وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصرعباس جعفری نے کہا ہے کہ ریاستی اداروں کا استحکام ملکی سالمیت اور بقا کی ضمانت ہے۔ جو لوگ اداروں کے خلاف منفی پروپیگنڈہ کر کے انہیں کمزور کرنا چاہتے ہیں وہ ملکی سالمیت کے دشمن ہیں۔عدلیہ کے وقار کو مجروح کرنے کی کسی سازش کو کامیاب نہ ہونے دیا جائے۔پانامہ کے فیصلے پر ہرزہ سرائی کرنے والے عدالت عظمی کی توہین کے مرتکب ہو رہے ہیں۔ان پر توہین عدالت کا مقدمہ دائر کر کے عوامی اجتماعات سے خطاب پر پابندی لگائی جائے۔پاکستان قوم ریاستی اداروں پر بے جا تنقید کی کسی کو اجازت نہیں دے گی۔نواز شریف کا واویلا چور مچائے شور کے مصداق ہے ۔وہ اپنی کرپشن سے توجہ ہٹانے کے لیے عدلیہ کے خلاف شور مچانے میں مصروف ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ  پاکستان کے باشعور عوام پر حقائق آشکار ہو چکے ہیں۔نواز شریف اور ان کے خاندان کے لیے پاکستان کی سیاست میں کوئی جگہ باقی نہیں رہی۔اب انہیں احتساب کا سامنا کرنے ہو گا۔ وطن عزیز سے غیر قانونی طور پر باہر لے جانی والی ایک ایک پائی کا حساب چکایا جائے گا۔نواز شریف کے مقبولیت کے دعوے پانی کی جھاگ کی طرح بیٹھ گئے ہیں۔نااہل وزیر اعظم کی مایوسی ان کے چہرے سے عیاں ہے۔ملک کی کوئی بھی بڑی جماعت ان کے ساتھ کسی بھی قیمت پر بات کرنے کے لیے بھی تیار نہیں۔عوامی اجتماعات کر کے وہ ادارے کو بلیک میل کرنے کی ناکام کوشش میں مگن ہیں۔انہوں نے کہا نواز شریف اینڈ پارٹی نے ارض پاک کو اپنی ذاتی جاگیر سمجھ کر بے رحمی سے لوٹا ہے۔انہوں نے اصولوں کی بجائے لوٹ مار کی سیاست کی۔اقتدار کو لوٹ مار کا ذریعہ سمجھنے والے ملک و قوم کے دشمن ہیں۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین سندھ کے صوبائی سیکریٹری جنرل علامہ مقصودعلی ڈومکی نے کہاہے کہ کرپشن نے ملکی جڑوں کو کھوکھلا کرکے رکھ دیا ہے، شہر کھنڈرات کا منظر پیش کر رہے ہیں جبکہ مہنگائی اور بے روزگاری نے عوام کا جینا محال کردیا ہے۔ حکمران ٹولے کی کرپشن کھل کر سامنے آ چکی ہے، سپریم کورٹ سے عوام کی توقعات وابستہ ہیں کہ عدلیہ ملک میں جاری کرپشن کے سد باب اور بہتر طرز حکمرانی کے قیام کے لئے تاریخی کردار ادا کرے۔ آئین کی دفعہ 62  اور 63  پر عمل در آمد ملک میں بہتر طرز حکمرانی کا باعث ہوگا۔
                   
انہوں نے کہا کہ کرپشن میں غرق جمہوریت کی بجائے ہمیں صاف اور شفاف جمہوریت کی ضرورت ہے، جہاں غریب عوام کے مسائل حل ہوں۔عوام حیران ہیں کہ ملکی ادارے روز بروز کمزورہوتے جارہے ہیں جبکہ حکمرانوں کا ذاتی کاروبار روز افزوں ترقی کررہا ہے۔  ملک اس وقت جس دوراہے پر کھڑا ہے، اس کا تقاضا ہے کہ عوام اور سیاسی زعماء کرپشن فری پاکستان کی بنیاد رکھیں۔ نواز شریف عوامی حمایت کے ساتھ ساتھ اقتدار میں رہنے کا اخلاقی و قانونی جواز کھو چکے ہیں۔
                  
انہوں نے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین ، صالح ، محب وطن ، انقلابی جماعت ہے جو ملک سے کرپٹ نظام کا خاتمہ کرکے وطن عزیز کی اسلامی و انقلابی اصولوں کے تحت تعمیر وترقی چاہتی ہے۔  قائد شہید علامہ عارف الحسینی ؒ کے پیروکار مستقبل کی سیاست میں بنیادی نقش ایفا کریں گے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے شعبہ سیاسیات کا ایک اہم اجلاس مرکزی سیکرٹری سیاسیات سید اسد نقوی کی زیر صدارت منعقد ہوا۔ اجلاس میں پانامہ کیس کے ممکنہ فیصلے اور اس کے مختلف پہلووں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس میں کہا گیا کہ 20اپریل کا دن پاکستان کی تاریخ میں اہم سنگ میل ہو گا۔حکمران تمام ذرائع استعمال کرنے کے باوجود اپنی بدعنوانی چھپانے میں ناکام رہے ہیں۔عدالت عالیہ کی طرف سے پاناما کیس کے فیصلے کی تاریخ کے تعین کے بعد کرپٹ حکمرانوں کی نیندیں حرام ہوچکی ہیں۔ پاناما کیس کا فیصلہ قومی خزانہ لوٹنے والوں کی سیاسی تنزلی کے آغاز کا دن ہے۔ حکمرانوں کی سیاسی موت کا وقت آن پہنچا ہے۔انہوں نے کہا عدالت عالیہ کا فیصلہ عدلیہ کے وقار میں یقیناًاضافے کا باعث ہو گا۔ تمام سیاسی قوتوں کا یہ اخلاقی فریضہ ہے کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کو من و عن قبول کیا جائے ۔مرکزی سیکرٹری سیاسیات نے امید ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ کا واضح اور شفاف فیصلہ عالمی سطح پر پاکستان میں عدلیہ کی آزادی کے حوالے سے تاریخی اور یادگار تاثر چھوڑے گا۔  

وحدت نیوز (مظفرآباد) شب عاشور2009 مرکزی امام بارگاہ پیر سید علم شاہ بخاریؒ میں ہونیوالے خود کش حملے میں ملوث تین مرکزی ملزمان گرفتار امام بارگاہ پیر علم شاہ بخاری کے باہر 9 محرم الحرام 28 دسمبر 2009 کو خودکش دھماکہ میں 9 افراد کی شھادت ہوئی اور 54 افراد زخمی ہوئے تھے،شہداء میں ایک پولیس کانسٹیبل اور راہ گیر کے علاوہ سید علی امام نقوی،سید عصمت حسین نقوی،سید شہزادکاظمی،سید محمود الحسن نقوی اور سید عامر حسین بھاکری شہید ہوئے تھے۔گزشتہ روز مظفرآباد میں آزاد کشمیر پولیس کے ایڈیشنل ایس پی آصف درانی نے دیگر پولیس آفیسران کے ہمراہ پریس کانفرنس میں بتایا کہ 9 محرم کے دھماکہ کے مرکزی ملزمان ملک محمد اشفاق(سریاں مظفرآباد)،محمد خاقان(ہٹیاں بالا)،عمر فاروق شاہ(نیلم ویلی) کو گزشتہ دنوں گرفتار کر لیا گیا ہے۔ تینوں کا تعلق دہشت گرد تنظیم سے ہے پولیس آفیسر نے بتایا کہ ملک اشفاق  دھماکے کے بعد اپنے خاندان کو شمالی وزیرستان لے گیا تھا۔پولیس کا مزید کہنا تھا کہ مزید کہنا تھا کہ آزاد کشمیر میں دہشت گردی کا نیٹ ورک شامل خان نامی شخص جو دھیر کوٹ کا رہاشی ہے چلا رہا ہے۔ملک محمد اشفاق اس کا قریبی ساتھی ہے اب شامل خان کی گرفتاری کے لیے کوششیں جاری ہیں۔ جواینٹ انٹروگیشن ٹیم تشکیل دے دی گی ہے جس کی تفتیش کے بعد مزید انکشافات متوقع ہیںجے آی ٹی میں حساس ادارے بھی شامل ہونگے۔

اس پریس کانفرنس پر اپنارد عمل دیتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین آزادکشمیر کے رہنماوں علامہ سیدتصور حسین نقوی الجوادی ،علامہ طالب حسین ہمدانی،مولانا زاہد حسین کاظمی،مولانا مجاہد کاظمی،مولانا حمید حسین نقوی،مولانا سید فضائل حسین نقوی،سید محسن رضا جعفری ایڈووکیٹ،سید عاطف ہمدانی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگرچہ دیر آید پر انتظامیہ وپولیس کی اچھی کوشش ہے جسے ہم سراہتے ہیں لیکن اس کے ساتھ یہ خدشہ بھی موجود ہے کہ ان جنونی دہشتگردوں! جنھوں نے حرمت والے مہینہ کے تقدس کو پائمال کیا اور انسانی جانوں کا اتلاف بھی ہوا،کو کہیں سزا سے بچانے کی کوششیںنہ ہورہی ہوں لہذا اعلی عدلیہ سے توقع رکھتے ہیں کہ وہ ارض مقدس کو بے گناہوں کے خون سے نہلانے والے ان جنونی دہشتگردوں کو نہ صرف کیفر کردار تک پہنچائیگی بلکہ انوسٹیگیشن کے نتیجے میں معلوم ہونے والے نیٹ ورک کی تمام کڑیوں کو جوڑ کر ان کے سرپرستوں کوبھی عوام کے سامنے بینقاب کرے گی۔انہوں نے کہا کہ شھداء کے سوگوار خانوادے آج بھی اپنے پیاروں کی یاد میں نہ صرف تڑپ رہے ہیں بلکہ بے چینی سے ان قاتلوں کی گرفتاری کا انتظار کررہے تھے اور اب ان کا انتظار ایک امید میں بدل چکا کہ اعلی عدلیہ ضرور ان کے پیاروں کے قاتل دہشتگردوں کو انجام تک پہچائے گی.

وحدت نیوز(مانٹرنگ ڈیسک) غیرسرکاری تنظیم فافین نے مطالبہ کیا ہے کہ امیدواروں کے ایک سے زائد حلقے سے الیکشن لڑنے پر پابندی عائد کی جائے، فافین نے قانون میں تبدیلی کرکے الیکشن ٹریبونل کے فیصلوں کو حتمی قرار دینے کا بھی مطالبہ کیا ہے۔ فافین کے نمائندوں نے نیشنل پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ انتخابی عمل سے عدلیہ کا کردار مکمل طور پر ختم کیا جانا چاہئے، فافین کے نمائندوں کا کہنا تھا کہ سینیٹ اور قومی اسمبلی میں مخصوص نشستیں سیاسی جماعتوں کو ملنے والے ووٹوں کے تناسب پر دی جانی چاہیں نہ کہ کامیاب نشستوں کے تناسب پر، فافین کے نمائندوں نے مطالبہ کیا کہ عام نشستوں پر انتخاب لڑنے والے امیدواروں کی سکروٹنی کی طرز پر ہی مخصوص نشستوں پر امیدوراوں کی جانچ پڑتال بھی ہونی چاہیے۔ الیکشن کمیشن کے تمام اجلاس میڈیا اور مبصرین کے لئے اوپن ہونے چاہیں۔ فافین نے انتخابی امیدواروں کی اہلیت کے لئے آئینی ترمیم لانے کے ساتھ ساتھ مطالبہ کیا کہ قانون میں تبدیلی کرکے اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ الیکشن ٹریبونل کے فیصلے کو عدلیہ میں چیلنج کرنے پر پابندی ہونی چاہیے۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree