وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ترجمان مقصود علی ڈومکی نے حضرت امام جعفر صادق علیہ السلام کے یوم شہادت کے موقع پر مجلس عزا سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ کہ صادق آل محمد ع نے دین اسلام کی تعلیمات کو پھیلانے کے لئے عظیم جدوجہد کی۔ مدینہ طیبہ میں آپ نے جو درسگاہ قائم کی اس میں مختلف مکاتب فکر کے جید علمائے کرام شریک ہوتے تھے۔ آپ نے مختلف علوم کی تدریس کی آپ کے فرامین میں آج بھی امت مسلمہ کے لئے عظیم علمی ذخائرموجود ہیں۔

انہوں نے کہا کہ فقہ حنفی کے بانی حضرت امام ابو حنیفہ رحمت اللہ علیہ اور عظیم سائنسدان علم کیمیا کے بانی حضرت جابر ابن حیان اور ان جیسے جید علماء نے آپ سے کسب فیض کیا اور انہیں پوری زندگی اس بات پر فخر رہا کہ وہ فرزند رسول حضرت امام جعفر صادق علیہ السلام کے شاگرد ہیں۔ آپ نے اپنے ایک شاگرد جناب مفضل کو معرفت خدا کے حوالے سے انتہائی علمی دروس دیئے جو آج توحید مفضل کتاب کی صورت عظیم علمی ذخیرہ ہے۔

 انہوں نے کہا کہ آل رسول نے ہر دور میں دین اسلام کی بقا کے لئے قربانیاں دیں۔ آل محمد نے نے وقت کے ظالم اور جابر حکمرانوں سے مفاہمت کرنے کی بجائے ان کے کردار کو بے نقاب کیا اور انہی طاغوتوں کے ہاتھوں جام شہادت نوش کیا۔ جنت البقیع میں آپ کا ویران روضہ مبارک آج بھی آل سعود کے ظلم و بربریت کی زندہ مثال ہے۔ آل سعود نے فرزند رسول ص امام جعفر صادق علیہ السلام کی قبر مبارک بے حرمتی کرکے دنیا کے کروڑوں مسلمانوں کی دل آزاری کی ہے۔

وحدت نیوز(مظفرآباد)سینئر صحافی صدر مظفرآباد پریس کلب،بیوروچیف روزنامہ نوائے وقت سلیم اختر پروانہ دنیا فانی سے کوچ کر گئے۔ سلیم اختر پروانہ اعلیٰ اقدار کے حامل، انتہائی ملنسار، وضعدار اور خُددار شخصیت کے حامل تھے۔ سلیم پروانہ کا شمار آزاد کشمیر کے ٹاپ کلاس کی صحافی برادری میں ہوتا تھا وہ چند پرانے ساتھیوں میں سے تھے جنہوں نے ہمیشہ صحافتی روایت کو برقرار رکھا ۔ان خیالات کا اظہار سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین آزادکشمیر علامہ سید تصور حسین نقوی الجوادی، سیکرٹری یوتھ سید اسد علی بخاری،سیکرٹری میڈیا سیل سید وقارکاظمی،سیکرٹری روابط سید عامر نقوی اور ضلعی سیکرٹری جنرل مظفرآباد سید غفران علی کاظمی نے اپنے مشترکہ تعزیتی بیان میں کیا۔

علامہ سید تصور حسین نقوی الجوادی نے کہا کہ سلیم پروانہ کی وفات سے جہاں صحافتی برادری کا بڑا نقصان ہوا ہے وہاں سول سوسائٹی مظفرآباد ایک اچھے رہنما سے محروم ہوگئی مجھے سلیم پروانہ صاحب کے ساتھ سول سوسائٹی فورم پر لمبا عرصہ کام کرنے کا موقع ملا۔ سلیم پروانہ صاحب ایک انتہائی عظیم انسان،انتہائی شفیق انسان، انتہائی ایماندار انسان اور اعلیٰ صحافتی اقدار کے حامل تھے سلیم اختر پروانہ اپنے وجود میں ایک مکمل تنظیم تھے وہ ان کا وجود ہر جگہ خود کو خود ثابت کرتا تھا خاص طور پر جو سول سوسائٹی فورم کسی وقت میں بہت متحرک ہوتا تھا اس میں سلیم پروانہ صاحب سب سے نمایاں ہوتے تھے۔ جیسے اطلاع دی گئی کہ پہلے ان کی ہمشیرہ کا انتقال ہوا رات میں خود انہیں ہارٹ اٹیک ہوا وہ دار فانی سے کوچ کر گئے۔

 میری کچھ عرصہ پہلے ان سے ملاقات ہوئی تھی بتا رہے تھے مجھے ہارٹ کا مسئلہ چل رہا ہے لیکن اللہ تعالی کو یہی منظور تھا کہ ہزاروں سوگواروں کو چھوڑ کے اپنے چاہنے والوں کو چھوڑ کر خصوصا اپنے خانوادے کو سوگوار چھوڑ کر دار فانی سے دار بقاء کی جانب کوچ کر گئے اللہ تعالی انہیں اور انکی ہمشیرہ کو اپنے جوار رحمت میں جگہ دے اللہ تعالی انکی قبر کو اپنے نور سے روشن و منور فرمائے اللہ تعالی ان کے آخرت کے منازل آسان فرمائے اللہ تعالی ان کے پسماندگان کو صبر جمیل عطا فرمائےاوریہ دوہرا صدمہ صبر وحوصلے سے برداشت کرنے کی توفیق عطا کرے۔

وحدت نیوز(آرٹیکل) 2011 کے دورہ مصر کے موقع پر اردوان نے اپنے خطاب میں کہا کہ ترکی ایک سیکولر ریاست ہے. اور مصر والوں کو بھی سیکولر ریاست بنانے کی تاکید کی.  26 اپریل 2016 کو جب ترکی پارلیمنٹ کے سربراہ اسماعیل کھرمان نے آئین میں تبدیلی کے وقت سیکولرزم کو تبدیل کرنے کی طرف اشارہ کیا تو اردوان نے انکار کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں سیکولر نظام ہی قبول ہے. اور ریاست کی نگاہ میں سب ادیان برابر ہیں.  ترکی کے آئین مملکت کے سربراہ یا کسی اعلی عہدیدار کا مسلمان ہونا کوئی کسی قسم کا ذکر نہیں.   اسلامی شریعت کے مطابق احوال شخصی وغیرہ کا بھی ذکر نہیں۔

1- ترکی سیٹلائٹ پر آدھے سے زیادہ چینل فحش فلموں اور ڈراموں کے چلتے ہیں. ترک فلم انڈسٹری میں کسی بھی شرعی قانون کی کوئی رعایت نہیں ہوتی. اور اس کا مشاہدہ کرنا تو آجکل کے انٹرنیٹ اور سیٹلائٹس کے دور میں بہت آسان ہے.

2- ترکی میں چکلے (prostitution) کو قانونی حیثیت حاصل ہے.  آرٹیکل 5537 کی شق نمبر 227 کے مطابق یہ کاروبار جائز اور قانونی ہے.  تقریبا 15000 رجسٹرڈ چکلے ہیں.  جس سے ترکی کو 4 بلین ڈالرز کی آمدن وصول ہوتی ہے.  انسانی حقوق اور صحت کے ادارے کے سربراہ کمال اورداک کا کہنا ہے کہ پچھلے دس سال میں اس کاروبار میں تین گنا اضافہ ہوا ہے. ترکی جس سیاحت پر فخر کرتا ہے اس میں بھی اہم کردار اسی کاروبار کا ہے.

3- دنیا میں شراب بنانے کا  بڑا  کارخانه رجسٹرڈ برانڈ Tekel ( Turkish tobacco and alcoholic beverages company)  ترکی میں ہے .جسکی مالیت 292 ملین ڈالرز ہے.  جس کی گوگل سرچ سے تصدیق کی جا سکتی ہے. 4 جون 2019 کے کالم بعنوان " ترکیا المثلیۃ جنسیا وسیاسیا ج1 " میں فادی عید وھیب  نے لکھا ہے کہ ترکی میں ایک اعداد وشمار کے مطابق 2009 کو 2 کروڑ 9 لاکھ 6 ھزار 762 لٹر شراب پی گئی.  

4- البانیا کے بعد ترکی دوسرا ملک ہے جہاں ھم جنس پرستوں کے حقوق کا اعتراف کیا جاتا ہے. اردوان کے دور حکومت میں 2014 پہلی ہم جنس پرستوں کی رسمی شادی ہوئی اور ہم جنس پرستوں کے عالمی لیڈر بولنٹ ذا دیوا کے اعزاز میں  اردوان نے خود ایک بڑی تقریب کا اہتمام کیا. اور ہم جنس پرستوں کو مبارک باد پیش کی. یہ کوئی خفیہ تقریب نہیں بلکہ باقاعدہ میڈیا پر دکھائی گئی. 2015 کو ایک ھفتے کے مسلسل ہم جنس پرستوں کے مختلف پروگرام اور ان کا الفخر مارچ بھی انقرہ واستنبول اور دیگر شہروں میں منعقد ہوئے.

تحریر : ڈاکٹر شفقت حسین شیرازی

وحدت نیوز(سکردو) مجلس وحدت مسلمین پاکستان گلگت بلتستان کے سیکرٹری جنرل آغا علی رضوی نے اپنے ایک تعزیتی بیان میں کہا ہے کہ معروف سماجی شخصیت سید یاسین شاہ کے والد گرامی سید عابدین کی رحلت پر لواحقین کو تعزیت پیش کرتے ہیں۔ مرحوم سادات گھرانے کا فخر اور شریف النفس انسان تھے۔ بحیثیت استاد آپ نے قوم کی بھرپور خدمت کی۔ آپکی دینی، سماجی اور علاقائی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔ آپکی وفات سے روندو ہرپو میں جو خلا پیدا ہوا ہے اسے پر کرنا مشکل ہے۔ آغا علی رضوی نے مزید کہا کہ انکی وفات پر لواحقین اور پورے روندو کے لیے تعزیت پیش کرتے ہیں۔ انکی مغفرت اور انکے درجات میں بلندی کے لیے دعا گو ہیں۔ لواحقین سے صبر و شکر کی تلقین کرتے ہیں۔

وحدت نیوز(کراچی) مجلس وحدت مسلمین سندھ کے صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ باقر عباس زیدی نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں نمایاں کمی کے باوجود مہنگائی کی شدت برقرار رہنے کو حکومتی نااہلی قرار دیا ہے۔انہوں نے کہا کہ پٹرول کی قیمت میں اضافے کا اعلان ہوتے ہی تاجر طبقے کی جانب سے اشیائے خوردونوش کے نرخ بڑھا دیے جاتے ہیں تاہم قیمت میں کمی کے اعلان کے بعد بھی مہنگائی کا بدستور بڑھتے رہنا سمجھ سے بالاتر ہے۔

انہوں نے کہا کہ بجلی اور عام اشیاء کی قیمتوں میں کمی نہ ہونا اس مافیا کی بالادستی کو ظاہر کرتا ہے جو خود کو ہر انتظامی طاقت سے بالا سمجھتا ہے۔بجلی اور روزمرہ استعمال کی اشیا کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ نیپرہ اور پرائس کنٹرول اتھارٹی کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔حکومت اداروں کی غفلت عوام کے لیے درد سر بنتی جا رہی ہے۔عوام کو ماضی کی طرح محض اعلانات سے خوش کرنے کا دور اب گزر چکا ہے۔اگر حکومت کی طرف سے عام آدمی کو ریلیف نہ ملا تو پھر پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کے اعلان پر حکومت کا اترانا بلاجواز ہے۔

انہوں نے کہا کہ پیٹرول کی قیمت میں کمی کے بعد پمپوں سے پیٹرول غائب کر دیا گیاہے۔حکومت کو چاہیے کہ مصنوعی قلت پیدا کرنے والے عناصر کا محاسبہ کرے۔ذمہ داران کے خلاف بھرپور کارروائی کر کے عوام کو خود ساختہ مسائل سے نجات دلائی جا سکتی ہے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے ملک میں کورونا کی بگڑتی ہوئی صورتحال پر سخت تشویش کا اظہار کیا ہے۔انہوں نے کہا شہری اور دیہی علاقے اس وبا سے بُری طرح متاثر ہو رہے ہیں۔ حکومت کی تمام تر کوششوں کے باوجود حوصلہ افزا نتائج برآمد نہ ہونے کی اصل وجہ حالات کی سنگینی سے عوام کی عدم آگہی ہے۔جو لوگ دانستہ طور پر غفلت کا ارتکاب کر رہے ہیں وہ نہ صرف اپنی جان کے دشمن ہیں بلکہ پورے معاشرے کے مجرم ہیں۔

انہوں نے کہا چین اور ایران سمیت جن ممالک نے اس وبا پر قابو پایا وہاں حکومت اور عوام نے کورونا وائرس کے خلاف مشترکہ طور جنگ لڑی۔وہاں کے عوام اور حکمران کورونا کے خلاف بھرپور جذبے کے ساتھ باہم صف آرا تھے تاہم یہاں کی صورتحال اس کے بالکل برعکس ہے۔پاکستان میں متاثرین کی تعداد نوے ہزار کی حد کو کراس کرنے کے باوجود عوام اس گتھی کو سلجھانے میں مصروف ہے کہ کورونا حقیقت ہے بھی کہ نہیں۔


انہوں نے کہا کہ اس طرح کا غیر ذمہ دارانہ طرز عمل بائیس کروڑ عوام کی سلامتی کے لیے خطرہ ہے۔جو لوگ کورونا کے حوالے سے احتیاطی تدابیر پر عمل نہیں کرتے انہیں اپنے رویوں پر نظر ثانی کرنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ کورونا کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے حکومت کو اپنے قوانین میں سختی لانی ہوگی۔ایس او پیز کی  خلاف ورزی پر صرف انتباہ کافی نہیں۔آزمائش کی یہ گھڑی کسی مصلحت کی متحمل نہیں یہ وقت سخت فیصلوں کا ہے تاکہ قوم کی صحت و سلامتی کو یقینی بنایا جا سکے۔

Page 8 of 1503

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree