وحدت نیوز(لاہور) پنجاب حکومت ناصر شیرازی کے اغوا کی ذمہ دار ہے،کل(25نومبر) کی آل پاکستان شیعہ پارٹیز کانفرنس میں آئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کریں گے،ظالم اور مظلوم کو ایک ہی لاٹھی سے ہانکنے کے عمل کو بند کیا جائے،ملت جعفریہ کیخلاف انتقامی کاروائیاں عالمی ایجنڈے کا حصہ ہیں،حکمران ہوش کے ناخن لیں اور ہمارے صبر کا مزید امتحان نہ لیں ،ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی سیکرٹری سیاسیات سید اسد عباس نقوی نے آل پارٹیز کا نفرنس کے انتظامی کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا،اجلاس میں آل پارٹیز کانفرنس کے انتظامی امور کا جائزہ لیا گیا،بہتریں انتظامات پر اراکین کمیٹی کے کاوشوں کو سراہا۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں جہاں جہاں مسلم لیگ ن کی حکومت ہیں وہاں ملت جعفریہ مشکلات کا شکار ہیں،ن لیگ بیرونی آقاوں کے اشارے پر ملک میں ڈرٹی گیم کھیل رہی ہے،اس کے مثبت اثرات مرتب نہیں ہونگے،انہوں نے ڈی آئی خان میں شہید ہونے والے میجر شہید اسحاق اور شہدائے ڈیرہ اسماعیل خان کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا،انشااللہ شہداء کے پاکیزہ لہو سے ہم عہد کرتے کہ مملکت خداداد سے اس ناسور کے خاتمے تک ان ملک دشمنوں کیخلاف ہم میدان میں حاضر رہینگے،ڈیرہ اسماعیل خان میں ان درندوں کیخلاف بے رحمانہ آپریشن ہی اس ناسور کے خاتمے کا واحد حل ہے،دہشتگردوں کیساتھ ان کے سیاسی سرپرستوں اور سہولت کاروں کو بھی کسی مصلحت پسندی کے بغیر نشان عبرت بنایا جائے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) ملی یکجہتی کونسل کی اہم رکن جماعت مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل سید ناصرعباس شیرازی کے اغواءکے خلاف ملی یکجہتی کونسل کا اہم اعلیٰ سطحی اجلاس 22نومبر بروز بدھ اسلام آباد میں طلب کرلیا گیا ہے، ملی یکجہتی کونسل کے مرکزی سیکریٹری جنرل لیاقت بلوچ نے مجلس حدت مسلمین کے مرکزی سیکریٹری امور سیاسیات سید اسدعبا س نقوی سے ٹیلیفونک گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ناصرشیرازی ایڈوکیٹ کی جبری گمشدگی کے خلاف ملی یکجہتی کونسل کا اعلیٰ سطحی اجلاس طلب کرلیا گیا ہے ، جس میں کونسل تمام رکن جماعتوں کے سربراہان اور نمائندگان شرکت کریں گے، لیاقت بلوچ نے ناصرشیرازی کے تین ہفتے سے لاپتہ ہونے پر شدید تشویش کا اظہار کیا اور اب تک حکومتی غیر سنجیدہ رویئے کی مذمت بھی کی، لیاقت بلوچ نے کہا کہ اجلاس  میں شرکت کے حوالے سے تمام رکن جماعتوں کو باضابطہ طور پردعوت نامے جاری کردیئے گئے ہیں، ایم ڈبلیوایم کے قائدین سے بھی گذارش کرتے ہیں کے وہ اجلاس میں لازمی شرکت فرمائیں ، اسدعباس نقوی نے ناصر شیرازی کے اغواء جیسے حساس مسئلے پر ملی یکجہتی کونسل کا بروقت اجلاس طلب کرنے پر کونسل کے مرکزی سیکریٹری جنرل لیاقت بلوچ کا شکریہ اداکیا اور انہیں ایم ڈبلیوایم کی جانب سے شرکت کی یقین دہانی کروائی۔

وحدت نیوز( لاہور) مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل سید ناصرعباس شیرازی کے پنجاب حکومت کے ہاتھوں اغواء کے خلاف پریس کلب  لاہورتا وزیر اعلیٰ ہاوس نکالی گئی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی سیکریٹری امور سیاسیات سید اسد عباس نقوی  نے کہا کہ وزیر اعلیٰ شہباز شریف اور رانا ثناء اللہ یہ جان لیں کہ ابھی تو پاکستانی قوم نے ان سے سانحہ ماڈل ٹاؤن کا بدلہ لینا ہے، شیعہ قوم کسی صورت بھی ناصر شیرازی اور دیگر بے گناہ جوانوں کی غیر قانونی حراست پر چپ بیٹھنے والی نہیں اور ہم رانا ثناءاللہ کا پھانسی گھاٹ تک پیچھا کریں گے، ہم پاکستانی اداروں کو آگاہ کرتے ہیں کہ کسی صورت بھی حکومتی ظلم و بربریت کو برداشت نہیں کیا جائے گا،اگر ملک میں جمہوریت کو بچانا ہے تو ناصر شیرازی کی بازیابی کے لیے سنجیدہ اقدامات اٹھانے ہوں گے۔

وحدت نیوز( دینہ) مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے صوبائی سیکریٹری جنرل علامہ سید مبارک موسوی کا وفدکے ہمراہ دینہ کا دورہ، تنظیمی وسیاسی صورت حال کا جائزہ لیا گیا، تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے صوبائی سیکریٹری جنرل علامہ سید مبارک موسوی نے دینہ کا دورہ کیااس موقع پرصوبائی سیکریٹری امور سیاسیات سید حسن رضا کاظمی ، کوآرڈینیٹر مرکزی سیاسی سیل آصف رضا ایڈوکیٹ  اور صوبائی سیکریٹری امور تنظیم سازی مولانا نیازبخاری بھی ان کے ہمراہ موجود تھے، صوبائی رہنماوں نے ایم ڈبلیوایم ضلع جہلم کے اجلاس میں بھی شرکت کی ، اجلاس میں ایم ڈبلیوایم ضلع جہلم کے سیکریٹری جنرل سید وسیم حیدر، ضلعی کابینہ کے اراکین  سیکریٹری تعلیم مجاہد حسین  میر ، سیکریٹری عزاداری سیل سید حسنین مہدی، یاور عباس، حسن وقار اور دیگر کارکنان بھی موجود تھے، اجلاس میں علامہ مبارک موسوی نے مقامی عہدہداران سے تنظیمی وسیاسی صورت حال پر بات چیت کرتے ہوئے ایم ڈبلیوایم کو ضلع جہلم کی تمام تحصیلوں میں یونٹس کی تشکیل اور کارکنان کو فعال کارکردگی کا مظاہرہ کرنے کی ہدایت کی ایم ڈبلیوایم صوبہ پنجاب کے سیکریٹری سیاسیات حسن کاظمی نے شرکاء کو   آئندہ الیکشن 2018کے حوالے سے تنظیمی پالیسی پر تفصیلی بریفنگ بھی دی۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے صوبائی سیکرٹریت میں شیعہ سنی علماءو مشائخ کے مشترکہ اجلاس کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل ،ناصر شیرازی اور جمعیت علمائے پاکستان کے رہنما پیر عثمان نوری نے کہا کہ ملک بھر میں نواسہ رسول اعظم ؒکی شہادت کے سلسلے میں تمام مسلمانان ایام عزاءمنانے میں مصروف ہیں،دشمنان پاکستان و دشمنان اسلام موقع کی تلاش میں ہے کہ وہ کسی طرح سے قومی وحدت اور ملکی سلامتی پر وار کریں،ملک کے شیعہ سنی علماء و عوام متحد ہیں اور مل کر محرم الحرام میں شہدائے کربلا کو خراج عقیدت پیش کر رہے ہیں،پریس کانفرنس میں سید اسد عباس نقوی،علامہ مبارک موسوی،ڈاکٹر امجد چشتی،علامہ جاوید اکبر ثاقی،پیر اختر رسول قادری،سمیت دیگر علماءو مشائخ شریک تھے۔

سید ناصر شیرازی نے کہا کہ پاکستان کے بانیان شیعہ وسنی مکاتب فکر ہیں،ان دونوں مکاتب کے ماننے والوں نے مل کر پاکستان بنایا اور انشااللہ مل کر پاکستان بچائیں گے،ہم دشمنان پاکستان سے قیام پاکستان کے وقت سے ہی واقف ہیں ،بدقسمتی سے آج پاکستان کے سلامتی کے دشمن مسند اقتدار پر قابض ہیں،ہم نے بارہا کہا کہ پنجاب حکومت کے متنازعہ وزیر رانا ثنااللہ نہ صرف دہشتگردوں کے سرپرست و سہولت کار ہے بلکہ پاکستان کی سلالمیت و بقا کا دشمن بھی ہے،لیکن ہماری آوز پر کسی نے کان دھرنے کی زحمت نہ کی،کرپشن وریاستی ومذہبی دہشتگردی میں ملوث اور بیگناہ سنی اور شیعہ عوام کے قاتل وزیر قانون نے مذہبی تعصب کی انتہا کر دی،اپنی جان بچانے کے لئے مملکت کے اہم ستون پر خطرناک حملہ کر دیا،اور ریاست کے عدالتی نظام کو متنازعہ بنانے اور ملک میں لاقانونیت کو ہوا دینے کی وزیر قانون کی بھونڈی حرکت قابل مذمت ہے،ان مجرموں کی جگہ کرسی اقتدار نہیں تختہ دار ہے،بے دردی اور سفاکیت سے شہید کی جانے والی اس وطن کی بیٹوں اور اپنے دوپٹوں سے گولیوں کی بچھاڑ کا سامنا کرنے والی ماوں کا خون ضرور رنگ لائے گا،ملک میں مذہبی منافرت وتعصب کو ہوادینے والا علی الاعلان تکفیری دہشتگردوں کے جرائم کی سرپرستی کرنے والے اس سہولت کار بھی قانون کے شکنجے میں آئے گا،اور ایک ایک جرم کی منصفانہ وعادلانہ سزا پائے گا۔

پیر عثمان نوری نے پریس کانفرنس سے خطاب میں کہا کہ ہم اعلیٰ عدلیہ اور ملکی سلامتی ضامن اداروں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ داعشی فکر کے ترجمان راناثنااللہ کے عوام اور عدلیہ کو تقسیم کرنے والے بیان پر سخت ایکشن لیں،یہ بیان آئین پاکستان سے بغاوت کے مترادف ہے،آج اس ناعاقبت اندیش شخص نے ملکی سلامتی اور قومی وحدت کو داو ± پر لگایا ہے،عدلیہ کو تقسیم کرنے کی سازش کی ہے،کل کوئی شیعہ جن کی آباد ملک میں پانچ کڑور سے زائد ہے اٹھ کر کہے کہ ہم اہلسنت ججز کے فیصلے نہیں مانتے تو پھر اعلیٰ عدلیہ کا وجود ہی خطرے میں پڑ جائے گا،خدارا مصلحت پسندی کو پس پشت ڈال کر ملکی سلامتی و قومی وحدت کو بچانے کے لئے کردار ادا کریں،داعش کا وجود پاکستان میں ہے،اور ہم عرصہ دارز سے چیخ چیخ کر کہہ رہے ہیں اسلام آباد ہائے وے پر داعش کا پرچم آویزاں کرنا اور اس پر ن لیگی وزراءکی احمقانہ بیانات سے محب وطن شیعہ سنی عوام حیران ہیں،انٹرنیشنل امریکن مخالف میڈیا چیخ رہا ہے کہ امریکہ انڈیا،اسرائیل داعش کو شام اور عراق سے بدترین شکست کے بعد افغانستان منتقل کر رہا ہے،تاکہ پاکستان کے حالات ڈسٹرب کر سکے،لیکن ہمارے حکمران ٹس سے مس نہیں،رانا ثنااللہ کابیان داعشی سوچ اور فکر کی عکاسی ہے،ہم اسے ریاست سے بغاوت تصور کرتے ہیں،اانشااللہ محرم الحرام کے بعد باقاعدہ تحریک چلائیں گے،اور پاکستان دشمنوں کے منطقی انجام تک جدو جہد جاری رکھیں گے۔ اجلاس میں فیصلہ ہو ا کہ پنجاب کی مختلف بار کونسلز سے ملاقاتیں کی جائیں گی اور مختلف مذہبی جماعتوں سے رابطہ کیا جائے گا ۔ فیصلہ ہو ا کہ 10محرم کے فوری بعد 6اکتوبر بروز جمعہ کوشام 4بجے پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا جائے گا اجلاس میں فیصلہ ہو ا کہ محرم الحرام میں کسی بھی قسم کے ناخوشگوار واقع کی ذمہ داری رانا ثناءاللہ پر عائد ہو گی۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین کے رہنماوں علامہ مبارک علی موسوی اور سید اسد عباس نقوی کی قیادت میں وفد کی ایڈیشنل ہوم سیکرٹری پنجاب سے ملاقات،وفدمیں سید نوبہار شاہ،علامہ وقار نقوی،خرم عباس نقوی،حسنین زیدی،رانا ماجد علی،رائے ناصر شامل تھے،ایڈیشنل ہوم سیکرٹری کو ایم ڈبلیوایم کے رہنماوں نے علماء ذاکرین کو لائسنس لینے اور مجالس اور جلوس کی رجسٹریشن سے متعلق اقدامات پر اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ غیر آئینی غیر قانونی اقدامات ہے،جسے کسی بھی صورت قبول نہیں کرینگے،حکومت کی جانب سے ایڈیشنل ہوم سیکرٹری نے وفد کو وضاحت دیتے ہوئے ایکسپریس اخبار میں چھپنے والی خبر کو بے بنیاد اور من گھڑت قرار دیا،اور انہوں نے کہا کہ حکومت پنجاب نے کوئی بھی ایسے احکامات جاری نہیں کیے،ہم ذرائع ابلاغ میں اس مبہم خبر کی وضاحت اور حکومت سے منسوب خبر کی تردید کریں گے،مجلس وحدت مسلمین کے رہنماوں نے سول سیکرٹریٹ پرہونے والے احتجاجی دھرنے کی منسوخی کو حکومت پنجاب کی طرف سے متنازعہ کی واپسی یا تردید کیساتھ مشروط کر دیا ہے۔

Page 1 of 3

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree