وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کراچی ڈویژن کے زیرِ اہتمام حکومت و ریاستی اداروں کی جانب سے ہزاروں شہریوں و سیکیورٹی اہلکاروں کے سفاک قاتل دہشتگرد عناصر کو معافی دینے، سانحہ پاراچنار اور شیعہ زائرین کو درپیش مسائل حل نہ کرنے کے خلاف احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا ہے کہ احسان اللہ احسان کو میڈیا پر معصوم ظاہر کرنا اور اس کیلئے معافی کی راہ ہموار کرنا آئین و قانون کے ساتھ بھیانک مذاق ہے، اگر اسے معاف کیا گیا، تو شہداء کے خاندانوں کو انصاف کی فراہمی تک تحریک چلائی جائے گی، بلاتاخیر احسان اللہ احسان سمیت تمام دہشتگردوں کو تختہ دار پر لٹکایا جائے، دہشتگردی کے خاتمے میں بڑی رکاوٹ حکومتی و ریاستی اداروں کی صفوں میں بیٹھے کالعدم تنظیموں اور انتہاپسند عناصر کے سہولت کار ہیں، پیمرا مسلسل کالعدم دہشتگردوں کی میڈیا کوریج کا نوٹس لیتے ہوئے فی الفور کارروائی کرے، پاراچنار کرم ایجنسی میں محدود عرصے کے دوران دہشتگردی کے تین بڑے سانحات کا رونما ہونا متعلقہ سکیورٹی اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشانہ ہے، محب وطن شیعہ اکثریتی آبادی والے علاقے میں دہشتگردی کے واقعات پر قابو نہ پایا جانا ملت تشیع کیلئے تشویش کا باعث ہے، پاراچنار میں مسلسل دہشتگردی کے سانحات اور محب وطن اہل تشیع مسلمانوں کی نسل کشی میں ملوث کالعدم تنظیموں اور دہشتگرد عناصر اور انکے سہولت کاروں کی خلاف آپریشن کرکے انہیں جڑ سے اکھاڑ پھینکا جائے، دہشتگردوں کے خلاف پاک فوج کے آپریشن ردالفساد کی بھرپور حمایت کرتے ہیں، زائرین کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور اور محکمہ حج و اوقاف کے شعبہ زائرین کو فعال کیا جائے۔ احتجاجی مظاہرہ بعد نماز جمعہ خوجہ جامع مسجد کھارادر کے باہر کیا گیا، اس موقع پر صوبائی سیکریٹری سیاسیات علی حسین نقوی، علامہ مبشر حسن اور علامہ احسان دانش نے خطاب کئے۔

مقررین نے کہا کہ پاکستان کی مسلح افواج اور معصوم شہریوں کو نشانے بنانے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں، اعترافی بیان کے بعد انہیں سولی پر چڑھایا جانا ہی انصاف کا تقاضہ بنتا ہے، کالعدم تحریک طالبان پاکستان کی سالمیت و استحکام کے خلاف ملک دشمنوں کے ساتھ مل کر کام کرتی رہی، بھارتی خفیہ ایجنسی را اور افغان خفیہ ایجنسی این ڈی ایس کیلئے خدمات مہیا کرنے والے دہشتگرد عناصر ملک و قوم کے غدار ہیں، احسان اللہ احسان ملعون کے حمایت میں بولنے والوں کیخلاف بھی نیشنل ایکشن پلان کے تحت کارروائی عمل میں لائی جائے، اگر ان درندوں کے ہمدردوں کیخلاف کارروائی نہ کی گئی تو شہداء کے لواحقین یہ سمجھیں گے کہ حکومت اور مقتدر ادارے وارثان شہداء کو انصاف دلانے میں سنجیدہ نہیں، آج ہزاروں شہداء کے وارث قصاص کا مطالبہ کرتے ہیں، جبکہ پیمرا مسلسل کالعدم دہشتگرد وں کی میڈیا کوریج کا نوٹس لے۔ انہوں نے کہا کہ سانحہ پاراچنار سمیت دہشتگردی کے واقعات سے بچنے کیلئے آپریشن ردالفساد کے ساتھ ساتھ نیشنل ایکشن پلان پر بھی اسکی روح کے مطابق عمل کیا جائے، ملک کو دہشتگردوں سے پاک کرنے کیلئے سہولت کاروں کے خلاف بھرپور آپریشن وقت کی اہم ضرورت ہے۔ مقررین نے کہا کہ نواز حکومت جان بوجھ کر زائرین کیلئے مشکلات پیدا کر رہی ہے، کئی کئی روز تک تفتان بارڈر پر زائرین کو محصور رکھا جاتا ہے، بلوچستان میں داخل ہونے پر زائرین سے این اوسی طلب کیا جاتا ہے، مردم شماری کو بہانہ بنا کر زائرین کے قافلے روک دیئے گئے ہیں، حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ زائرین کے ساتھ بھرپور تعاون کیا جائے اور محکمہ حج و اوقاف کے شعبہ زائرین کو فعال کیا جائے۔

وحدت نیوز(ٹنڈومحمدخان) مجلس وحدت مسلمین ٹنڈو محمد خان کیجانب سے پارہ چنار سانحہ اور زائرین کربلا کو کانوائی کے نام پر پریشان کرنے کیخلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا احتجاجی مظاہرے سے سیکریٹری جنرل محمودالحسن،محب بھٹو،مولانہ محمد بخش غدیری اور دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پارہ چنار میں مسلسل شیعہ قتل عام آپریشن ضرب عضب اور آپریشن ردالفساد پر سوالیہ نشان ہے ۔انکا مزید کہنا تھا کے حکمران دہشتگردوں اور انکے سہولتکاروں کو تحفظ فراہم کرنے میں مصروف عمل ہیں ۔آپریشن ضرب عضب کیطرح آپریشن ردالفساد کو بھی ذاتی مفادات  کی خاطر استعمال کیا جا رہا ہے ہم پارہ چنار میں مسلسل شیعہ قتل عام کی سخت لفظوں میں مذمت کرتے ہیں اور پاکستان سے کربلا جانیوالے زائرین کو پریشان کیا جا رہا ہے جو کہ قابل مذمت عمل ہے۔ہم ریاستی اداروں اور حکمرانوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ زائرین کربلا کو سہولیات فراہم کی جائیں اور انہیں مکمل تحفظ فراہم کیا جائے۔

وحدت نیوز(ملتان) مجلس وحدت مسلمین ضلع ملتان کے زیراہتمام سانحہ پارہ چنار کے شہداء سے اظہار یکجہتی کے لیے ملتان پریس کلب کے سامنے شمعیں روشن کی گئی، اس موقع پر مجلس وحدت مسلمین کے صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ اقتدار حسین نقوی، ڈپٹی سیکرٹری جنرل محمد عباس صدیقی، ضلعی سیکرٹری جنرل سید ندیم عباس کاظمی، علامہ قاضی نادر حسین علوی، مولانا ہادی حسین، سیدہ عابدہ حسین بخاری، سید مطلوب حسین بخاری، مرزا وجاہت علی، سید دلاور عباس زیدی، سید محمد علی کاظمی اور دیگر موجود تھے۔ اس موقع پر دہشتگردی، حکومت اور طالبان کے خلاف شدید نعرے بازی کی گئی، رہنمائوں نے سانحہ پارہ چنار کے زخمیوں کی مکمل دیکھ بھال اور شہداء کے لواحقین کے لیے معاوضہ کا مطالبہ کیا۔ علامہ اقتدار حسین نقوی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آپریشن ردالفساد کے باوجود دہشت گردوں کے سامنے حکومت بے بس اور لاچار ہے۔ صرف لفظی آپریشن اور نیشنل ایکشن پلان کا ہونا کافی نہیں بلکہ عملی طور پر دہشت گردوں اور ان کے سہولت کاروں کو قلع قلمع کرنے کی ضرورت ہے۔ حکمرانوں کی نااہلی اور عوام کے تحفظ میں بری طرح ناکامی نے عوام کو یہ سوچنے پر مجبور کر دیا ہے کہ دراصل یہ حکمرانوں کی خیانت کاری کا نتیجہ ہے۔ مفاد پرست اور عوامی امور سے لاپرواہ، کرپٹ گروہ ملک کو لوٹ کر بیرون ممالک اربوں ڈالر کے جائیداد بنانے کیلئے حکمران بن کر جھوٹے دعوئے کرنے والے ہیں۔ آرمی چیف اور سکیورٹی اداروں کے سربراہان کو خبردار کیا گیا کہ وہ عوامی امور میں اپنی ذمہ داریوں کو نبھانے میں مصلحت کا شکار نہ ہوں۔ مجلس وحدت مسلمین کے رہنما محمد عباس صدیقی نے کہا کہ پاراچنار میں نہتے شہریوں پر ایف سی کی طرف سے فائرنگ نے ثابت کر دیا کہ ان میں بھی ایسے عناصر شامل ہیں جو تکفیری دہشت گردوں کے ایما پر کچھ بھی کر گزرنے کیلئے تیار ہیں۔ آرمی چیف کو چاہئے کہ ان ذمہ داران کو عوام میں بے نقاب کریں اور انکو ایسی کڑی سزا دلائی جائے کہ پھر کوئی کالی بھیڑ عوام میں سکیورٹی اداروں کے بارے میں مایوسی پھیلانے والی حرکات کا سوچ بھی نہ سکیں۔ علامہ قاضی نادر حسین علوی نے اپنے خطاب میں ملک میں موجود دہشتگردوں کی پناہ گاہوں کے خلاف مزید کاروائیاں تیز کرنے کا مطالبہ کیا، اُنہوں نے کہا کہ حکومت دہشتگردوں کی پشت پناہی کی بجائے مظلوم عوام کا ساتھ دے۔ آخر میں زخمیوں کی صحت یابی کے لیے خصوصی دعا کرائی گئی۔

وحدت نیوز(ملتان) مجلس وحدت مسلمین عباس پورہ یونٹ کے زیراہتمام سانحہ پارہ چنار کے خلاف چوک شاہ عباس پر احتجاجی مظاہرہ اور شہدائے پارہ چنار کی یاد میں شمعیں روشن کی گئیں۔ احتجاجی مظاہرہ کی قیادت حسنین علی کربلائی اور عشرت عباس نے کی۔ مظاہرین نے سانحہ پارہ چنار کے خلاف اور پاک فوج کے حق میں نعرے بازی کی۔ ایم ڈبلیو ایم کے رہنما حسنین کربلائی نے کہا کہ پاراچنار میں شیعہ نسل کشی جاری ہے، کرم ایجنسی کے پولیٹیکل ایجنٹ اور سکیورٹی فورسسز پاراچنار کے مظلوموں کو تحفظ دینے میں مکمل ناکام ہوچکے ہیں، ہم پاراچنار کے مظلوم عوام کے دکھ میں برابر کے شریک ہیں، پاراچنار کے عوام پاکستان کی دفاعی فرنٹ لائن ہے، دشمن کی نظریں اس علاقے پر عرصے سے ہیں لیکن یہاں کے محب وطن غیور عوام نے ہمیشہ ملک دشمنوں کے ناپاک عزائم کا جواںمردی کے ساتھ مقابلہ کر کے خاک میں ملایا، یہاں کے باسیوں کو حب الوطنی کی سزاء دی جا رہی ہے، مظاہرے کے آخر میں شہدائے پارہ چنار کے لیے شمعیں بھی روش کی گئیں اور زخمیوں کی صحت یابی کے لیے خصوصی دعا کرائی گئی۔

وحدت نیوز (کراچی) سانحہ پاراچنار کے خلاف مجلس وحدت مسلمین پاکستان کراچی دویژن کے زیر اہتمام جامع مسجد نور ایمان کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، احتجاجی مظاہرے سے علامہ مرزا یوسف حسین، علامہ مبشر حسن اور علامہ اظہر نقوی نے خطاب کئے۔ شرکائے احتجاج نے بینرز اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے، جن پر کالعدم جماعتوں کے خلاف فوجی آپریشن اور سہولت کاروں کے خلاف بھرپور کارروائی کے مطالبات درج تھے۔

احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے علمائے کرام نے کہا کہ تکفیری دہشتگرد عناصر پارا چنار میں شیعہ مسلمانوں کے خلاف مسلسل دہشتگرد کارروائیاں جاری رکھے ہوئے ہیں، رواں سال جنوری میں بھی سبزی منڈی پاراچنار میں بم دھماکہ کیا گیا، لیکن آپریشن ضرب عضب اور آپریشن ردالفساد کے بعد بھی پاکستان میں حکومت اور سکیورٹی ادارے شیعہ مسلمانوں کے قتل عام کوروکنے میں ناکام ہیں، جس نے آپریشن ردالفساد پر سوالیہ نشان کھڑے کر دیئے ہیں، کرم ایجنسی میں ممکنہ دہشتگرد حملے کے حوالے سے نیکٹا کی جانب سے کئی الرٹ جاری کئے گئے، لیکن اس کے باوجود دہشتگرد کارروائیوں کو ناکام نہیں بنایا گیا، جس سے واضح ہوتا ہے کہ حکومت اور اداروں نے شیعہ مسلمانوںکو دہشتگروں کے رحم و کرم پر چھوڑ رکھا ہے، سانحہ پاراچنار حکومت اور اداروں کی نااہلی کا کھلا ثبوت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک طرف تو پاراچنار میں شیعہ مسلمانوں کو دہشتگرد عناصر کی جانب سے مسلسل دہشتگردی کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، جبکہ دوسری جانب سیکیورٹی فورسز کی جانب سے بھی ظلم کے خلاف پُرامن احتجاج کرنے والے شہریوں کو فائرنگ کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، پارا چنار میں دہشتگرد عناصر تو کاررائی کرکے باآسانی سیکیورٹی فورسز سے بچ کر فرار ہو گئے لیکن عوام کی جان و مال کے تحفظ میں ناکام پیراملٹری فورسز نے پ ±رامن احتجاجی شہریوں پر ہی گولیاں برسانا شروع کر دیں، سیکویرٹی فورسز کی جانب سے پرامن شہریوں پر بلاجواز فائرنگ کے خلاف آرمی چیف سے مطالبہ کرتے ہیں کہ سیکیورٹی فورسز میں شامل ایسے شرپسند عناصر کیخلاف فوری تحقیقات کریں، جو نہتے شہریوں کو نشانہ بناتے ہیں، جبکہ سانحہ پارا چنار میں ملوث دہشتگرد عناصر اور ان کے سہولت کاروں کو فی الفور گرفتار کیا جائے۔

مقررین نے کہا کہ پاراچنار کے شیعہ مسلمانوں کو پاکستان سے وفاداری اور محبت کی سزا دی جا رہی ہے، مکمل منصوبہ بندی کے تحت مسلسل یہاں کے مظلوم محب وطن شیعہ مسلمانوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے، اگر پاراچنار میں ہونے والے دہشتگردی کے متعدد سانحات پر دہشتگرد عناصر اور انکے سہولت کاروں کو قانون کی گرفت میں لاکر کیفر کردار تک پہنچایا جاتا تو آج ایک بار پھر پاراچنار کی سرزمین مظلوم شیعہ مسلمانوں کے خون سے رنگین نہیں ہوتی۔ انہوں نے مزید کہا کہ سعودی نواز حکومت اور ادارے امریکی سرپرستی میں بننے والی نام نہاد غیر اسلامی سعودی فوجی اتحاد میں شامل ہو کر دوسرے ممالک کی تحفظ کیلئے بے چین ہونے کے بجائے پاکستان اور اسکی مظلوم عوام کے جان و مال اور عزت و آبرو کی حفاظت کو یقینی بنانے کی فکر کریں، جو کہ امریکی سعودی نمک خوار دہشتگرد عناصر کے ہاتھوں مسلسل دہشتگردی کا شکار ہو رہی ہے۔

وحدت نیوز(ملتان) پاراچنار میں مرکزی امام بارگاہ کے قریب ہونے والے دہشتگردانہ حملے کے خلاف مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عبا س جعفری کی اپیل پر نماز جمعہ کے بعد ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے کیے گئے۔ ملتان میں بھی نماز جمعہ کے بعد جامع مسجد الحسین نیو ملتان کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، مظاہرین نے پلے کارڈز اُٹھا رکھے تھے جن پر دہشتگردی کے خلاف نعرے درج تھے، احتجاجی مظاہرے کی قیادت صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ اقتدار حسین نقوی، سیکرٹری سیاسیات مہر سخاوت علی، ضلعی سیکرٹری جنرل ملتان سید ندیم عباس کاظمی، مولانا عمران ظفر اور دیگر نے کی۔ مظاہرین کی حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی، دہشتگردوں کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا، مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے علامہ اقتدار حسین نقوی نے کہا کہ پاراچنار دھماکہ انتظامیہ اور سکیورٹی اداروں کی ناکامی کا ثبوت ہے، دہشتگردوں کا درجنوں چیک پوسٹوں سے گزر کر علاقے میں داخل ہونا سکیورٹی اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔

علامہ اقتدار نقوی نے کہا کہ ہمیں اپنے اندر چھپے دہشتگردوں کے ہمدرد کالی بھیڑوں کو بے نقاب کرنا ہوگا۔ پاراچنار میں ایک طرف دہشتگرد ہمیں نشانہ بنارہے ہیں تو دوسری طرف احتجاج کرنے پر سیکیورٹی فورسز ہمیں نشانہ بنارہی ہیں، ملک میں ہمیں مارا بھی جارہا ہے اور احتجاج بھی نہیں کرنے دیا جارہا، ہمیں پولیٹیکل انتظامیہ اور مرکزی حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ آئندہ جمعہ سے قبل متاثرین کے مطالبات کو مانا جائے علاوہ ازیں ملک بھر میں احتجاج کریں گے ۔ہم ملک میں امن کے داعی ہیں مگر حکومت ہمارے صبر کا امتحان لے رہی ہے ، پارہ چنار میں اس سے قبل بھی سیکیورٹی فورسز کی جانب سے شہریوں پر تشددکیا گیا ، ہمیں حکومت اور پولیٹیکل انتظامیہ کو متنبہ کرتے ہیں کہ اگر ہمارے اُوپر ہونے والے مظالم بند نہ کیے گے تو حالات کی ذمہ داری پولیٹیکل انتظامیہ اور حکومت پر عائد ہوگی۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مولانا عمران ظفر کا کہنا تھا کہ پاراچنار کے دیگر سانحات کے مجرموں کیخلاف فیصلہ کن کاروائی ہوتے تو آج کا واقعہ رو نما نہ ہوتا، ملت جعفریہ کو اس وقت ملک میں دہشتگردوں کیساتھ ساتھ حکومتی انتقامی کاروائیوں کا بھی سامنا ہے، دوسروں کی جنگ میں کودنے سے پہلے اپنے ملک کو محفوظ بنانے کی ضرورت ہے۔

Page 1 of 10

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree