وحدت نیوز(ننکانہ صاحب) مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس نے کہا ہے کہ پنجاب اور گلگت بلتستان میں پاکستان مسلم لیگ (ن) ہمیں انتقام کا نشانہ بنا رہی ہے ،چنیوٹ کے ڈی پی او کی طرف سے بے گناہ افراد کی گرفتاری قابل مذمت ہے ،بیرونی طاقتیں کبھی بھی تیسری دنیا کے ممالک میں ذوالفقار علی بھٹو اور بے نظیر بھٹو جیسے عوامی لیڈرز کو برداشت نہیں کرتی ۔محرم الحرام صرف اہل تشیع کے لئے ہی نہیں بلکہ تمام مسالک اور تمام مذاہب کے لئے بھی قابل احترام مہینہ ہے ،محرم الحرام میں بلدیاتی انتخابات آگے بڑھائے جائیں ۔ان خیالات کا اظہا ر انہوں نے مجلس وحدت مسلمین ضلع ننکانہ صاحب کے زیر اہتمام مقامی شادی ہال میں منعقدہ استحکام پاکستان اور استقبال محرم الحرام کانفرنس کے شرکاء سے خطاب اور بعد ازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔کانفرنس سے پاکستان عوامی تحریک کے مرکزی جنرل سیکرٹری خرم نواز گندا پور ، علامہ محب النبی طاہر ،حاجی عبد الحمید رحمانی ،سید اسد حسین بخاری سمیت دیگر نے بھی خطاب کیا۔ علامہ راجہ ناصر عباس نے کہا کہ ایٹمی طاقت پاکستان ہر دولت سے مالا مال ملک ہے لیکن اندرونی اور بیرونی دشمنوں کو اس ملک کی ترقی برداشت نہیں ہوتی اس لئے وہ یہاں کبھی صوبائیت ،کبھی لسانیت اور کبھی فرقہ ورانہ بنیادوں پر ہمیں آپس میں لڑانے کی سازشیں کرتا ہے لیکن ہمیں ان سازشوں کو مل کو ناکام بنانا ہے ، انہوں نے کہا کہ ہمارے حکمران کمزور اور بزدل ہیں جو حج بیت اللہ کے دوران شہید اورلاپتہ ہونے والے پاکستاینوں کو واقعہ پر خاموش ہیں،انہوں نے کہا کہ پاکستان میں عوام صحت ،تعلیم ،روزگار سمیت کئی سہولیات سے محروم ہیں ،صرف صوبہ سندھ میں ایک کروڑ سے زائد افراد ہیپا ٹائٹس جیسی موذی بیماری کا شکا ر ہیں ۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے خرم نواز گنڈا پور نے کہا کہ دہشت گردی کے اس ماحول میں ہمیں امن و محبت کو فروغ دینا چاہئے ،ہم سب کو امن کی خوشبو ہر طرف پھیلانے کے لئے اپنا اپنا کردار ادا کرنا چاہئے ،پاکستان ہم سب کا ہے اور ہم سب ہی اس کے رکھوالے ہیں ،انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کا سب کچھ بیرون ممالک میں ہے اس لئے انہیں اس ملک کے مسائل حل کرنے میں کوئی دلچسپی نہیں ہے ۔تمام مسالک اور مذاہب کو محرم الحرام کے مقدس مہینے میں قیام امن کے لئے مل کر کام کرنا ہو گا ۔

وحدت نیوز(بلتستان) یوم پاکستان کی مناسبت سے مجلس وحدت مسلمین پاکستان بلتستان ڈویژن کی جانب سے "استحکام پاکستان کانفرنس" کا انعقاد ہوا، جس میں لوگوں کی کثیر تعداد شریک تھی۔ کانفرنس کی ابتداء تلاوت کلام پاک سے ہوئی۔ نعت رسول مقبول (ص) کے بعد شرکاء سے انجمن امامیہ بلتستان کے سٹی صدر علامہ شیخ زاہد حسین زاہدی، ڈاکٹر میثم شجاعت، پروفیسر محمد علی، پروفیسر حشمت کمال الہامی، شیخ احمد علی نوری اور مجلس وحدت مسلمین پاکستان بلتستان ڈویژن کے سیکرٹری جنرل علامہ آغا علی رضوی نے خطاب کیا۔ مقررین نے اپنے خطاب میں کہا کہ آج سوچنے کا مقام یہ ہے کہ 23 مارچ 1940ء کو برصغیر کی مسلمان قوم کے لیے ایک الگ وطن کی ضرورت تھی جس کے لیے لاہور میں قرارداد پیش کی گئی لیکن آج وطن کو ایک مستحکم نظریاتی اور غیرتمند قوم کی ضرورت ہے۔ آج پاکستان کو مسلمان قوم کی ضرورت ہے۔ آج ہم مسلمان قوم کم جبکہ پنجابی، سندھی، پٹھان، بلوچی اور شیعہ، سنی و مہاجر زیادہ ہیں۔ ہماری بدقسمتی یہ ہے کہ آج ہم نے قوم کے غداروں کو ایوانوں میں بھیجا ہے جو قوم کا سودا کر کے اپنی تجوریاں بھرتے ہیں۔

 

مقررین نے کہا کہ آج ہمارے نمائندے ڈالر اور ریال کے عوض قومی غیرت و حمیت کا علی الاعلان سودا کر رہے ہیں۔ ہمارے تعلیمی اداروں، اقتصادی اداروں، ریاستی اداروں، معاشی اداروں اور عسکری اداروں کو امریکی و سعودی ایماء پر مفلوج کیا جا رہا ہے۔ آج ہم اس نتیجے پر پہنچ چکے ہیں کہ ساٹھ سال سے زائد کا عرصہ گزرنے کے بعد پاکستان کی بقاء و سلامتی اور استحکام کے لیے سوچنے پر مجبور کیا جا رہا ہے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ من حیث القوم اپنے اندر اتحاد پیدا کریں اور قوم کے سوداگروں سے چھٹکارا پانے کے کوشش کریں۔ اس وقت اقبال و قائد کے نظریات کے احیاء اور ان پر عمل کرنے کی ضرورت ہے۔

 

استحکام پاکستان کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین علامہ آغا علی رضوی نے کہا کہ اگرچہ اسوقت مختلف صوبوں، مسلکوں، خطوں پر ظلم کے پہاڑ توڑے جا رہے ہیں لیکن سب سے بڑا ظلم وطن عزیز پاکستان پر ہو رہا ہے۔ وطن عزیز پاکستان کا چپہ چپہ اپنے ہی شہریوں کے خون سے رنگین ہے۔ شیطان بزرگ امریکہ کی جانب سے وطن عزیز کی سرحدوں کی پائمالی کا سلسلہ جاری ہے۔ ملک کو خانہ جنگی کی طرف دھکیلنے کے لیے تمام پاکستان دشمن طاقتیں متحد ہیں اور دہشت گردی و فرقہ واریت کے ذریعے اس ملک کو عدم استحکام کی طرف دھکیلا جا رہا ہے جسے اس ملک کے غیور شیعہ و سنی اپنی جانوں کا نذرانہ دے کر کامیاب ہونے نہیں دیں گے۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree