹی ہے اور نہ ہی کوئی ریٹائرمنٹ پیکیج ہے حالانکہ پرائیویٹ کمپنی ایکٹ کے تحت تمام ملازمین کے حقوق کا تحفظ حاصل ہے۔گلگت بلتستان میں حکومت کی جانب سے اس جانب توجہ ہی نہیں دی گئی ہے جس کی وجہ سے سینکڑوں ملازمین کا مستقبل تااریک دکھائی دے رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ لیبر ڈیپارٹمنٹ گلگت بلتستان اپنی ذمہ داریوں سے یا تو آگاہ نہیں یا پھر انہیں کوئی دلچسپی نہیں حالانکہ ای او بی آئی میں تمام نجی اداروں کے ملازمین کی رجسٹریشن کے ذریعے ان ملازمین کے مستقبل کو محفوظ بنایا جاسکتا ہے۔ گلگت بلتستان میں تمام نجی اداروں کے ملازمین کی تفصیلات اکھٹی کرکے ان تمام ملازمین کی رجسٹریشن کروائی جائے تو ساٹھ سال کے بعد یہ ملازمین پنشن کی سہولت سے استفادہ کرسکتے ہیں اور ملازمت سے فارغ ہونے کے بعد معقول پنشن اپنے گھر کے خرچے چلاسکتے ہیں جس جانب حکومت کی عدم توجہ مجرمانہ غفلت کے مترادف ہے۔انہوں نے چیف سیکرٹری سے مطالبہ کیا کہ وہ لیبر ڈیپارٹمنٹ اور ای او بی آئی کے حکام کی اس غفلت کا نوٹس لیکر متعلقہ حکام کو فوری طور پر پرائیویٹ اداروں میں کام کرنے والے ملازمین کی تفصیلات جمع کرنے اور ان کی رجسٹریشن کویقینی بنانے کیلئے احکامات صادر فرمائیں تاکہ ان غریب ملازمین کی حوصلہ افزائی ہوسکے ۔

وحدت نیوز (کوئٹہ) مجلس وحدت مسلمین کوئٹہ ڈویژن کے میڈیا سیل سے جاری شدہ بیان میں کونسلر کربلائی عباس علی نے آئے روز نوجوانوں کے منفی سرگرمیوں میں مبتلاہونے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ نوجوانوں کے توجہ کا مرکز تعلیم کو ہونا چاہئے مگر معاشرے میں منشیات کے فروغ کی وجہ سے انکا زیادہ دھیان منفی سرگرمیوں پر ہیں۔ دن میں لاکھوں روپے صرف منشیات اور سیگریٹ نوشی کے خرید و فروخت پر خرچ ہوتے ہیں اور دوسری طرف ان سے لاحق ہونے والی بیماریاں الگ مسئلہ جبکہ ہمیں غیر نصابی سرگرمیوں کو فروغ دینا چاہئے جن سے نہ صرف ہم تندرست اور صحت مند رہتے ہیں بلکہ اس سے ایک خوشگوار ماحول کی تخلیق بھی ہوتی ہے۔ انہوں نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شہر میں منشیات کے فروغ کے خلاف اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے۔ جب معاشرے میں افراد اپنی ذمہ داریوں سے غافل ہونا شروع کردیتے ہیں تو اسکا نتیجہ ان کے بجائے انکے پیاروں کی تباہی کی صورت میں ابھر کر انکے سامنے آجاتی ہے۔ ہمارا ایک قدم ایک زندگی کو تبا ہونے سے بچا سکتا ہے، سیگریٹ نوشی کے نقصانات سے ہم سب واقف ہیں اسکے ساتھ ساتھ دیگر منشیات میں جو بھی مبتلاء ہوا ہے اسکی خواہش یہی رہی ہے کہ اس دلدل سے نکل کر اچھی زندگی بسر کرے۔ انہوں نے مزید کہا کہ جو افراد منشیات کے چنگل سے آزاد ہونا چاہتے ہیں انکے لئے بہترین طریقہ یہی ہے کہ غیر نصابی سرگرمیوں میں شرکت شروع کردے۔ کھیل اور دیگرغیر نصابی سرگرمیاں ایسے عوامل ہے جنہیں ہم منشیات کا متضاد قرار دے سکتے ہیں۔بیان کے آخر میں انہوں نے کہا کہ حکومتی اداروں کو چاہئے کہ وہ حرکت میں آئے اور منشیات کے کاروبار سے وابسطہ افراد کے خلاف کاروائیوں کا آغاز کرے اور مزید زندگیاں برباد ہونے سے بچائے۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree