وحدت نیوز (سکردو) مجلس وحدت مسلمین پاکستان گلگت بلتستان کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل علامہ احمد علی نوری نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ گلگت بلتستان کے تعلیمی اداروں میں مذہبی تقریبات پر پابندی عائد کرنے والی حکومت سے جی بی اسمبلی سکینڈل کی انکوائری کا مطالبہ عبث ہے۔ جرائم پیشہ افراد اس وقت تک دلیر نہیں ہوتے جب تک انکی پست پناہی کرنے والے موجود نہ ہوں۔ انہوں نے کہا ہے کہ جی بی اسمبلی کے اراکین کے متعلق چھپنے والی رپورٹ سے عوام میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے اور اس خبر سے خطے کے عوام کا سر شرم سے جھک گیا ہے۔ یہ واقعہ خطے کی تاریخ کا سیاہ ترین واقعہ جسکی مذمت کے لیے الفاظ کم ہیں۔

 اپنے ایک بیان میں علامہ احمد علی نوری کا کہنا تھا کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے متعلقہ جرائم میں ملوث افراد کو گھیر کر قرار واقعی سزا دینے میں اپنا کر دار ادا کرے۔ اس سیاہ جرم میں ملوث افراد ریاستی اداروں کو استعمال کرنے کی کوشش کریں گے جس کی اجازت نہ دی جائے۔ قانون شکنی، آئین کی خلاف ورزی اور دیگر معاملات میں جی بی اسمبلی نے نہ کبھی مثبت قدم اٹھایا ہے اور نہ اٹھانے کی امید ہے۔ اسمبلی کے سپیکر اور وزیر اعلیٰ قانون شکنوں، آئین کی خلاف ورزی کرنے والے مجرموں کو پناہ دیتے ہیں لیکن افسوس کا مقام ہے کہ ریاستی ادارے بھی ایسے واقعات پر خاموش رہتے ہیں ۔ ان کی معنی خیز خاموشی لمحہ فکریہ ہے۔

 انہوں نے مزید کہا کہ جس رپورٹر نے تمام تر خطرات کو پس پشت ڈالتے ہوئے اسمبلی کے مقدس ایوان کو ناپاک کرنے والی کالی بھیڑوں کے چہرے سے پردہ اٹھا یا ہے وہ اہم ہے لیکن تاحال کیس مثبت سمت میں نہیں جا رہا جو کہ افسوسناک ہے۔ اس شرمناک واقعے میں ملوث بدکرداروں کے لیے اسمبلی کا دروازہ ہمیشہ ہمیشہ کے لیے بند ہو جانا چاہیے۔ اگر اس کی انکوائری اور اس میں ملوث اراکین کو منظر عام پر لانے میں سستی اور کوتاہی برتی گئی یا رکاوٹیں ڈالی گئیں تو صوبائی حکومت زیر سوال آئے گی۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے دیامر،ہنزہ،چلاس سمیت گلگت بلتستان کے مختلف علاقوں میں طوفانی بارشوں کے نتیجہ میں ہونے والی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے افسوس کااظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ مزید نقصانات سے بچنے کے لیے حکومت کو قبل از وقت حفاظتی اقدامات کرنا ہوں گے۔سینکڑوں مکانات منہدم ہونے سے جو لوگ بے گھر ہو گے ہیں ان کو کھلے آسمان تلے بے یارومددگار نہ چھوڑا جائے بلکہ ان کے لیے عارضی رہائشوں کا فوری بندوست کیا جانا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ لینڈ سلائینڈنگ کی وجہ سے جن علاقوں سے رابطہ منقطع ہے وہاں غذائی قلت کی بھی اطلاعات آ رہی ہیں۔ اس کے علاوہ سینکڑوں مسافر جن میں بچے اورخواتین بھی شامل ہیں راستوں میں پھنسے ہوئے ہیں۔ اشیائے ضروریہ کی قلت کو دور کرنے کے لیے فضائی وسائل کو بروئے کا ر لایا جائے۔سڑکوں کی بحالی کے لیے جدید مشینری کا ااستعمال بلاتاخیرشروع کیا جانا چاہیے تاکہ زمینی رابطہ فوری بحال کیا جا سکے۔مالی نقصانات کا تخمینہ لگانے کے لیے فوری اقدامات کیے جائیں اور متاثرین کو معاوضوں کی ادائیگی کی جائے ۔انہوں نے کہا کہ اس مشکل گھڑی میں سیاسی ضرورتوں سے بالاتر ہو کر انسانی ہمدردی کے تقاضوں کو مقدم رکھنا ہو گا۔عوامی کی داد رسی میں تاخیر قطعی ناقابل قبول ہے۔علامہ ناصر عباس نے مجلس وحدت مسلمین کے پلیٹ فارم سے منتخب ہونے والے اراکین اسمبلی کو خصوصی ہدایات کی ہیں کہ وہ متاثرین کی بحالی کے لیے اپنی کوششوں کا بھرپور استعمال کریں ۔

وحدت نیوز (گلگت) نیٹکو بورڈ آف ڈائریکٹرز کے غلط فیصلے علاقے کے غریب ملازمین کے پیٹھ میں چھرا گھونپنے کے مترادف ہے۔دوران ملازمت وفات پانے والے ملازمین کے ورثاء کو ادارے میں ملازمت کے مواقع فراہم نہ کرنا اس ادارے اور ملازمین کے ساتھ ناانصافی ہے ۔

مجلس وحدت مسلمین کے رہنما اور رکن گلگت بلتستان اسمبلی حاجی رضوان علی نے کہا کہ نیٹکو ایک اہم قومی ادارہ ہے جس کے ملازمین کو وہی سہولیات میسر ہونا چاہئے جو دیگر سرکاری اداروں کے ملازمین کو حاصل ہیں۔آج نیٹکو جس مقام تک پہنچا ہے وہ ان غریب ملازمین کی دن رات انتھک محنت سے حاصل ہوا ہے اور ان غریب ملازمین کے انتھک محنت کے ثمرات ان کے وارثین کوپہنچانا عین انصاف ہے ۔ایم ڈی نیٹکو کی جانب سے دوران ملازمت وفات پانے والے ملازمین کے ورثاء کو ملازمتیں دینے کی سمری کو واپس کرکے نیٹکو بورڈ آف ڈائریکٹرز نے سخت انصافی کی ہے اور ان کا یہ اقدام ادارے اور گلگت بلتستان کے غریب ملازمین کے ساتھ دشمنی و عداوت پر مبنی ہے۔ تمام سرکاری اداروں میں اسسٹنٹ پیکیج پر عمل درآمد کیا جارہا ہے جس سے غمزدہ خاندان کی دلجوئی کے علاوہ کئی بے سہارا خاندانوں کی کفالت کا شرعی فریضہ بھی ادا ہورہا ہے اور یہی پیکج نیٹکو کے ملازمین کیلئے بھی ہونا چاہئے تاکہ وہ غریب ملازمین جو دوران ملازمت خالق حقیقی سے جا ملتے ہیں ان کے دکھوں کا مداوا ہوسکے اور اگر ایسا نہ کیا گیا تو کل کلاں ملازمین کے احتجاج کی صورت میں مجلس وحدت مسلمین ان کے حقوق کیلئے بھرپور طاقت سے میدان میں اترے گی۔

وحدت نیوز (گلگت) مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے سیکرٹری جنرل علامہ نیئر عباس مصطفوی کے زیر صدارت صوبائی پولیٹیکل کونسل کا اجلاس وحدت ہاؤس گلگت میں منعقد ہوا جس میں بلتستان ڈویژن سے علامہ احمد نوری کی قیادت تمام حلقوں کے نمائندوں نے شرکت کی۔ اراکین اسمبلی حاجی رضوان علی،کاچو امتیاز حسین ،بی بی سلیمہ اورایم ڈبلیو ایم شعبہ خواتین کی کوارڈینیٹر سائرہ ابراہیم نے بھی اجلاس میں شرکت کی۔ اجلاس کے اختتام پر اعلامیہ جاری کیا گیا۔

گلگت بلتستان کی آئینی حیثیت کے تعین میں مزید تاخیر برداشت نہیں کی جائیگی،پاک چائنااکنامک کوریڈور کی تمام تفصیلات منظر عام پر لائی جائیں اور گلگت بلتستان کے حقوق پر کسی کو شب خون مارنے کی اجازت نہیں دی جائیگی۔تمام محکموں میں گریڈ 14 تک NTS اوراپر سکیل کے ملازمتیں پبلک سروس کمیشن کے ذریعے پر کی جائیں اور میرٹ کی پائمالی ناقابل برداشت ہوگی۔گلگت بلتستان کے عوام بد ترین لوڈ شیڈنگ کے اذیت میں مبتلا ہیں خاص کر سکردو پر اندھیروں کا راج ہے۔ گلگت سکردو روڈ کی تعمیر میں تاخیرسے بلتستان کے عوام سخت تکالیف میں مبتلا ہیں ،حکومت کھوکھلے نعروں کی بجائے عملی طور پر اقدامات کرے ۔ اعلامیئے میں کہا گیا کہ چور دروازوں سے بھرتیوں کا سابقہ حکومت کے فارمولے پر عمل کیا جارہا ہے جو کہ علاقے کے پڑھے لکھے بیروز گاروں سے زیادتی ہے۔دیامر سے مغوی انجینئرز کی بازیابی میں پاک آرمی کا کردار لائق تحسین ہے لیکن ان اغوا کاروں اور دیگر دہشت گردوں کے خلاف آپریشن ناگزیر ہے ۔علاقے کو پرامن بنانے کیلئے بے رحم آپریشن کا فوری آغاز کیا جائے۔جامعہ قراقرم میں یوم حسین کے انعقاد پر پابندی محسن انسانیت کی شان میں گستاخی تصور کی جائیگی۔ اجلاس میں شہید ضیاء الدین کے قاتلوں کی رہائی پر تحفظات کا اظہار کیا گیا اور مطالبہ کیا کہ شہید ضیاء الدین رضوی کیس کو ری اوپن کرکے مجرموں اور سہولت کاروں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree