وحدت نیوز (لاہور )سربراہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کےاپیل پر لاہور میں سمن آباد شباب چوک پر نماز ِ جمعہ کے بعد شام پر ممکنہ امریکی حملے اور پاکستان میں طالبان سے مزاکرات کے خلاف احتجاج کیا گیا۔احتجاجی مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی رہنماء علامہ احمد اقبال رضوی ، لاہور کے سیکرٹری جنرل علامہ امتیاز کاظمی ، لاہور کے سیکرٹری تبلیغات علامہ جعفر موسوی نے شرکت کی ، شرکاء ریلی سے خطاب کرتے ہوئے علامہ احمد اقبال رضوی نے کہا کہ شام پر امریکی حملہ دراصل لاکھوں فلسطینیوں کے حق پر حملہ ہے ، اسرائیل کو نابود ہوتا دیکھ کر امریکہ نے یہ چال چلی ہے ، اسلام کے نام پر جمع ہو کر فساد پھیلانے والے باغیوں کی شرمناک حرکات اسلام کو بدنام کرنے کی سازش ہے ، سعودیہ عرب کے حکمران امریکہ کو پیسہ دے کر شام کے خلاف جنگ میں اپنا کردار ادا کر کے امریکہ و اسرائیل سے اپنی وفاداری کا اعلان کر رہے ہیں، ہم ہر مظلوم کے ساتھ ہیں چاہے وہ مصر ہو ، بحرین ہو ، یمن ہو یا کہ شام ، عرب لیگ کا شرمناک کردار اس بات کی دلیل ہے کہ عرب حکمران کبھی بھی امریکہ کی غلامی سے آذاد نہیں ہوں گے ،

حکومت یاد رکھے کہ ہزاروں معصوموں کے قاتل طالبان جو پاکستان سے لے کر عراق اور شام تک مسلمانوں کا قتلِ عام کر رہے ہیں ان سے مزاکرات کی بات کر کے حکومت نے اپنا اصل چہرہ واضح کر دیا ہے ، ، ، دہشت گردوں سے مزاکرات نہیں ان کے خلاف مکمل اور موثر آپریشن ہونا چاہیے، ملک اسحآق جیسے بدمعاش قاتل کو آذاد کرنے کی بات کے پنجاب حکومت لشکر جھنگوی کو قبول کر رہی ہے اور اس کی سرپرست بن گئی ہے ، یاد رکھو !! کہ ملت تشیع اپنا ح لینا جانتی ہے ، ہم امن پسند لوگ ہیں اور ہم پر امن رہ کر بھی اپنا ہر مطالبہ منوا سکتے ہیں ،حکومت رئیسانی حکومت کا انجام یاد رکھے۔

وحدت نیوز (لاہور ) شام کا مسئلہ پوری دنیا بالخصوس عالم اسلام کیلئے انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔ یہ امریکہ، اسرائیل اور انکے عرب حواریوں کے مقابلے میں مزاحمت اسلامی کی فرنٹ لائن ہے۔ یہ وہ ملک ہے جس نے سالوں سے مسئلہ فلسطین کو زندہ رکھا ہے۔ حماس اور حزب اللہ جیسی اسلامی مزاحمتی تحریکوں کی ہر ممکن مدد کی ہے اور اسرائیل کے مقابلے میں فلسطین اور لبنان کی حمایت میں ڈٹا رہا ہے۔ اس نے اسرائیل کے ساتھ کوئی سمجھوتہ کرنے اور فلسطینی کاذ سے پیچھے ہٹنے سے انکار کیا ہے۔ جس کی قیمیت اسے چکانا پڑ رہی ہے اور امریکہ اپنے عرب حواریوں کے ساتھ مل کر اسرائیل کو بچانے کیلئے شام کو نشانہ بنانے جارہا ہے۔ اور اس کیلئے عراق طرز کا حملہ کرنے کا جھوٹا بہانا بھی تراشا جاچکا ہے۔


ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین کےمرکزی  رہنما علامہ سید احمد اقبال رضوی،پنجاب کے سیکریٹری جنرل علامہ عبدالخالق اسدی ، ڈپٹی سیکریٹری جنرل سید اسد عباس نقوی اور سنی اتحاد کونسل کے رہنماصاحبزادہ عمار سعید سلیمانی،مفتی محمد حسیب قادری،مفتی محمد کریم،رانا شرافت علی لاہور پریس کلب میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہو ئے کیا ۔رہنمائوں کاکہنا تھا کہ  امریکی حمایت یافتہ چند خائن اور ڈکٹیٹر عرب حکمرانوں کے ساتھ عرب دنیا نہیں ہے اور پوری عالمی اسلامی دنیا شام پر حملے کو اسلام پر حملہ سمجھ رہے ہیں۔ اور یوں امریکہ کی وہ بی ٹیم جس کو القاعدہ اور طالبان کے نام پر خود امریکہ نے تشکیل دیا تھا شام کے محاذ پر ایک بار پھر وہی امریکی حمایت میں کھل کر سامنے آ گئی ہے۔ یہ لوگ اسرائیل سے تو جنگ نہیں کرتے ہیں اور نہ ہی خطے میں امریکی مفادات اور امریکی پٹھوؤں کو نشانہ بناتے ہیں بلکہ امریکہ اور اسرائیل کے مقابلے میں کھڑی ہونے والی حکومت ، ملک اور تنظیمیں ان کا نشانہ بنتی ہیں۔ شام میں خارجی گروہوں نے صحابہ کرامؓ اور اہلِبیت علیھم السلام کے مزاراتِ مقدسہ کی جس طرح سے توہین کی ہے ۔ جس طرح سے لوگوں کو ذبح کیا ہے اور جہادالنکاح کے نام پر خواتین کی عزتیں لوٹی ہیں۔ یہ لوگ خارجیوں سے بھی بدتر ہیں اور ان سے وہی سلوک کرنے کی ضرورت ہے جو حضرت علی ؑ نے خوارج کیساتھ کیا۔ مجلس وحدت مسلمین پاکستان اور سنی اتحاد کونسل پاکستان شام پر حملے کو اسلام پر حملہ قرار دیتے ہیں اور پاکستان کی سرزمین پر آئندہ جمعۃ المبارک کو شام کی حمایت اور امریکہ اور اسرائیل کی مخالفت میں منانے کا اعلان کرتے ہیں اور ملک بھر میں نمازِ جمعہ کے بعد اجتجاجی ریلیوں اور جلوسوں کا اعلان کرتے ہیں۔

 

* مجلس وحدت مسلمین پاکستان اور سنی اتحاد کونسل مصر میں امریکی اور اسرائیلی مداخلت کہ جس کے ذریعے منتخب حکومت ختم کی گئی کی بھر پور مذمت کرتے ہیں اور امریکہ اور اس کے عرب حواریوں کو اس قتلِ عام کا براہِ راست ذمہ دار قرار دیتے ہیں۔ جس کے نتیجے میں دو ماہ میں ہزاروں افراد قتل کئے جاچکے ہیں۔
* مجلس وحدت مسلمین پاکستان اور سنی اتحاد کونسل پاکستان میں اولیائے کرام کے مزارات ، مختلف سجادہ نشینوں کی شہادت اور مساجد اور امام بارگاہوں پر ہونے والے قتلِ عام کا ذمہ دار اس ذہنیت کو قرار دیتے ہیں جس کے نتیجے میں جنت البقیع میں کئی اصحابِ رسولؓ اور اہلِبیت علیھم السلام کے مزارتِ مقدسہ کو مسمار کیا جا چکا ہے اور اس فکر کی مذمت کرتے ہوئے پاکستان میں عوامی بیداری کی مہم چلانے کا اعلان کرتے ہیں اور ایسے ننگ انسانیت دہشتگردوں سے مذاکرات کو رد کرتے ہیں اور ان کیخلاف بھر پور کاروائی کا مطالبہ کرتے ہیں۔

* حالیہ APCمیں مجلس وحدت مسلمین پاکستان اور سنی اتحاد کونسل پاکستان سمیت دیگر وہ جماعتیں جو دہشت گردی کا براہِ راست شکارہیں کو APCمیں مدعو نہ کرنے کی مذمت کرتے ہیں اور APCکے مذاکراتی فیصلے کو یکطرفہ فیصلہ قرار دیتے ہیں۔
* پاکستان میں جب تک دہشتگردی کے مقابلے میں دہشت گردی کا شکار حقیقی سٹیک ہولڈر سے ملکر کوئی فیصلہ نہیں کیاجائے گا اس وقت تک دہشتگردوں کی حوصلہ افزائی جاری رہے گی اور وطنِ عزیز کو آئندہ اپنی ایٹمی صلاحیتوں پر بھی سخت عالمی خطرات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔
* مجلس وحدت مسلمین اور سنی اتحا دکونسل پاکستان کی نظریاتی اور جغرافیائی سرحدوں کے تحفظ کا عہد کرتے ہیں۔ پاکستان کو بیرونی دباؤ سے آزاد اور حقیقی معنوں میں آزاد اور خود مختار ملک دیکھنا چاہتے ہیں اور پاکستان کی سلامتی اور بقاء کیلئے ہر طرح کی قربانی دینے کیلئے آمادہ اور تیار ہیں۔
* مجلس وحدت مسلمین اور سنی اتحاد کونسل پٹرول کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافے کو عوام کش پالیسی قرار دیتے ہیں۔ حکومتِ وقت مہنگائی کے طوفان کوروکنے میں ناکام رہی ہے۔ ڈالر کی قیمت روپے کے مقابلے میں تاریخی سطح پر پہنچ گئی ہے اور تاحال حکومت کی طرف سے قومی مسائل حل کرنے کیلئے کئی ٹھوس حکمتِ عملی اختیار نہیں کی گئی ہے۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ تیل کی قیمتوں کو کم از کم ایک سال کیلئے فکس کر دیا جائے تاکہ صنعت کار اطمینان سے صنعتیں چلائیں، تجارت بہتر ہو اور مہنگائی کو روکا جاسکے۔
* گذشتہ ایک ماہ میں کراچی ، گجرات ، بھکر ، چینیوٹ اور لاہور میں جاری ٹارگٹ کلنگ اور دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں اور قاتلوں کی فو ری گرفتاری کا مطالبہ کرتے ہیں۔
* ملک کی توانائی کے بحران کو حل کرنے کیلئے ایران پاکستان گیس پائپ لائن منصوبہ ناگزیر ہے۔ حکومتِ وقت نے اسے سرد خانے میں ڈال دیا ہے اور ملک لوڈشیڈنگ کا عذاب بھگت رہا ہے۔ حکومت کا یہ طرزِ عمل قابلِ مذمت ہے۔
* مجلس وحدت مسلمین پاکستان اور سنی اتحاد کونسل پاکستان دیگر ہم فکر جماعتوں کیساتھ ملکر بلدیاتی الیکشن کو ایک تحریک کی شکل میں لڑیں گے جس کا ہدف پاکستان کو سیاسی اشرافیہ کی قید سے آزاد کرانا اور نچلی سطح پر مضبوط اداروں کا قیام ہے۔

وحدت نیوز (اسکردو) جانثارانِ بی بی زینب سلام اللہ علیہ ،مجلس وحدت مسلمین بلتستان ڈویژن اورامامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن بلتستان ڈویژن کے تحت شام پر امریکہ اور اس کے سلفی اتحادیوں کے حملے کی سازشوں کے خلاف ایک ریلی یادگار چوک سکردو سے یو این او آفس تک نکالی گئی جس میں ہزاروں افراد نے شرکت کی ۔ ریلی میں شریک افراد امریکہ ، آل سعود اور اسرائیل کے خلاف نعرے لگارہے تھے۔ ریلی علمدار چوک پر پہونچی تو انجمن امامیہ بلتستان کے سینئیر نائب صدرومجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے صوبائی رہنما آقائے مظاہر حسین موسوی نے خطاب کیا ۔ریلی کے یو این آفس پونچنے پر شیعہ علماء کونسل کے مقامی رہنماء بھی ریلی میں شریک ہوئے ۔ یو این آفس کے سامنے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین بلتستان کے سیکرٹری جنرل علامہ سید علی رضوی  نے کہا کہ شام پر حملہ عالم اسلام پر حملہ ہے ۔ اس موقع پر انجمن امامیہ کے سٹی صدر شیخ زاہد حسین زاہدی ، راجہ زکریا اور دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین کے سینیئر رہنما علامہ اصغر عسکری سمیت دیگر علماء کی گرفتاری اور بھکر میں بے گناہ کارکنوں کی بلا جواز گرفتاری کے خلاف مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے زیراہتمام سول سیکرٹریٹ لاہور کے سامنے احتجاجی دھرنا دیا گیا، دھرنے میں خواتین، بچوں، جوانوں اور بزرگوں کی کثیر تعداد شریک ہوئی۔ مجلس وحدت مسلمین نے پنجاب حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ ڈی پی او بھکر کو فوری طور پر معطل کیا جائے اور پنجاب بھر میں جہاں سے بھی گرفتاریاں ہوئی ہیں، تمام کارکنوں اور رہنماؤں کو فوری طور پر رہا کیا جائے۔

رہنماؤں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ علماء اور کارکنوں کی رہائی تک پورے ملک میں دھرنے دیئے جائیں گے۔ لاہور میں ہونے والے احتجاجی دھرنے کی قیادت مجلس وحدت مسلمین کے رہنما علامہ ابوذر مہدوی، مرکزی سیکرٹری سیاسیات سید ناصر عباس شیرازی، علامہ احمد اقبال رضوی اور دیگر علماء نے کی۔ دھرنے میں سینکڑوں کی تعداد میں شہری شریک ہوئے جبکہ لوگوں کی آمد کا سلسلہ بھی رات گئے تک جاری رہا، تاہم رات 2بجے دھرنا ختم کر دیا گیا۔ رہنماؤں کا کہنا تھا کہ مجلس وحدت مسلمین آج دوبارہ ناصر باغ کے باہر لوئر مال پر دھرنا دے گی۔

دیگر ذرائع کے مطابق لاہور میں شہداء و مومنین ِ بھکر سے اظہار یکجہتی اور ظالمین کیخلاف صدائے احتجاج بلند کرنے کیلئے سول سیکریٹیریٹ کے سامنے علامتی احتجاجی دھرنا دیا گیا، جس میں مومنین و مومنات کی کثیر تعداد شریک ہوئی۔ احتجاجی دھرنے سے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی رہنماء علامہ ابوذر مہدوی، مرکزی سیکرٹری سیاسیات ناصر عباس شیرازی، علامہ احمد اقبال رضوی، علامہ حسن ہمدانی، علامہ مصطفٰی مہدی اور دیگر اراکین نے خطاب کیا۔ پنجاب کی متعصب حکومت کے کارندوں نے ایم اے او کالج سے پی ایم جی چوک تک کی تمام اسٹریٹ لائٹس بند کر دی تھیں، شرکائ اندھیرے میں ہی احتجاج کرتے رہے۔ اس موقع پر انتظامیہ کو متنبہ کیا گیا اگر اندھیرے میں کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش آگیا تو اسکی ذمہ دار انتظامیہ ہوگی۔ دھرنے کے شرکاء نے لبیک یاحُسین کی صداؤں میں اس بات کو ثابت کیا کہ ہم کسی طوفان سے ڈرنے والے نہیں، حکومت ِ وقت سن لے کہ اس کا اصل چہرہ بے نقاب ہوچکا ہے، دہشت گردوں کو پناہ اور انکا ساتھ دے کر پاکستان کی بنیادوں کو کمزور کرنے کی سازش کی جا رہی ہے۔

مولانا مصطفٰی مہدی نے اپنے خطاب میں کہا کہ عالمی دہشتگرد امریکہ اور اس کے حواری شام میں شکست کے بعد اپنی جنگ کو اس خطے میں لانا چاہتے ہیں، پاکستان میں شیعہ سنی کا کوئی مسئلہ نہیں، بلکہ یہ تکفیری دہشتگرد شیعہ سنی کے نام پر دہشتگردی کا بازار گرم کرنا چاہ رہے ہیں۔
علامہ ابوذر مہدوی نے احتجاجی دھرنے کے شرکاء سے اپنے پرجوش خطاب میں کہا کہ ہم بھکر میں علماء اور مومنین کی گرفتاریوں اور تشدد کی بھرپور مذمت کرتے ہیں، اس واقعہ میں ملوث افراد کو فوری سزا دی جائے، انتظامیہ میں موجود کالی بھیڑوں کو نکالا جائے اور آئندہ ایسے واقعات کی روک تھام کے لئے موثر اقدامات کئے جائیں، ان کا کہنا تھا کہ اس ملک میں جہاں 14 اگست کی ریلی کے لئے اجازت لینا پڑتی ہے، وہاں دہشتگردوں کو مسلح ریلی کی اجازت کیسے دے دی گئی؟؟ یہ ملک ہم نے بنایا تھا اور ہم ہی اسے بچائیں گے، دشمن سن لے!! ہمارا خون اتنا ارزاں نہیں، تمہیں اس خؤن کا حساب دینا ہوگا ۔۔۔۔
دھرنا 2 بجے رات ختم کیا گیا اور ملک گیر احتجاج کا اعلان کیا گیا، آج شام 4 بجے ناصر باغ کے سامنے بھرپور احتجاج کیا جائے گا۔

raja sahab potrateوحدت نیوز (لاہور)  مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس نے یو اے ای سے اہل تشیع اور اہل سنت کے انخلاء کی مذمت کرتے ہوئے حکومت کو یو اے ای سے احتجاج کرنے کا مشورہ دیا ہے۔ لاہور میں ’’اسلام ٹائمز‘‘ سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے علامہ راجہ ناصر عباس نے کہا کہ یو اے ای سے ایسے افراد کو نکالا جا رہا ہے جس کے نام کے ساتھ محمد، علی، حسن، حسین، عباس، مہدی، نقی، تقی یا ان سے ملتے جلتے نام ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزارت اووسیز پاکستانیز کی اس المیے پر خاموشی افسوس ناک ہے۔

انہوں نے کہا کہ مجلس وحدت جلد اسلام آباد میں وزارت اوورسیز پاکستانیر اور وزارت خارجہ کے باہر احتجاج مظاہرہ کرئے گی اور یو اے ای سے اہل تشیع کے انخلا پر اپنا احتجاج ریکارڈ کرائے گی۔ علامہ راجہ ناصر عباس نے کہا کہ یو اے ای سے ایسے تمام افراد کو بھی نکالا جا رہا ہے جو امریکہ مخالف ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایسے لگتا ہے کہ یو اے ای عربوں کی نہیں امریکہ کی ریاستیں ہوں۔ انہوں نے کہا کہ دفتر خارجہ کو اس ظالمانہ اقدام کا نوٹس لینا چاہئے اور ان ریاستوں کے اہل تشیع کے ساتھ ہونے والے امتیازی سلوک کا خاتمہ کروانا چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ یواے ای میں بھارت اور امریکہ کا اثرورسوخ بہت زیادہ حد تک بڑھ چکا ہے یہی وجہ ہے کہ یو اے ای میں پاکستان مخالف پالیسیاں بنائی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بھارت نے گوادر پورٹ کی آڑ میں یو اے ای کے حکمرانوں کو پاکستان سے بدظن کر دیا ہے اور بھارت نے یو اے ای کے یہ باور کروایا ہے کہ گوادر پورٹ فنکشنل ہونے سے دبئی کا کاروبار متاثر ہو جائے گا۔ راجہ ناصر عباس نے کہا کہ پاکستانی دفتر خارجہ کو یو اے ای کے حکمرانوں کی اس غلط فہمی کو دور کرنا ہو گا اور وزیراعظم جلد وزیر خارجہ کا بھی اعلان کریں۔ انہوں نے کہا کہ افسوس کا مقام ہے کہ ابھی تک وزیر خارجہ اور وزیر دفاع کا اعلان نہیں کیا گیا۔

peshawar protestوحدت نیوز (پشاور) مجلس وحدت مسلمین ضلع پشاورکا مدرسہ شہید عارف حسین الحسینی میں نماز جمعہ کے دوران خودکش دھماکے کے خلاف پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاج،گرفتار دہشت گردوں کو سرعام پھانسی کا مطالبہ۔
احتجاج میں ایم ڈبلیو ایم کے علاقائی یونٹس اورآئی ایس اواور آئی او کے برادران نے بھرپور شرکت کی۔ مجلس وحدت مسلمین ضلع پشاور کے ضلعی سیکرٹری جنرل محمد شکیل نے نہتے مسلمانوں کے بے گناہ خون سے خانہ خداکوخون آلود کرنے والوں کو لامذہب قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان دہشت گردوں کا کوئی مذہب نہیں۔ مٹھی بھردہشت گردوں نے ملک میں انارکی اور جنگل کا قانون رائج کر رکھا ہے۔حکومتی ادارے بے بس ہو چکے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ملت تشیع کی نسل کشی کرنے والے کان کھول کے سن لیں کہ ہم حسینیت کے پیروکار کٹ مر سکتے ہیں مگر یذیدان عصر کے سامنے جھک نہیں سکتے یذیدیت کے علمبردار دھماکوں اور ٹارگٹ کلینگ سے کسی صورت حسینیت کو دبا نہیں سکتے،انہوں نے انتظامیہ اور عدلیہ سے پرزور مطالبہ کیا کہ گرفتار دہشت گردوں کو سرعام پھانسی دی جائے،انہوں نے کہا کہ ائندہ جمعہ کو بھر پوراحتجاج کیا جائے گا ۔                                                     
 قرارداد   
١ ۔  ہم  مطالبہ کرتے ہے کہ دھماکے میں ملوث عناصر کو جلد سے جلد گرفتار کیا جائے۔ اور جن افراد کو گرفتار کیاگیاہے ان کی تحقیقات میڈیا کے سامنے کرکے قرار واقعی سزا دیا جائے۔
٢  شہداء ورثاء کی فوری طور پر مالی امداد کیا جائے۔
٣  زخمیون کی مالی معاونت کے ساتھ طبی سہولیات کو بہتر بنایا جائے۔    
٤ پشاور میں مساجد اور امام بارگاہوں کی فول پروف سیکورٹی کا انتظام کیا جائے۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree